تحریک انصاف نے آصف زرداری کی نااہلی کیلئے درخواست دائر کر دی              کھیل کے میدان سے افسوسناک خبر اہم ترین عہدیدار نے تنگ آکر استعفیٰ دیدیا              قطر جانے کے خواہشمند افراد کیلئے بڑی خوشخبری آگئی پاکستانی پروفیشنلز اور ہنرمند افراد متوجہ ہوں، پھر نہ کہنا خبر نہ ہوئی              یو اے ای میں رہائش پذیر پاکستانیوں کیلئے دھماکے دار خبر آگئی ، عام تعطیل کا اعلان کردیاگیا              سیاحوں کی بس میں دھماکہ ، ہلاکتیں ، متعدد زخمی ، افسوسناک واقعہ کہاں پیش آیا ؟ جانئے              پارسل بھیجنا ہو تو دورنہ جائیں، اب ڈاکخانے کا عملہ ہی گھر بلا لیں ایسی سہولت متعارف جان کرآپ بھی دانتوں تلے انگلیاں دبا لینگے              باکمال لوگ ، لاجواب سروس کے شاندار اقدام نے شہریوں کے دل جیت لیئے ،جان کر آپ بھی داد دیئے بغیر نہ رہ سکیں گے              اہم ترین ساہم ترین سیاسی رہنما رشتہ ازدوج میں منسلک ہوگئے، لڑکی کون؟ کس بڑی شخصیت کی بیٹی ہیں ؟ جانئےیاسی رہنما رشتہ ازدوج میں منسلک ہوگئے، لڑکی کون؟ کس بڑی شخصیت کی بیٹی ہیں ؟ جانئے              خوفناک حادثے نے سب کو رُلادیا ، ایک ہی خاندان کے 4 افراد جاں بحق ،ہر طرف چیخ وپکار       
تازہ تر ین

پاکستان صاف پانی کی کمی، صفائی پر 12 کھرب 50 ارب روپے خرچ کرتا ہے،ورلڈ بینک

Mineral water bottles-1

نیویارک(انٹرنیشنل ڈیسک) صاف پانی کی کمی اور صفائی پاکستان کی معیشت پر 12 کھرب 50 ارب روپے کا بوجھ ڈال رہی ہے جو فی کس 6 ہزار 305 روپے بنتا ہے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ورلڈ بینک کی جانب سے پاکستان میں پانی کی فراہمی، صفائی اور غربت کے حوالے سے رپورٹ شائع کی گئی جس میں ان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں پانی اور صفائی پر فی کس 1 ہزار 390 روپے خرچ کیے جاتے ہیں جو ملک کی مجموعی پیداوار کا ایک فیصد ہے۔تاہم پانی کی حفاظت کے ساتھ فراہمی اور نکاسی کے لیے 2030 تک سالانہ 3 کھرب 93 ارب روپے درکار ہوں گے جو ملک کی مجموعی پیداوار کا 1.4 فیصد ہوگا جس کا مطلب ہے کہ ملک کو اگلے 12 سالوں میں 47 کھرب روپے پانی اور صفائی میں خرچ کرنے ہوں گے۔

رپورٹ جس کا عنوان جب پانی خطرہ بن جائے نے تجویز دی کہ بجٹ میں سب سے ضروری علاقوں کو توجہ دینی چاہیے، پانی کی فراہمی کے لیے ایک طریقہ کار بنانا چاہیے اور صفائی کے فنڈز کو ضلعی سطح پر پہنچانا چاہیے اور منصوبہ بندی کو کم از کم اگلے 3 سال کے لیے تیار کرنا چاہیے۔مقامی حکومتوں کو بھی پانی اور صفائی کی اسکیموں کی نشاندہی اور نظرثانی کے لیے مداخلت کرنی چاہیے تاکہ احتساب کا عمل بھی ساتھ ساتھ رہے۔وہ ضلع جہاں بچوں میں نامکمل افزائش کی شرح زیادہ ہے وہاں معیاری پانی، نکاسی اور صفائی کو ترجیح دینی چاہیے۔

نکاسی اور ٹوائلٹ سے متعلقہ اسکیمیں بھی متعارف کرائی جانی چاہیے جن کے لیے علیحدہ بجٹ مختص کیا جانا چاہیے۔حکام کا ماننا ہے کہ شعبے کی 90 فیصد رقم پانی کی فراہمی پر خرچ ہوتی ہے جبکہ 10 فیصد سے بھی کم صفائی کے لیے خرچ ہوتا ہے۔رپورٹ میں مقامی حکومت کی تکنیکی صلاحیتوں کی کمی بھی نشاندہی کی گئی۔رپورٹ میں کہا گیا کہ صوبائی سطح پر منصوبہ بندی کا فریم ورک بھی انتہائی کمزور ہے۔

مزید خبر یں

کراچی (نیوزڈیسک)پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں کاروباری ہفتے کے پہلے روز پیرکواتارچڑھاﺅ کے بعد تیزی رہی اورکے ایس ای100انڈیکس کی36400اور36500کی نفسیاتی حدیں بحال ہوگئی،تیزی کے نتیجے میںسرمایہ کاری مالیت میں43ارب75 کروڑ روپے سے زائدکااضافہ ،کاروباری حجم گذشتہ روز کی نسبت19.68فیصدکم جبکہ47.64فیصد حصص کی قیمتوں میںاضافہ ریکارڈ کیا ... تفصیل

کراچی(نیوزڈیسک)حکومت کی جانب سے کپاس کی درآمدی ڈیوٹی ختم کرنے کے اعلان کے بعد مقامی کاٹن مارکیٹ میں روئی کے بھاﺅ میں مندی کا عنصرغالب رہا۔ جبکہ کاروباری حجم بھی کم رہا۔ صوبہ سندھ اور پنجاب میں روئی کا بھاﺅ فی 7000 تا 8800 روپے جبکہ ... تفصیل

کراچی(نیوزڈیسک) نئے کلینڈر سال کا تیسر اکاروباری ہفتہ بھی پاکستان اسٹاک مارکیٹ کیلئے اچھا ثابت ہوا ،گزشتہ کاروباری ہفتے کے دوران نہ صرف کے ایس ای100انڈیکس 200پوائنٹس بڑھ گیا بلکہ 48ارب روپے کے اضافے سے مارکیٹ کو مجموعی سرمایہ بھی79کھرب روپے سے تجاوز کر گیا ۔پاکستان ... تفصیل