• بھارتی کرکٹ ٹیم کے فاسٹ بولر ظہیر خان اور اداکارہ ساگاریکا گھاٹگے نے کورٹ میرج کرلی
  • روہنگیا مسلمانوں کی وطن واپسی کیلئے میانمار اور بنگلہ دیش میں معاہدہ طے پاگیا
  • نواز شریف ایک بار پھر پارلیمنٹ کو تختہ مشق بنا رہے ہیں، نیئر حسین بخاری
  • بم دھماکے کا منصوبہ بلوچستان میں بنایا گیا، دہشت گرد نادر عرف مرشد کے جے آئی ٹی میں انکشاف
  • ویسٹ انڈین پانچ سال تک ہر سال تین ٹی ٹونٹی میچز کے لئے پاکستان آئے گی، چیئرمین پی سی بی
  • عالمی دنیا کشمیر میں ریاستی دہشتگردی پر اپنی بے حسی ختم کرے، وزیر خارجہ خواجہ محمد آصف

جس دن اس (سونے، چاندی اور مال) پر دوزخ کی آگ میں تاپ دی جائے گی پھر اس (تپے ہوئے مال) سے ان کی پیشانیاں اور ان کے پہلو اور ان کی پیٹھیں داغی جائیں گی.(سورۃ التوبۃ)آیت نمبر 35

اٹلی کے شمالی شہر بولزانو میں پارکوں میں کرکٹ کھیلنے پر پابندی
Cricket

 روم (اردو ووز)اٹلی کے شمالی شہر بولزانو کے میئرنے شہر کے پارکوں میں کرکٹ کھیلنے پر پابندی عائد کر دی ہے ٗ یہ اعلان ایک دو سالہ بچے کے سر پر گیند لگنے کے واقعہ کے بعد کیا گیا۔وہ بچہ اپنے گھر کی بالکونی میں تھا جب اسے گیند لگی اور اب ہوش میں ہے ٗجہاں کرکٹ کھیلی جارہی وہ اس جگہ سے 100 میٹر کے فاصلے پر تھا۔

اٹلی میں رہنے والے پاکستانی اور افغان کرکٹ کھیلنا پسند کرتے ہیں تاہم اطالویوں کی اس کھیل میں بہت کم دلچسپی ہے۔بولزانو میں اب کرکٹ کا کھیل ٹینس کورٹس اور بیس بال کے میدانوں تک محدود کیا جا رہا ہے۔میئر رنزو کرامچی کے مطابق پابندی کے اطلاق کا فیصلہ اس وقت کیا گیا جب انھیں ایک جوڑے کی جانب سے ایک ای میل موصول ہوئی کہ کرکٹ گیند لگنے سے ان کا بچہ زخمی ہوگیا ۔انہوں نے کہاکہ وہ ہی پاکستانی کمیونٹی کے نمائندوں کے ساتھ حالات کا جائزہ لیں گے۔اطالوی اخبار کوریئر ڈیلا سیرا کے مطابق ایک اور شمالی شہر بریسشیا نے 2009 میں عوامی مقامات پر کرکٹ کھیلنے پر پابندی عائد کی تھی۔خیال رہے کہ الٹو ایڈیج بولزانو میں زیادہ تر جرمن زبان بولنے والے افراد رہتے ہیں اور اس کی سرحد آسٹریا سے ملتی ہے جبکہ شہر کے میئر کا تعلق سیاسی طور پر سینٹر لیفٹ سے ہے اور وہ کسی بھی امیگریشن مخالف جماعت کا حصہ نہیں ۔اکتوبر 2015 میں آلٹو ایڈیج کی مقامی ویب سائٹ نے بتایا تھا کہ بولزانو میں 900 پاکستانی مقیم ہیں جبکہ علاقے میں ان کی کل تعداد 3000 ہے جبکہ افغان شہریوں کی تعداد بالتریب 100 اور 300 ہے۔

مزید خبریں