لورالائی میں سیکورٹی فورسز کا آپریشن ،کالعدم تحریک طالبان پاکستان کا اہم کمانڈر 4ساتھیوں سمیت ہلاک              حکومت کا شہبازشریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کےفیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کرنے کا فیصلہ              وزیر پٹرولیم نے گیس کی قیمتوں میں مزید اضافے کا عندیہ دے دیا              پاکستان نے غیرملکی سیاحوں کے ویزے کیلئے این اوسی کی شرط ختم کردی              منی لانڈرنگ کیس منتقلی کیخلاف اپیل، آصف زرداری کو جواب الجواب جمع کرانے کا حکم              لاہور ہائیکورٹ کا شہباز شریف کا نام ای سی ایل سے خارج کر نے کا حکم              سپریم کورٹ نے نواز شریف کی درخواست ضمانت منظور کر لی       
تازہ تر ین

پاکستان صاف پانی کی کمی، صفائی پر 12 کھرب 50 ارب روپے خرچ کرتا ہے،ورلڈ بینک

Mineral water bottles-1

نیویارک(انٹرنیشنل ڈیسک) صاف پانی کی کمی اور صفائی پاکستان کی معیشت پر 12 کھرب 50 ارب روپے کا بوجھ ڈال رہی ہے جو فی کس 6 ہزار 305 روپے بنتا ہے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ورلڈ بینک کی جانب سے پاکستان میں پانی کی فراہمی، صفائی اور غربت کے حوالے سے رپورٹ شائع کی گئی جس میں ان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں پانی اور صفائی پر فی کس 1 ہزار 390 روپے خرچ کیے جاتے ہیں جو ملک کی مجموعی پیداوار کا ایک فیصد ہے۔تاہم پانی کی حفاظت کے ساتھ فراہمی اور نکاسی کے لیے 2030 تک سالانہ 3 کھرب 93 ارب روپے درکار ہوں گے جو ملک کی مجموعی پیداوار کا 1.4 فیصد ہوگا جس کا مطلب ہے کہ ملک کو اگلے 12 سالوں میں 47 کھرب روپے پانی اور صفائی میں خرچ کرنے ہوں گے۔

رپورٹ جس کا عنوان جب پانی خطرہ بن جائے نے تجویز دی کہ بجٹ میں سب سے ضروری علاقوں کو توجہ دینی چاہیے، پانی کی فراہمی کے لیے ایک طریقہ کار بنانا چاہیے اور صفائی کے فنڈز کو ضلعی سطح پر پہنچانا چاہیے اور منصوبہ بندی کو کم از کم اگلے 3 سال کے لیے تیار کرنا چاہیے۔مقامی حکومتوں کو بھی پانی اور صفائی کی اسکیموں کی نشاندہی اور نظرثانی کے لیے مداخلت کرنی چاہیے تاکہ احتساب کا عمل بھی ساتھ ساتھ رہے۔وہ ضلع جہاں بچوں میں نامکمل افزائش کی شرح زیادہ ہے وہاں معیاری پانی، نکاسی اور صفائی کو ترجیح دینی چاہیے۔

نکاسی اور ٹوائلٹ سے متعلقہ اسکیمیں بھی متعارف کرائی جانی چاہیے جن کے لیے علیحدہ بجٹ مختص کیا جانا چاہیے۔حکام کا ماننا ہے کہ شعبے کی 90 فیصد رقم پانی کی فراہمی پر خرچ ہوتی ہے جبکہ 10 فیصد سے بھی کم صفائی کے لیے خرچ ہوتا ہے۔رپورٹ میں مقامی حکومت کی تکنیکی صلاحیتوں کی کمی بھی نشاندہی کی گئی۔رپورٹ میں کہا گیا کہ صوبائی سطح پر منصوبہ بندی کا فریم ورک بھی انتہائی کمزور ہے۔

مزید خبر یں

کراچی (نیوز ڈیسک)پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں ایک روزہ مندی کے بعد کاروباری ہفتے کے دوسرے روزآج منگل کواتارچڑھاﺅ کے بعد تیزی رہی اور کے ایس ای100انڈیکس کی38200اور38300کی نفسیاتی حدیں بحال ہوگئیں،تیزی کے نتیجے میں سرمایہ کاری مالیت میں41ارب37کروڑروپے سے زائدکااضافہ،کاروباری حجم گذشتہ روز کی نسبت52.97فیصدزائد جبکہ51فیصد ... تفصیل

کراچی (نیوز ڈیسک)انٹربینک مارکیٹ میں پاکستانی روپے کے مقابلے میں ڈالر کی قدر میں استحکام تاہم اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر کی قدر میں30پیسے کی کمی ریکارڈ کی گئی۔فاریکس ایسوسی ایشن آف پاکستان کے جاری کردہ اعدادوشمار کے مطابق آج منگل کوانٹرمارکیٹ میں پاکستانی روپے کے ... تفصیل

کراچی (نیوز ڈیسک)بین الاقوامی بلین مارکیٹ میں فی اونس سونے کی قیمت میں 3ڈالر کی کمی ، جس کے نتیجے میں مقامی صراافہ مارکیٹوں میں بھی فی تولہ سونا200روپے سستاہوگیا۔آل کراچی صراف اینڈجیولرزایسوسی ایشن کے مطابق آج منگل کو بین الاقوامی گولڈ مارکیٹ میں فی اونس ... تفصیل