• بھارت جس زبان میں بات کرے گا اسی زبان میں جواب دیا جائیگا،پاکستان
  • وفاقی حکومت نے عام انتخابات سے قبل پی آئی اے کو فروخت کرنے کا منصوبہ بنالیا
  • شریف خاندان کو یقین ہے کہ انہیں سزا ضرور ملے گی ، بیرسٹراعتزازاحسن
  • عمران خان کے کرتوت ان کی عمر کے مطابق نہیں ہیں ٗجتنے گھٹیا ہیں اتنی ہی گھٹیا گفتگو کرتے ہیں ٗرانا ثناء اللہ
  • قصور واقعہ ٗکراچی مددگار پولیس 15پر کالز میں اضافہ
  • وزیراعظم بنا تو ٹرمپ سے ملاقات کڑوی گولی ہوگی مگر نگلنا پڑے گی ٗعمران خان
  • عمران خان کی گھٹیا سیاست پر قوم انہیں معاف نہیں کریگی، عائشہ گلالئی
  • کراچی ٗ اے ٹی ایم مشین میں اسکمنگ ڈیوائس لگانے والا ایک اور چینی باشندہ گرفتار
  • ناقص دودھ کی سماعت ٗ چیف جسٹس کا بھینسوں کو لگائے جانیوالے ٹیکے ضبط کرنے کا حکم
  • مردم شماری کی تصدیق کے نام پرجعلی ٹیلی فون کالز کی جا رہی ہیں‘عوام معلومات نہ دیں‘آئی ایس پی آر

جس دن اس (سونے، چاندی اور مال) پر دوزخ کی آگ میں تاپ دی جائے گی پھر اس (تپے ہوئے مال) سے ان کی پیشانیاں اور ان کے پہلو اور ان کی پیٹھیں داغی جائیں گی.(سورۃ التوبۃ)آیت نمبر 35

چھری مار کی عدم گرفتاری کراچی میں مخبری نیٹ ورک فعال کرنے کا حکم
KNIFE ATTACK IN KARACHI

کراچی (اردو ووز)گلستان جوہر اور گلشن اقبال میں خوف کی علامت بن جانے والا پراسرار چھری مار ملزم پولیس کیلئے بھی ایک ڈراؤنا خواب بن گیا ہے پولیس ملزم کی گرفتاری کیلئے اپنی سی ہر کوشش کے باوجود بھی تاحال ناکام دکھائی دیتی ہے۔

سندھ پولیس کے اعلی حکام نے ملزم کی گرفتاری میں ناکامی کے بعد تھانوں کی سطح پر مخبری کے نیٹ ورک کو ایک بار پھر فعال کرنے کا حکم دیا ہے اور اس سلسلے میں اسپیشل برانچ پولیس کو بھی چھری مار ملزم کا خصوصی ٹاسک دے دیا گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق گلستان جوہر اور گلشن اقبال کے علاقوں میں خواتین پر تیز دھار آلے سے وار کرنے والا پراسرار ملزم سندھ پولیس کیلئے ایک ڈراؤنا خواب بن کر رہ گیا ہے۔ پولیس کی تمام ترسرتوڑ کوششوں کے باوجود ملزم کی گرفتاریعمل میں نہیں آسکی ہے۔ گلستان جوہر اور گلشن اقبال میں پولیس کے تقریبا تمام یونٹس کے اہلکار وردی اور سادہ لباس میں 2 4گھنٹے ڈیوٹیاں کررہے ہیں تاہم پولیس کو ملزم کیخلاف کوئی ٹھوس اطلاع نہیں مل رہی جس سے اس کی گرفتاری میں مدد مل سکے۔ تمام صورتحال کے بعد سندھ پولیس کے اعلی حکام نے سندھ پولیس میں تھانوں کی سطح پر مخبری کا نیت ورک ایک بار پھر فعال کرنے کا حکم دیا ہے اور اس سلسلے میں اسپیشل برانچ پولیس کو بھی ملزم کی گرفتاری کا ٹاسک دیتے ہوئے تھانوں کی سطح پر مخبری کا نیٹ ورک قائم کرنے کی ہدایت دیں ہیں۔ اس حوالے سے اسپیشل برانچ کے ایک افسر نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ ماضی میں بھی اسپیشل برانچ کے کردار کو تھانے کی سطح پر بہت محدود کردیا گیا تھا جس کے باعث اس طرح کی صورتحال کا سمانا کرنا پڑرہا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اب پولیس حکام کی جانب سے اس طرز کے ملزم کی گرفتاری کیلئے اسپیشل برانچ کو بھی خدمات پیش کرنے کیلئے کہا گیا ہے جس کے بعد اسپیشل برانچ نے بھی ملزم کی تلاش کا عمل شروع کردیا ہے۔

مزید خبریں