دفترخارجہ کانیوزی لینڈ سانحے میں شہید ہونے والے 4 افراد کے ورثا کے لئے ویزہ کی سہولت کا اعلان              پیپلزپارٹی نے رابطہ عوام مہم شروع کرنے کا اعلان کردیا              سابق وفاقی وزیر کامران مائیکل پر سفری پابندی عائد              سینیٹ کمیٹی: سعودی ولی عہد کے دورہ پاکستان میں آنے والے اخراجات کی تفصیلات طلب              سانحہ نیوزی لینڈ : شہید پاکستانیوں کی تعداد 6 ہوگئی              پاک فوج نے بھارت کاجاسوس ڈرون مار گرایا              شیخ رشید کا وزیر اعظم کی جانب سے مزدوروں کےلئے تین ، تین ہزار روپے انعام کا اعلان              کرائسٹ چرچ مساجد پر حملہ کرنے والا انتہا پسند عدالت میں پیش،قتل کا الزام عائد              آصف زرداری نے میگا منی لانڈرنگ کیس کی اسلام آباد منتقلی کا فیصلہ چیلنج کردیا       
تازہ تر ین

وہی ہوا جس کا ڈرتھا ،پاکستانیوں کیلئے تشویشناک خبر آگئی روپے کی قدر میں مزید کمی اور ڈالر کی مزید اُڑان کا خدشہ

اسلام آباد(نیو زڈیسک)ملک بھر میں ڈالر کی قدر میں ایک مرتبہ پھر سے اضافہ ہونے کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق گورنر اسٹیٹ بینک طارق باجوہ نے بھی روپے کی قدر میں مزید کمی اور ڈالر کی مزید اُڑان کا خدشہ ظاہر کر دیا ہے۔ گذشتہ روز سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ میں ان کیمرہ بریفنگ کی درخواست مسترد ہونے پر گورنر اسٹیٹ بینک طارق باجوہ نے بتایا کہ گذشتہ مالی سال کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ 19 ارب ڈالر جبکہ تجارتی خسارہ 36 ارب ڈالر رہا۔گذشتہ دور حکومت میں ہم نے ڈالر کو باندھے رکھا لیکن اب معاشی مجبوریاں ہیں ۔ طارق باجوہ کا کہنا تھا کہ مسئلے کی اصل جڑ تجارتی اور کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ ہے ۔ درآمدات میں کمی اور برآمدات نہ اضافہ نہ ہوا تو صورتحال مزید بھی بگڑ سکتی ہے ۔وزیر مملکت ریونیو حماد اظہر نے کہا کہ روپے کی قدر میں کمی سے بیرونی قرضوں میں کوئی اضافہ نہیں ہوگا۔ گذشتہ چار سال میں روپے کی قدر کم نہ ہونے سے ایک سو بیس ملیں بند ہوگئیں ۔چین کے ساتھ تجارت میں ڈھائی سو ارب روپے کی انڈر انوائسنگ ہو رہی ہے۔ میڈیا سے گفتگو میں گورنر اسٹیٹ بینک نے کہا کہ سعودی پیکیج کے تحت فنڈ جلد ملنا شروع ہو جائیں گے اورمؤخرادائیگی پر تیل کی فراہمی بھی آئندہ ماہ شروع ہو جائے گی۔ دوسری جانب عالمی مانیٹری ادارے فچ سلوشنز نے بھی مالی 2019ء کے اختتام تک ڈالر کے مقابلے میں روپے کی قدر میں مزید کمی واقع ہونے کا امکان ظاہر کر دیا ہے۔ پاکستان کی موجودہ معاشی صورتحال سے متعلق عالمی مانیٹری ادارے فچ سلوشنز نے تجزیاتی رپورٹ جاری کی۔عالمی مانیٹری ادارے فچ سلوشنز کے مطابق پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان معاہدے میں تاخیر کے باعث مالی سال 2019ء کے اختتام تک ڈالر کی قدر 150 روپے کی سطح تک پہنچ سکتی ہے۔

مزید خبر یں

کراچی (نیوز ڈیسک)پاکستان اسٹاک مارکیٹ گذشتہ ہفتے مجموعی طور پر مندی کی لپیٹ میں رہی ،کے ایس ای100انڈیکس600پوائنٹس گھٹ گیا جس سے انڈیکس 38900پوائنٹس سے کم ہو کر38300پوائنٹس کی کم سطح پر بند ہوا ،مندی کے سبب مارکیٹ میں سرمایہ کاروں کے1کھرب12ارب روپے سے زائدڈوب گئے ... تفصیل

کراچی(نیوز ڈیسک)اسٹیٹ بینک کے اعدادو شمار کے مطابق رواں مالی سال کے پہلے 7 ماہ میں غیرملکی سرمایہ کاروں نے اسٹاک مارکیٹ سے 40 کروڑ 89 لاکھ ڈالر کا سرمایہ نکال لیا، جب کہ گزشتہ مالی سال کے مقابلے میں رواں سال جولائی تا جنوری مجموعی ... تفصیل

کراچی(نیوزڈیسک)مقامی کاٹن مارکیٹ میں گزشتہ ہفتہ کے دوران ٹیکسٹائل و اسپننگ ملز نے روئی کی خریداری بڑھادی ہے جبکہ جنرز نے بھی اسٹاک میں رکھی ہوئی روئی فروخت کرنا شروع کردی جس کے باعث کاروباری حجم میں نسبتاً اضافہ ہوگیا جبکہ روئی کے بھاﺅ میں بھی ... تفصیل