پاکستان بار کونسل نے فروغ نسیم کو کابینہ سے ہٹانے کا مطالبہ کردیا
ایشیائی ترقیاتی بینک نے سال 2019 میں پاکستان کو 2 ارب 40 کروڑ ڈالر کا ریکارڈ قرض دیا
اسلام آباد ہائیکورٹ،پرویز مشرف کےخلاف فیصلہ سنانےوالے جسٹس وقار سیٹھ کےخلاف ریفرنس دائر کرنے کےلئے درخواست دائر
سپریم کورٹ،ڈپٹی سپیکر قاسم سوری کے حلقے میں دوبارہ انتخابات کے حکم کیخلاف اپیل سماعت کیلئے مقرر ،بینچ 25 فروری کو سماعت کرے گا
وفاقی حکومت نے بیرسٹر خالد جاوید کی بطور اٹارنی جنرل تعیناتی کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا
صدر مملکت کاپشاور زلمی کے کپتان ڈیرن سیمی کو اعزازی شہریت اور اعلی ترین سول ایوارڈ کا اعلان
ایف اے ٹی ایف کا پاکستان کو مزید 4 ماہ گرے لسٹ میں برقرار رکھنے کا فیصلہ
تازہ تر ین

سعودی عرب کا اسپیشل زونز میں سرمایہ کاروں کے لیے نئی سہولیات کا اعلان

ریاض (نیوزڈیسک) سعودی عرب کے وزیر محنت و سماجی بہبود انجینئر احمد الراجحی نے مملکت میں جنرل انویسٹمنٹ اتھارٹی کے ساتھ ایک نیا منصوبہ متعارف کرانے کا اعلان کیا ہے۔ اس منصوبے کے تحت اسپیشل اور لوجسٹک زونز میں سرمایہ کاری کرنے والوں کو سہولیات پیش کی جائیں گی۔ریاض میں ایک ایونٹ میں شرکت کے دوران الراجحی نے کہا کہ ریٹیل سیکٹر ملکی معیشت کے اہم سیکٹروں میں سے ہے۔ مملکت کی مجموعی مقامی پیداوار میں ریٹیل سیکٹر کا تناسب 10 فیصدسے زیادہ ہے۔سعودی اخبار کے مطابق وزیر محنت کا کہنا تھا کہ ٹیکنالوجی انقلاب، ڈیجیٹلائزیشن اور اسمارٹ فونز کے ذریعے صارفین کو بہترین اور تیز ترین خدمات پیش کیے جانے کے نتیجے میں آج ریٹیل سیکٹر کو بہت سے چیلنجوں کا سامنا ہے۔الراجحی نے بتایا کہ اس وقت مملکت کے ریٹیل سیکٹر میں بیس لاکھ سے زیادہ مرد اور خواتین مخلتف پیشوں میں ملازمت کر رہے ہیں۔ یہ لوگ سعودی عرب میں نجی سیکٹر میں کام کرنے والی مجموعی ورک فورس کا 25 فیصدسے زیادہ ہیں۔ اس سیکٹر کے حجم میں اضافے کا سلسلہ جاری ہے اور یہ مملکت میں بے روزگاری کی شرح کو کم کرنے میں اپنا کردار ادا کرے گا۔الراجحی نے بتایا کہ ان کی وزارت نے عمل المستقبل(فیوچر ورک) کے نام سے ایک سرکاری کمپنی کی تاسیس پر کام کیا۔ اس کمپنی کا مقصد مستقبل کے تناظر میں روزگار کے مواقع اور کام کے نئے ماڈل کے بارے میں معلومات فراہم کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگرچہ اس کمپنی کی عمر ایک برس سے کم ہے تاہم اس کے پلیٹ فارم سے جڑنے والوں کی تعداد 50 ہزار آزاد ورکروں تک پہنچ گئی ہے۔ توقع ہے کہ 2030 تک اس میں مزید دس لاکھ افراد شمولیت اختیار کریں گے۔ بعد ازاں یہ کمپنی روزگار کے نئے مواقع تلاش کر لے گی۔ اس طرح موجودہ روایتی ملازمتوں کے خاتمے کی تلافی ہو سکے گی۔دوسری جانب سعودی عرب کی جنرل انویسٹمنٹ اتھارٹی کے گورنر انجینئر ابراہیم العمر کا کہنا ہے کہ رواں سال کے دوران ریٹیل سیکٹر میں تیز اور بنیادی نوعیت کی تبدیلیاں سامنے آئیں گی۔ انہوں نے کہا کہ مملکت میں اس سیکٹر کے اندر جو ترقی اور پیش رفت سامنے آ رہی ہے وہ عالمی سطح پر اس صنعت کی حقیقی مثال کی عکاسی کرتی ہے۔العمر کے مطابق سعودی عرب میں اس وقت پیش کردہ سرماریہ کاری کے مواقع کا حجم 500 ارب ڈالر سے تجاوز کر چکا ہے۔ یہ مواقع مملکت میں کے متعدد منصوبوں کے ضمن میں ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ 2018 کے مقابلے میں 2019 میں مملکت میں آنے والی براہ راست سرمایہ کاری کا تناسب 10فیصد زیادہ رہا۔

مزید خبر یں

کراچی(نیوزڈیسک)گورنراسٹیٹ بینک رضا باقرنے کہاہے کہ پاکستان کم ترین ایکسپورٹ کے ساتھ افغانستان، یمن، سوڈان، جنوبی سوڈان اور ایتھوپیا کے ساتھ کھڑا ہے اور ملک ایسے نہیں چلا کرتے،پہلے جو لوگ ڈیفالٹ کی باتیں کر رہے تھے اب وہ خاموش ہیں، کچھ عرصے قبل تک ہمارے ... تفصیل

کراچی (نیوز ڈیسک) کراچی میں پیٹرول کی قلت سے متعلق افواہوں کے پیش نظر پاکستان اسٹیٹ آئل (پی ایس او) نے زور دیا ہے کہ پیٹرول وافر مقدار میں موجود ہے اس لیے شہریوں کو خوفزدہ ہونے کی ضرورت نہیں ہے۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز شام ... تفصیل

کراچی (نیوزڈیسک) پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں منگل کواتار چڑھاﺅ کا سلسلہ جاری رہنے کے بعد مندی غالب آگئی جس کے نتیجے میںکے ایس ای100انڈیکس 101.58پوائنٹس کی کمی سے 40175.35پوائنٹس کی سطح پرآ گیاجب کہ57.48فیصد کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں کمی ریکارڈ کی گئی جس ... تفصیل

Columns

Hikayat