وزیر اعظم نیوز ی لینڈ کا خود کار و نیم خودکارہتھیاروں پر پابندی کا اعلان              جماعت اسلامی کا متحدہ مجلس عمل سے علیحدگی کا باضابطہ اعلان              مشال قتل کیس میں مزیددو ملزمان کو عمر قید       
تازہ تر ین

انڈے کا چھلکا کھانے سے آپ اہم فوائد حاصل کر سکتے ہیں

اسلام آباد(نیو زڈیسک) طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ اںڈے کا چھلکا ڈیری مصنوعات اور ہری سبزیوں کی طرح کیلشیم کا بہت بڑا قدرتی ذریعہ ہے۔غیر ملکی ویب سائٹ پر چھپنے والی رپورٹ کے مطابق انڈے کا نصف چھلکا 1000 ملی گرام کیلشیم فراہم کر سکتا ہے جو ایک بالغ شخص کے لیے ایک دن کی مطلوبہ مقدار ہے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ انڈے کا چھلکا قدرتی طور پر کیلشیم کاربونیٹ پر مشتمل ہوتا ہے جبکہ اس کے علاوہ اس میں پروٹین اور دیگر مرکبات بھی پائے جاتے ہیں۔تحقیق کے مطابق انسانی جسم کے خلیے انڈے کے چھلکے کے پاؤڈر کے ذریعے 64% زیادہ کیلشیم جذب کرتے ہیں، اس کی وجہ انڈے کے چھلکے میں پائے جانے والے مخصوص پروٹین ہیں۔کیلشیم اور پروٹین کے علاوہ انڈے کے چھلکے میں میگنشیم، سیلینیم، اسٹرونشیم اور فلورائڈ بھی پایا جاتا ہے۔ یہ تمام معدنیات ہڈی کی صحت برقرار رکھنے کے سلسلے میں اپنا کردار ادا کرتے ہیں۔ اگر کسی شخص کے غذائی نظام میں کیلشیم کی کمی ہے تو انڈے کا چھلکا اس کمی کو دور کرنے کے لیے بہت اچھا ذریعہ ہے۔ماہرین کے مطابق 2.5 گرام انڈے کا چھلکا ایک بالغ شخص کے جسم میں کیلشیم کے ایک دن کی ضرورت پوری کرنے کے لیے کافی ہوتا ہے۔ البتہ بعض غذائی ماہرین کے نزدیک کیلشیم کی زیادہ مقدار حاصل کرنے سے صحت کے مسائل پیدا ہو سکتے ہیں۔ ان میں گردوں کی پتھری اور امراض قلب کا شکار ہونا شامل ہے

مزید خبر یں

سان فرانسسکو(نیوز ڈیسک) دنیائے انٹرنیٹ کی سب سے بڑی کمپنی گوگل نے باضابطہ طور پر ویڈیو گیم اسٹریمنگ سروس کا اعلان کردیا۔ اس سروس کے لیے خصوصی گیم کنسول یا تیز رفتار کمپیوٹرز کی ضرورت نہیں ہوگی بلکہ عام لیپ ٹاپ، ڈیسک ٹاپ، ٹیبلٹ اور اسمارٹ ... تفصیل

واشنگٹن (نیوز ڈیسک)امریکہ میں طبی تحقیق میں کہاگیاہے کہ کولڈ ڈرنکس یا میٹھے مشروبات کا استعمال صحت کے لیے تباہ کن ہوتا ہے اور جلد موت کا خطرہ بڑھاتا ہے۔ہارورڈ ٹی ایچ چن اسکول آف پبلک ہیلتھ کی تحقیق میں دریافت کیا گیا کہ چینی سے ... تفصیل

کراچی (نیوز ڈیسک) ملکی و غیر ملکی طبی ماہرین نے کہا ہے کہ بیماریوں کی جلد تشخیص مریضوں کو مستقل معذوری سے بچا سکتی ہے ، لوگوں کو چاہیے کہ وہ طبی ماہرین سے رجوع کریں ، سنی سنائی باتوں ، از خود ادویات کے استعمال ... تفصیل