• بھارت جس زبان میں بات کرے گا اسی زبان میں جواب دیا جائیگا،پاکستان
  • وفاقی حکومت نے عام انتخابات سے قبل پی آئی اے کو فروخت کرنے کا منصوبہ بنالیا
  • شریف خاندان کو یقین ہے کہ انہیں سزا ضرور ملے گی ، بیرسٹراعتزازاحسن
  • عمران خان کے کرتوت ان کی عمر کے مطابق نہیں ہیں ٗجتنے گھٹیا ہیں اتنی ہی گھٹیا گفتگو کرتے ہیں ٗرانا ثناء اللہ
  • قصور واقعہ ٗکراچی مددگار پولیس 15پر کالز میں اضافہ
  • وزیراعظم بنا تو ٹرمپ سے ملاقات کڑوی گولی ہوگی مگر نگلنا پڑے گی ٗعمران خان
  • عمران خان کی گھٹیا سیاست پر قوم انہیں معاف نہیں کریگی، عائشہ گلالئی
  • کراچی ٗ اے ٹی ایم مشین میں اسکمنگ ڈیوائس لگانے والا ایک اور چینی باشندہ گرفتار
  • ناقص دودھ کی سماعت ٗ چیف جسٹس کا بھینسوں کو لگائے جانیوالے ٹیکے ضبط کرنے کا حکم
  • مردم شماری کی تصدیق کے نام پرجعلی ٹیلی فون کالز کی جا رہی ہیں‘عوام معلومات نہ دیں‘آئی ایس پی آر

جس دن اس (سونے، چاندی اور مال) پر دوزخ کی آگ میں تاپ دی جائے گی پھر اس (تپے ہوئے مال) سے ان کی پیشانیاں اور ان کے پہلو اور ان کی پیٹھیں داغی جائیں گی.(سورۃ التوبۃ)آیت نمبر 35

وزیردخلہ سندھ کی زیر صدارت اجلاس میں صوبے میں امن وامان کی موجودہ صورتحال کا جائزہ
anwar siyal

کراچی (اردو ووز) وزیرداخلہ سندھ سہیل انور خان سیال کی زیر صدارت اجلاس میں ایکس آرمی اہلکاروں کی سندھ پولیس میں بھرتی سمیت آرآرایف، کاؤنٹرٹیررزم ڈپارٹمنٹ سندھ کے لئے کانسٹیبلز کی بقیہ پوسٹ کے جملہ مراحل میں کامیاب قراردیئے جانیوالے امیدواران کی ریکروٹمنٹ کے عمل سمیت اسپیشل پروٹیکشن یونٹ کے لئے نئی منظور شدہ پوسٹس کا تفصیلی جائزہ لیا گیا اور مزید ضروری احکامات دیئے۔اجلاس میں آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ کے علاوہ سیکریٹری داخلہ سندھ اور اے آئی جی اسٹیبلشمنٹ بھی موجود تھے۔

وزیرداخلہ سندھ نے اس موقع پر صوبے میں امن وامان کی موجودہ صورتحال کا بھی جائزہ لیا اور اس تناظر میں مزید ضروری احکامات دیئے۔سہیل انور خان سیال نے محرم کے دوران عوام کے جان ومال کی حفاظت یقینی بنانے کے حوالے سے سندھ پولیس کے تحت اختیار کردہ حکمت عملی اور لائحہ عمل کا بھی تفصیلی جائزہ لیا اوررینج ڈسٹرکٹس وزونزکی سطح پرسیکیورٹی کے مجموعی امور کو انتہائی ٹھوس اور مربوط بنانے کے احکامات دیئے۔انہوں نے کہا کہ محرم کے دوران قیام امن کی صورتحال پر مکمل پولیس کنٹرول کے حوالے سے مختلف مکاتب فکر کے علماء اور ذاکرین سمیت دیگرتمام اسٹیک ہولڈرز کو بھی اعتماد میں لینے اور انکے انفرادی واجتماعی کردار کو یقینی بنانے کے ضمن میں تمام تر کاوشوں کو یقینی بنایا جائے۔

مزید خبریں