پشاور: احتجاج کرنے والے ڈاکٹروں کا 2 روز کے لیے او پی ڈی کھولنے کا اعلان              ڈالر کی قدر میں اضافہ، انٹربینک مارکیٹ میں 152 کی ریکارڈ سطح پر پہنچ گیا              گلگت بلتستان سے بھارتی خفیہ ایجنسی ’را‘ کا نیٹ ورک پکڑا گیا              اسٹیٹ بینک کا نئی مانیٹری پالیسی کا اعلان، شرح سود 12.25 فیصد کردی گئی              نواز شریف کی طبی بنیادوں پر درخواست ضمانت سماعت کے لئے مقرر,2 رکنی بنچ کل سماعت کرے گا              جعلی ڈگری کیس ،پی آئی اے کے 8 ملازمین کی نظر ثانی و متفرق درخواستیں خارج              حکومتِ پنجاب کا چندہ جمع کرنے والی کالعدم تنظیموں کے خلاف کریک ڈاؤن کا حکم              نواز شریف نے سزا معطلی کے لیے اسلام آباد ہائی کورٹ سے دوبارہ رجوع کر لیا              اپوزیشن کا عید کے بعد حکومت مخالف تحریک کیلیے اے پی سی بلانے کا اعلان       
تازہ تر ین

کے سی سی آئی کے وفد کا ایف بی آر کے ساتھ بجٹ تجاویز پر تبادلہ خیال

کراچی(نیوز ڈیسک)کراچی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے وفد نے چیئرمین فیڈرل بورڈ آف ریونیو جہانزیب خان سے بزنس مین گروپ و سابق صدر کے سی سی آئی سراج قاسم تیلی کی سربراہی میں ایف بی آر ہاوس اسلام آباد میں ملاقات کی اور کے سی سی آئی کی بجٹ تجاویز برائے 2019-20 پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا۔ وفد میں بی ایم جی کے وائس چیئرمین ہارون فاروقی اور انجم نثار، جنرل سیکریٹری اے کیو خلیل، کے سی سی آئی کے صدر جنید اسماعیل ماکڈا اورسابق سینئر نائب محمد ابراہیم کوسمبی شامل تھے جبکہ ممبر ان لینڈ ریونیو پالیسی ڈاکٹر حامد عتیق سرور،ممبر کسٹمز پالیسی محمد جاوید غنی اور چیف آف ممبر انکم ٹیکس،چیف آف سیلز ٹیکس ،چیف آف ا یکسائز ڈیوٹی ودیگر حکام بھی اجلاس میں موجود تھے۔اجلاس میں مختلف اہم معاملات پر اتفاق رائے کرتے ہوئے ایف بی آر حکام نے کے سی سی آئی کی اکثریت بجٹ تجاویز پر آمادگی ظاہر کی اور یہ یقین دہانی کروائی گئی کہ آنے والے بجٹ میں ان تجاویز کو شامل کیا جائے گا۔ایف بی آر حکام نے کمرشل امپورٹرزاور مینوفیکچررز کی جانب سے خام مال کی درآمد پر ٹیکس اسٹرکچر کو یکساں کرنے پر بھی اتفاق کیا۔انہوں نے ان لینڈ ریونیو حکام کے صوابدیدی اختیارات کا جائزہ لینے اور انہیں ختم کرنے کا وعدہ بھی کیاجو تاجر وصنعتکار برادری کو ہراساں کرنے اور بھتہ خوری کا باعث ہیں۔ایف بی آر کی جانب سے چھاپوں اور بینک اکاونٹس منجمد کرنے کے مسئلے پر تبادلہ خیال کرتے ہوئے کے سی سی آئی کے وفد اور ایف بی آر حکام کے درمیان اتفاق ہوا کہ کاروباری مقامات پربے ترتیب چھاپے مارنے کے بجائے صرف کسی بڑی رقم کی ہیرا پھیری کی نشاندہی کی صورت میں اوراگر ٹھوس ثبوت دستیاب ہوں تو اس طرح کی کارروائی کی جائے۔ کے سی سی آئی کے وفد نے تمام بڑے مسائل جن میں انکم ٹیکس،سیلز ٹیکس اور صوابدیدی اختیارات کے ساتھ ساتھ معیشت کے مختلف شعبوں میں رعایت اور استثنیٰ پر بھی روشنی ڈالی جن کی وجہ سے ٹیکس نظام مسخ ہوا۔چیئرمین بی ایم جی و سابق صدر کے سی سی آئی سراج قاسم تیلی نے اس موقع پر نشاندہی کی کہ موجودہ ٹیکس نظام،متعلقہ قوانین اور صوابدیدی اختیارات تاجروصنعتکار برادری کو ہراساں کرنے کے لیے استعمال ہورہے ہیں جو اقتصادی ترقی میں رکاوٹ پیدا کرنے کا باعث ہیں۔سازگار ماحول اور تجارت کو مداخلت سے پاک بنانے اوراقتصادی سرگرمیوں کو بحال کرنے کے لیے ان قوانین میں اصلاحات لانے کی ضرورت ہے۔اس موقع پر ایف بی آر کی ٹیم کو ایک جامع پریزینٹیشن بھی دی گئی جس میں ٹیکسیشن سے متعلق مسائل پر روشنی ڈالی گئی جس میں کاروبار کو آسان بنانے اورریونیو کو بڑھانے سے متعلق اقدامات بھی تجویز کیے گئے۔

مزید خبر یں

کراچی(نیوز ڈیسک) اسٹیٹ بینک آف پاکستان کی جانب سے آئندہ دو ماہ کیلئے مانیٹری پالیسی کا اعلان کردیا گیا ہے جس کے بعد پالیسی ریٹ 1.50روپے اضافے کے بعد 10.75سے12.25 ہوگیا ہے ۔گورنر اسٹیٹ بینک رضا باقر کی زیر صدارت مانیٹری پالیسی کا اجلاس ہوا جس ... تفصیل

کراچی (نیوز ڈیسک) ملکی کرنسی مارکیٹوں میں امریکی ڈالر کے مقابلے میں پاکستانی روپے کی بے قدری کا تسلسل جاری ہے، انٹربینک مارکیٹ میں امریکی ڈالر کی قیمت خریدمیں3.00روپے اورقیمت فروخت میں3.25روپے اوراوپن کرنسی مارکیٹ میں امریکی ڈالر کے مقابلے میں پاکستانی روپے کی قیمت خریدمیں1.00روپے ... تفصیل

کراچی (نیوز ڈیسک) بین الاقومی گولڈ مارکیٹ میں فی اونس سونے کی قیمت میں3ڈالر کی کمی،تاہم مقامی صرافہ مارکیٹوں میں فی تولہ سونا200روپے مہنگاہوگیا۔آل کراچی صراف اینڈجیولرزایسوسی ایشن کے مطابق آج پیر کوبین الاقوامی گولڈ مارکیٹ میں فی اونس سونے کی قیمت میں3ڈالرکی مزید کمی ریکارڈ ... تفصیل