حکومت کا سینیٹ انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ کے خاتمے کیلئے اوپن بیلٹ کا فیصلہ
جی 20 سے پاکستان کو قرضوں کی ادائیگی میں 2 ارب ڈالر سے زائد ریلیف ملنے کا امکان
سعودی عرب میں کوڑے مارنے کی سزا کو باضابطہ ختم کردیا گیا
سٹیزن پورٹل سے شہری غیر مطمئن، وزیراعظم کا اداروں کیخلاف تحقیقات کا حکم
کورونا نے پی ٹی آئی کی رکن اسمبلی شاہین رضا کی جان لے لی
ایشیائی ترقیاتی بینک نے پاکستان کو کورونا وباء سے بچاؤ کیلئے 30 کروڑ ڈالر کا قرض فراہم کر دیا
حکومت بلوچستان نے اسمارٹ لاک ڈاؤن میں 2 جون تک توسیع کردی
پاکستان میں 2 ماہ بعد ریلوے آپریشن بحال کر دیا گیا
کرونا وبا،ملک میں 1ہزار سے زائد اموات،مریضو ں کی تعداد47ہزار سے تجاوز کر گئی،13ہزار سے زائدصحتیاب
تازہ تر ین

معاشی پیکیج،پیٹرولیم مصنوعات اگلے 3 ماہ میں مزید سستی ہوں گی، مشیر خزانہ کاا علان

اسلام آباد (نیوز ڈیسک)مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ نے وزیراعظم کے اعلان کردہ معاشی پیکیج کے حوالے سے کہا ہے کہ سوا کھرب روپے کے پیکیج میں کم آمدنی اور کاروباری افراد کو سہولت دی جائیگی اور پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں مزید کم ہوں گی،گیس اور بجلی کے چھوٹے صارفین کو بل دینے میں مہلت دی جائے گی جس کے تحت 3 مہینے اقساط کی سہولت دی جائے گی،ہماری معیشت ایک اچھے انداز میں مستحکم ہورہی تھی، پچھلے 8 مہینوں میں برآمدات میں اضافہ ہو اور بیرونی سرمایہ کاری بھی 4 ارب ڈالرز تک پہنچی، کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ 20 ارب سے کم ہو کر 3 ارب رہ گیا، 4 ہزار ارب کے قرضے بھی ادا کیے گئے اور ادائیگیوں کا توازن بھی مثبت رہا،کوروناوائرس کے مسئلے سے معیشت پر برے اثرات پڑنے کا خدشہ ہے،چھوٹے کارخانے یا چھوٹے کاروبار کو بینکوں کے پاس سود میں وقفہ اور آسان شرائط پر قرضے دئیے جائیں گے۔ پریس کانفرنس کرتے ہوئے مشیر خزانہ نے کہاکہ ہماری معیشت ایک اچھے انداز میں مستحکم ہورہی تھی، پچھلے 8 مہینوں میں برآمدات میں اضافہ ہو اور بیرونی سرمایہ کاری بھی 4 ارب ڈالرز تک پہنچی۔انہوں نے کہا کہ کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ 20 ارب سے کم ہو کر 3 ارب رہ گیا، 4 ہزار ارب کے قرضے بھی ادا کیے گئے اور ادائیگیوں کا توازن بھی مثبت رہا۔حفیظ شیخ نے کہاکہ سرمایہ تاریخ میں کسی بھی 8مہینے میں اتنا جمع نہیں کیا گیا تھا جتنا پچھلے 8 ماہ میں کیا گیا جو پچھلے سال کے مقابلے میں 70 فیصد بڑھ گیا تھا، اسی سے این ایف سی کے ذریعے صوبوں کو پیسے دیے گئے اور اسٹیٹ بینک کے خزانے میں 5 ارب ڈالر اضافہ ہوا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کی معیشت کے حوالے سے یہ تمام چیزیں مثبت خبر کے طور پر ابھر رہی تھیں، دنیا میں سراہا جارہا تھا کہ پاکستان کی معیشت مضبوط سے مضبوط تر ہوتی جارہی ہے۔کوروناوائرس سے معیشت کو پہنچنے والے نقصانات پر بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کوروناوائرس کے مسئلے سے معیشت پر برے اثرات پڑنے کا خدشہ ہے، کیونکہ وہ ممالک جہاں ہم برآمد کررہے ہیں ان کی معیشت کمزور ہورہی ہے جس سے ہماری برآمدات میں کمی آئے گی’۔انہوں نے کہا کہ بیرون ملک سے ہمارے ورکر جو پیسے بھیج رہے تھے اس میں پچھلے 4 ماہ سے اضافہ ہورہا ہے جس میں کمی آسکتی ہے، اسی طرح ہمارے ملک میں اقتصادی سرگرمیاں کم ہوں گی اور ٹیکس بھی کمزور ہوگی۔حکومت کی پالیسی پر بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وزئراعظم نے جو پروگرام پیش کیا تھا وہ سوا کھرب کا پیکیج ہے اور اس کے بنیادی نکات میں مزدور اس موقع پر اپنی روزگار کھو دیں گے، اس کے متاثرین کے لیے ہم 200 ارب روپ رکھ رہے ہیں جو کاروباری برادری اور صوبائی حکومتوں سے مشاورت سے دیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ چھوٹے کارخانے یا چھوٹے کاروبار کو بینکوں کے پاس سود میں وقفہ دیا جائے اور آسان شرائط پر انہیں قرضے دیے جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ چوتھی چیز متاثرین اور اقتصادی طور پر کمزور ایک کروڑ 20 لاکھ خاندانوں کو مالی امداد دینے جارہے ہیں، اس وقت پاکستان میں 50 لاکھ لوگوں کو امداد دی جارہی ہے اور ہم مزید 70 لاکھ لوگوں کو امداد دینے جارہے ہیں۔مشیر خزانہ نے کہاکہ ان افراد کو 4 ماہ کے لیے 3 ہزار روپے ماہانہ دیے جائیں گے جس کی مجموعی رقم تقریباً 150 ارب روپے ہے اور اسی میں پناگاہ کے پروگرام بھی ہے جس کے لیے مزید فنڈ بڑھایا جائیگا۔ان کا کہنا تھا کہ یوٹیلتی اسٹورز کو 50 ارب رپے دے رہیں ہیں جس سے کھانے پینے کے اشیا سستی ملیں گی۔حکومتی پیکیج کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ 82 لاکھ ٹن گندم اپنے کسانوں سے خریدنے جارہے ہیں جس کی لاگت 280 ارب روپے ہوگی جس سے کسانوں کے لیے آسانی اور دوسرے شعبوں میں طلب بڑھے گی۔پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کو کمی کرنے کا عندیہ دیتے ہوئے انہوںنے کہاکہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمت فوری طور 15 روپے گرانے کا فیصلہ کیا اور آنے والے 3 مہینوں میں اس میں مزید کمی کی جائے گئی مگر بڑھایا نہیں جائے گا۔ان کا کہنا تھا کہ گیس اور بجلی کے چھوٹے صارفین کو بل دینے میں مہلت دی جائے گی جس کے تحت 3 مہینے اقساط کی سہولت دی جائے گی، قرض دینے اور اس پر سود کی شرح کو واپس کرنے کے لیے 3 سے 6 مہینے کی مہلت دیں گے۔

مزید خبر یں

اسلام آباد (نیوزڈیسک)اقتصادی رابطہ کمیٹی (ای سی سی) نے دنیا کی 20 بڑی معیشتوں کے حامل ممالک کے گروپ (جی 20) سے قرضوں کو مؤخر کرانے کا معاہدہ کرنے کی منظوری دے دی ہے۔اسلام آباد میں وزیراعظم کے مشیر خزانہ حفیظ شیخ کی زیر صدارت اقتصادی ... تفصیل

نیویارک (نیوزڈیسک)عالمی بینک نے متنبہ  کیا ہے کہ عالمگیر وبا کورونا سے دنیا بھر میں 6 کروڑ افراد انتہائی غربت کا شکار ہوسکتے ہیں۔برطانوی نشریاتی ادارے کی رپورٹ کے مطابق عالمی بینک کے صدر ڈیوڈ میلپاس نے کہا کہ پوری دنیا کو اس وقت عالمگیر وبا ... تفصیل

اسلام آباد (نیوزڈیسک)وزیر اعظم عمران خان نے 'تاریخی مالی جدت' کو سراہا جس کے تحت حکومت نے پاکستان اسٹاک ایکسچینج (پی ایس ایکس) میں مسابقتی عمل (کمپیٹیٹو بک بلڈنگ) کے ذریعے سکوک کے اجرا سے 200 ارب روپے اکٹھے کیے۔ٹوئٹر پر بیان جاری کرتے ہوئے وزیر ... تفصیل