نواز شریف سے وزیر اعلیٰ شہباز شریف کی ملاقات،مجموعی صورتحال پر تبادلہ خیال              پانچ سال کے دوران ملک میں 10کروڑ پودے لگانے کیلئے تین ارب 65کروڑ روپے سے زائد رقم کی منظوری              لاہور، مختلف مقامات سے پانچ سالہ بچی اور خاتون کی لاش برآمد، شناخت نہ ہو سکی              کراچی میں ہوائی فائرنگ کرنے والا عدنان پاشا گرفتار              قومی ہیرو منصور احمد سرکاری اسپتال میں زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا              کراچی میں 170 سالہ قدیم رہائشی عمارت کا مخدوش حصہ زمین بوس              چین پاکستان اقتصادی راہداری کے مغربی روٹ سے جنوبی اضلاع کی مثالی ترقی کے نئے دور کا آغاز ہے، مولانا فضل الرحمان              احد چیمہ کی گرفتاری کے بعدسول افسران کی ہڑتال کے پیچھے حکومت کا ہاتھ ہے ،اقدام ریاست کیخلاف بغاوت ہے، اعتزاز احسن              معاشی منصوبے عوام کی شراکت کے بغیر کامیابی سے ہمکنار نہیں ہوسکتے ،مریم اورنگزیب              سی پیک دونوں ملکوں کے عوامی رابطوں اور دوستی کا بھی ذریعہ ہے، چینی سفیر       
تازہ تر ین

پاکستان میں پیدا ہوا یہاں پلا بڑھا، یہیں سے کرکٹ شروع کی، عمران طاہر

Imran Tahir

لاہور(اردو ووز)پاکستان کی طرف سے کھیلنا قسمت میں نہیں تھا، اس بات کی بہت خوشی ہے کہ وہ ایک اہم مقصد کے تحت پاکستان آئے، پاکستان کی طرف سے نہ کھیلنے کو تقدیر کا فیصلہ سمجھتاہوں لیکن جنوبی افریقہ کی طرف سے کھیلنے پر وہ فخر ہے۔ ان خیالات کااظہارجنوبی افریقہ کی نمائندگی کرنیوالے پاکستانی نژاد عمران طاہر نے اپنے ایک انٹرویومیں کیا۔ انہوں نے کہاکہ ورلڈ الیون کی طرف سے کھیلنے کے لئے لاہور آئے ہیں۔ یہ وہی شہر ہے جہاں وہ پیدا ہوئے اور فرسٹ کلاس کرکٹ کھیلی۔انڈر 19 اور پاکستان اے میں پاکستان کی نمائندگی کی لیکن قومی کرکٹ ٹیم میں موقع نہ ملنے پرپہلے کاونٹی کرکٹ اور پھر جنوبی افریقہ کی کرکٹ میں قسمت آزمائی کا فیصلہ کیا اور جنوبی افریقہ کی طرف سے بین الاقوامی کرکٹ کھیلنے میں کامیاب ہو گئے۔

انہوں نے کہا کہ آج میں جہاں ہوں اس پر مجھے فخر اور خوشی ہے۔جنوبی افریقہ نے مجھے ٹیسٹ، ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل کھلا کر میرے خوابوں کی تعبیر دی۔ میں پاکستان میں پیدا ہوا یہاں پلا بڑھا اور یہیں سے کرکٹ شروع کی میں پاکستان کی طرف سے کھیلنا چاہتا تھا لیکن یہ میری قسمت میں نہیں تھا۔ میں اکیلا کرکٹر نہیں ہوں بلکہ ایسے کئی کرکٹرز ہیں جو پیدا کہیں ہوئے اور کرکٹ کہیں اور کھیلی۔عمران طاہر کی ایک اور خواہش اپنے خاندان کے سامنے قذافی اسٹیڈیم میں کھیلنے کی تھی جو پوری ہو رہی ہے۔ والدین اب دنیا میں نہیں لیکن بہن بھائی ہیں جن کے سامنے میں تماشائیوں سے بھرے ہوئے قذافی اسٹیڈیم میں کھیلنے کی خواہش رکھتا تھا جو اس سیریز میں پوری ہو سکے گی۔ عمران طاہر کا کہنا ہے کہ پاکستان میں فرسٹ کلاس کرکٹ کھیل کر وہ ایک سخت جان کھلاڑی کے طور پر تیار ہوئے۔ انہوں نے جس زمانے میں کرکٹ کھیلی اس وقت پاکستان کی فرسٹ کلاس کرکٹ میں بہت سخت مقابلہ تھا۔ مجھے پاکستانی ٹیم میں آنے کا موقع نہ مل سکا لیکن میں نے اپنی فرسٹ کلاس کرکٹ سے بھرپور لطف اٹھایا اور اس نے مجھے بہت کچھ سکھایا اور یہ تجربہ مجھے آنے والے دنوں میں کام آیا۔ عمران طاہر کو اس بات کی بہت خوشی ہے کہ وہ ایک اہم مقصد کے تحت پاکستان آئے ہیں۔میں غالباً پہلا کھلاڑی تھا جس نے اس دورے پر آنے کے لئے رضامندی ظاہر کی تھی۔ میں نے اپنے ساتھی کرکٹرز کو بھی اس دورے کے بارے میں مثبت رائے دی۔ میری خواہش ہے کہ پاکستان میں انٹرنیشنل کرکٹ دوبارہ شروع ہو۔عمران طاہر نے قذافی اسٹیڈیم کی وکٹ کے بارے میں جو کچھ معلوم کیا ہے وہ ان کے لئے حوصلہ افزا نہیں۔

میں قذافی اسٹیڈیم کے بارے میں کافی جانتا ہوں لیکن وکٹ کے بارے میں معلومات میرے مطلب کی نہیں کیونکہ یہ بیٹنگ کے لئے سازگار وکٹ بتائی گئی ہے لیکن پھر بھی میں ایک چیلنج سمجھ کر کھیلوں گا کیونکہ میں ہر میچ سے قبل اپنی تیاری ضرور کرتا ہوں اور بھرپور جوش و جذبے کے ساتھ کھیلتا ہوں اگر یہ جذبہ نہیں ہے تو پھر مجھے ریٹائر ہو جانا چاہیے۔ عمران طاہر پاکستان کی موجودہ ٹیم کی صلاحیتوں کے بہت معترف ہیں۔ کہتے ہیں پاکستان ایک اچھی ٹیم ہے جس میں نوجوان کھلاڑی شامل ہیں جنھوں نے چیمپیئنز ٹرافی میں خود کو ثابت کیا ہے۔عمران طاہر پاکستانی لیگ اسپنر شاداب خان سے کئے گئے موازنے کو درست نہیں سمجھتے کہا شاداب بہت ہی باصلاحیت بولر ہیں اور میں ان کے روشن مستقبل کے لئے نیک تمنائیں رکھتا ہوں۔ ہر کسی کے پاس مختلف نوعیت کا ٹیلنٹ ہوتا ہے۔ میں اپنی صلاحیتوں پر یقین رکھتا ہوں اور مجھے یقین ہے کہ میں کھیل کا نقشہ بدل سکتا ہوں جبکہ یہی سوچ شاداب خان کی بھی ہو گی۔

مزید خبر یں

 دبئی (اردو ووز)معروف پاکستانی اداکارہ اور پشاور زلمی کی برانڈ ایمبیسڈر ماہرہ خان نے کہاہے کہ اگر وہ ایتھلیٹ ہوتیں تو کرکٹر بننا پسند کرتیں اور ان کی کوشش ہوتی کہ وہ عمران خان جیسی کرکٹر بنیں۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ماہرہ خان کا کہنا ... تفصیل

 اسلام آباد (اردو ووز)اسلام آباد فٹ بال ایسوسی ایشن کے زیراہتمام اسلام آباد مریڈین اے ڈویژن فٹبال لیگ 3 مارچ سے شروع ہوگی ۔

اسلام آباد فٹ بال ایسوسی ایشن کے جنرل سیکرٹری سید شرافت حسین بخاری نے بتایاکہ لیگ میں اسلام آباد کی بارہ ٹیمیں ... تفصیل

 دبئی (اردو ووز)پاکستان سپر لیگ کی فرنچائز کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے کپتان سرفراز احمد نے کہا ہے کہ کھلاڑیوں کی غیر ملکی لیگ میں شرکت کو کنٹرول کرنا ضروری ہے۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے کپتان سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ ... تفصیل