حکومت کا سینیٹ انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ کے خاتمے کیلئے اوپن بیلٹ کا فیصلہ
جی 20 سے پاکستان کو قرضوں کی ادائیگی میں 2 ارب ڈالر سے زائد ریلیف ملنے کا امکان
سعودی عرب میں کوڑے مارنے کی سزا کو باضابطہ ختم کردیا گیا
سٹیزن پورٹل سے شہری غیر مطمئن، وزیراعظم کا اداروں کیخلاف تحقیقات کا حکم
کورونا نے پی ٹی آئی کی رکن اسمبلی شاہین رضا کی جان لے لی
ایشیائی ترقیاتی بینک نے پاکستان کو کورونا وباء سے بچاؤ کیلئے 30 کروڑ ڈالر کا قرض فراہم کر دیا
حکومت بلوچستان نے اسمارٹ لاک ڈاؤن میں 2 جون تک توسیع کردی
پاکستان میں 2 ماہ بعد ریلوے آپریشن بحال کر دیا گیا
کرونا وبا،ملک میں 1ہزار سے زائد اموات،مریضو ں کی تعداد47ہزار سے تجاوز کر گئی،13ہزار سے زائدصحتیاب
تازہ تر ین

سعودی عرب کا اسپیشل زونز میں سرمایہ کاروں کے لیے نئی سہولیات کا اعلان

ریاض (نیوزڈیسک) سعودی عرب کے وزیر محنت و سماجی بہبود انجینئر احمد الراجحی نے مملکت میں جنرل انویسٹمنٹ اتھارٹی کے ساتھ ایک نیا منصوبہ متعارف کرانے کا اعلان کیا ہے۔ اس منصوبے کے تحت اسپیشل اور لوجسٹک زونز میں سرمایہ کاری کرنے والوں کو سہولیات پیش کی جائیں گی۔ریاض میں ایک ایونٹ میں شرکت کے دوران الراجحی نے کہا کہ ریٹیل سیکٹر ملکی معیشت کے اہم سیکٹروں میں سے ہے۔ مملکت کی مجموعی مقامی پیداوار میں ریٹیل سیکٹر کا تناسب 10 فیصدسے زیادہ ہے۔سعودی اخبار کے مطابق وزیر محنت کا کہنا تھا کہ ٹیکنالوجی انقلاب، ڈیجیٹلائزیشن اور اسمارٹ فونز کے ذریعے صارفین کو بہترین اور تیز ترین خدمات پیش کیے جانے کے نتیجے میں آج ریٹیل سیکٹر کو بہت سے چیلنجوں کا سامنا ہے۔الراجحی نے بتایا کہ اس وقت مملکت کے ریٹیل سیکٹر میں بیس لاکھ سے زیادہ مرد اور خواتین مخلتف پیشوں میں ملازمت کر رہے ہیں۔ یہ لوگ سعودی عرب میں نجی سیکٹر میں کام کرنے والی مجموعی ورک فورس کا 25 فیصدسے زیادہ ہیں۔ اس سیکٹر کے حجم میں اضافے کا سلسلہ جاری ہے اور یہ مملکت میں بے روزگاری کی شرح کو کم کرنے میں اپنا کردار ادا کرے گا۔الراجحی نے بتایا کہ ان کی وزارت نے عمل المستقبل(فیوچر ورک) کے نام سے ایک سرکاری کمپنی کی تاسیس پر کام کیا۔ اس کمپنی کا مقصد مستقبل کے تناظر میں روزگار کے مواقع اور کام کے نئے ماڈل کے بارے میں معلومات فراہم کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگرچہ اس کمپنی کی عمر ایک برس سے کم ہے تاہم اس کے پلیٹ فارم سے جڑنے والوں کی تعداد 50 ہزار آزاد ورکروں تک پہنچ گئی ہے۔ توقع ہے کہ 2030 تک اس میں مزید دس لاکھ افراد شمولیت اختیار کریں گے۔ بعد ازاں یہ کمپنی روزگار کے نئے مواقع تلاش کر لے گی۔ اس طرح موجودہ روایتی ملازمتوں کے خاتمے کی تلافی ہو سکے گی۔دوسری جانب سعودی عرب کی جنرل انویسٹمنٹ اتھارٹی کے گورنر انجینئر ابراہیم العمر کا کہنا ہے کہ رواں سال کے دوران ریٹیل سیکٹر میں تیز اور بنیادی نوعیت کی تبدیلیاں سامنے آئیں گی۔ انہوں نے کہا کہ مملکت میں اس سیکٹر کے اندر جو ترقی اور پیش رفت سامنے آ رہی ہے وہ عالمی سطح پر اس صنعت کی حقیقی مثال کی عکاسی کرتی ہے۔العمر کے مطابق سعودی عرب میں اس وقت پیش کردہ سرماریہ کاری کے مواقع کا حجم 500 ارب ڈالر سے تجاوز کر چکا ہے۔ یہ مواقع مملکت میں کے متعدد منصوبوں کے ضمن میں ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ 2018 کے مقابلے میں 2019 میں مملکت میں آنے والی براہ راست سرمایہ کاری کا تناسب 10فیصد زیادہ رہا۔

مزید خبر یں

اسلام آباد (نیوزڈیسک)اقتصادی رابطہ کمیٹی (ای سی سی) نے دنیا کی 20 بڑی معیشتوں کے حامل ممالک کے گروپ (جی 20) سے قرضوں کو مؤخر کرانے کا معاہدہ کرنے کی منظوری دے دی ہے۔اسلام آباد میں وزیراعظم کے مشیر خزانہ حفیظ شیخ کی زیر صدارت اقتصادی ... تفصیل

نیویارک (نیوزڈیسک)عالمی بینک نے متنبہ  کیا ہے کہ عالمگیر وبا کورونا سے دنیا بھر میں 6 کروڑ افراد انتہائی غربت کا شکار ہوسکتے ہیں۔برطانوی نشریاتی ادارے کی رپورٹ کے مطابق عالمی بینک کے صدر ڈیوڈ میلپاس نے کہا کہ پوری دنیا کو اس وقت عالمگیر وبا ... تفصیل

اسلام آباد (نیوزڈیسک)وزیر اعظم عمران خان نے 'تاریخی مالی جدت' کو سراہا جس کے تحت حکومت نے پاکستان اسٹاک ایکسچینج (پی ایس ایکس) میں مسابقتی عمل (کمپیٹیٹو بک بلڈنگ) کے ذریعے سکوک کے اجرا سے 200 ارب روپے اکٹھے کیے۔ٹوئٹر پر بیان جاری کرتے ہوئے وزیر ... تفصیل