وزیراعظم عمران خان نے سندھ سے 2 ہندو لڑکیوں کے اغوا کا نوٹس لے لیا              برطانیہ ، پاکستانی ہائی کمیشن نے برطانوی شہریوں کیلئے ای ویزا کا اجراءشروع کر دیا              حکومت سندھ نے ایک بارپھرسرکاری ملازمتوں پرپابندی عائد کردی              مفتی تقی عثمانی حملہ: 6 افراد کے خلاف دہشت گردی کا مقدمہ درج              پشاور بس منصوبے کا افتتاح غیر معینہ مدت تک ملتوی              سابق وزیر اعظم شوکت عزیز کے وارنٹ گرفتار ی جاری              صدر ٹرمپ اور اتحادی افواج کا شام سے داعش کے مکمل خاتمے کا اعلان              ڈیم فنڈ: کینیڈا میں عمران خان کے دستخط شدہ 2 بلے 65 ہزار ڈالرز میں نیلام              یوم پاکستان ،مسلح افواج کی شاندار پریڈ ،ٹینکوں اور میزائلوں کی نمائش ،جے ایف 17 تھنڈر طیاروں کا شاندار کرتب دکھا کر پیشہ وارانہ صلاحیتوں کا مظاہرہ              بھارت نے یسین ملک کی جماعت جموں کشمیر لبریشن فرنٹ پر پابندی لگادی       
تازہ تر ین

اپنی ذہانت اور تخلیقی صلاحیت بڑھانا چاہتے ہیں تو اس آسان ترین عادت کو اپنالیں

اسلام آباد(نیو زڈیسک)کیا آپ رات کو نیند پوری نہیں کرپاتے اور مختلف امراض کا خطرہ بڑھتا جارہا ہے ؟ تو قیلولے کو عادت بنالیں۔یہ دعویٰ آسٹریلیا میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آیا۔ساؤتھ آسٹریلیا یونیورسٹی کی تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ آپ دوپہر کے وقت سو کر بھی رات کی نیند کے فوائد کو حاصل کرسکتے ہیں۔خیال رہے کہ دوپہر کو کچھ دیر کی نیند سنت نبوی بھی ہے۔تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ دوپہر کو کچھ دیر کی نیند یا قیلولہ تخلیقی، پیداواری صلاحیتوں کے ساتھ ذہنی چوکنا پن بڑھاتا ہے۔تحقیق کے مطابق دن بھر میں 2 مختلف اوقات میں نیند لینے کی عادت کچھ افراد کے لیے قدرتی ردہم جیسی ہی ثابت ہوسکتی ہے جبکہ اس عادت کے فوائد سائنس اور تاریخی طور پر بھی ثابت ہوچکے ہیں۔تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ دوپہر کو کچھ دیر کے لیے سونا رات کو نیند کی کمی کے اثرات کو زائل کرنے کا کام بھی کرسکتا ہے۔محققین کا کہنا تھا کہ 7 سے 9 گھنٹے کی نیند کو 2 وقتوں میں تقسیم کرنے سے بھی ذاتی کارکردگی کو بہتر بنانے کا مقصد حاصل کیا جاسکتا ہے ۔خیا ل رہے کہ طبی ماہرین نے بالغ افراد کو اوسطا 7 سے 9 گھنٹے نیند روزانہ لینے کا مشورہ دیا ہے تاکہ صحت کو بہتر حالت میں رکھا جاسکے اور اس تحقیق میں کہا گیا ہے کہ 2 شفٹوں میں نیند لینا ان افراد کے لیے فائدہ مند ہوسکتا ہے جنھیں رات کو سونے میں مشکلات کا سامنا ہوتا ہے۔اس سے پہلے آسٹریلیا میں ہی ہونے والی ایک طبی تحقیق میں یہ بات سامنے آئی تھی کہ انسانی جسم دن میں 2 بار نیند لینے کے ڈیزائن کیے گئے ہیں۔ایڈیلیڈ یونیورسٹی کی تحقیق کے مطابق دوپہر کے کھانے کے بعد سستی اور غنودگی کا احساس فطری ہے کیونکہ انسان دن میں 2 نیندیں لینے کے لیے بنائے گئے ہیں۔تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ نیند کی کمی عام طور پر متعدد منفی اثرات کا باعث بنتی ہے جبکہ صحت بھی متاثر ہوتی ہے۔تحقیق کے مطابق دوپہر کو سستی کی وجہ یہ ہے کہ ہمارے جسم اس وقت قیلولے کے لیے پروگرام کیے گئے ہیں تاکہ جسمانی ردہم برقرار رہ سکے جو دن اور رات میں تو تعین کرتا ہے کہ کب جاگنا یا سونا ہے مگر دن کے وسط میں سستی کا شکار ہوجاتا ہے۔محققین کے مطابق لوگوں کو دوپہر میں 15 منٹ کی نیند یا قیلولہ کرنا چاہئے جو صحت کے لیے انتہائی مفید ہے۔

مزید خبر یں

کراچی (نیوز ڈیسک) جدید طبی تحقیق سے ثابت ہوا ہے کہ روزہ ناصرف دل کی بیماریوں اور کینسر کے خطرات کو کم کرتا ہے بلکہ روزہ داروں کے وزن کو کم کرکے ، ان کے بلڈ پریشر میں کمی لانے ، دماغی صحت کو بہتر کرنے ... تفصیل

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) سونے سے پہلے نیم گرم پانی پینا صحت کے لیے بہت فائد مند ہے۔مختلف طبی تحقیقی رپورٹس میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ اگر کوئی شخص سونے سےقبل پانی پینے سے گریزکرتا ہے تو جسم میں پانی کی کمی ہو جاتی ... تفصیل

نیویارک(نیوز ڈیسک) معروف سوشل میڈیا ویب سائٹ فیس بک نے پاکستان سمیت 5 ممالک کے ماہرین کے ساتھ شراکت داری کرتے ہوئے بغیر اجازت کے نامناسب تصاویر اپ لوڈ یا شیئر کرنے والے صارفین کو بلاک کے نئے اقدامات کا اعلان کردیا۔میڈیارپورٹس کے مطابق فیس بک ... تفصیل