وزیراعظم کامعاشی نقصانات کو ریلیف پہنچانے کیلئے تعمیرات کے شعبے کے لیے پیکج کا اعلان
کورونا سے پاکستان کا2500ارب کا نقصان، ایک کروڑ 85لاکھ لوگ بیروزگار ہوں گے
وفاقی حکومت نے ری فنڈز کی ادائیگی کیلئے 100 ارب روپے جاری کردئیے
دنیا بھر میں کرونا وبا کے مریض 10 لاکھ، ہلاکتوں کی تعداد 53 ہزار تک جا پہنچی
وزیراعظم کورونا ریلیف ٹائیگر فورس کی رجسٹریشن ،2 دن میں رجسٹرڈ نوجوانوں کی تعداد 4 لاکھ سے تجاوز کر گئی
ڈینیئل پرل قتل کیس میں رہا ہونے والے ملزمان 3 ماہ کیلئے زیرحراست
ڈینیئل پرل قتل، سندھ حکومت کافیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج کرنے کا فیصلہ
وفاقی کابینہ نے خیبرپختون خوا میں پاک فوج تعینات کرنے کی منظوری دیدی
پاکستان میں کورونا سے مزید 2 افراد جاں بحق، ہلاکتیں 37 اور مریضوں کی تعداد 2458 ہوگئی
سندھ بھر میں لاک ڈاؤن میں 14 اپریل تک توسیع، تعلیمی ادارے 31 مئی تک بند رہیں گے
تازہ تر ین

خردبینی جاندار بغیر دماغ کے پیچیدہ فیصلے کرسکتے ہیں، تحقیق

میری لینڈ(نیوزڈیسک)خردبینی جاندار بغیر دماغ کے پیچیدہ فیصلے کرسکتے ہیں۔ہارورڈ میڈیکل اسکول، امریکا کے سائنسدانوں نے دریافت کیا ہے کہ صرف ایک خلیے پر مشتمل، ننھا منا جاندار ”اسٹنٹر روئسیلائی“بھی اتنی سمجھ بوجھ رکھتا ہے کہ اپنے ارد گرد بدلتے حالات کے ردِعمل میں پیچیدہ فیصلے کرسکے، اور اگر کسی فیصلے پر عمل درآمد کا فائدہ نہ ہو تو فوراً ہی اپنی حکمتِ عملی تبدیل کردے۔اس طرح کا طرزِ عمل بالعموم بڑے اور پیچیدہ جانداروں ہی میں دیکھا گیا ہے جو بیک وقت لاکھوں، کروڑوں اور کھربوں خلیوں (سیلز) کا مجموعہ ہوتے ہیں جبکہ ان کا باقاعدہ اعصابی نظام بھی ہوتا ہے جو پیچیدہ اور تفصیلی فیصلے کرنے کا ذمہ دار ہوتا ہے۔ لیکن ایک خلیے پر مشتمل ادنیٰ جانداروں سے ایسی ”سمجھداری“ کی توقع نہیں کی جاتی بلکہ عام طور پر یہ خیال کیا جاتا ہے کہ وہ ایک لگے بندھے انداز ہی میں اپنا کام کرتے ہیں اوراعصابی نظام نہ ہونے کی وجہ سے، انتہائی سادہ قسم کے فیصلے اور حرکات و سکنات انجام دے سکتے ہیں۔اسٹنٹر روئسیلائی بھی ایسا ہی ایک جاندار ہے جو دنیا بھر کے تازہ پانیوں میں پایا جاتا ہے۔ یہ عام طور پر آہستہ بہنے والے یا کھڑے ہوئے تازہ پانی میں موجود ہوتا ہے۔ اس کا پورا جسم صرف ایک خلیے پر مشتمل ہوتا ہے لیکن اسے بیکٹیریا کی جماعت میں شامل نہیں کیا جاتا۔ خردبین کے نیچے اس کی شکل کسی بھونپو کی طرح دکھائی دیتی ہے جبکہ اس پر انتہائی باریک، خردبینی بال ہوتے ہیں جنہیں حرکت دے کر یہ پانی میں اِدھر سے ادھر حرکت کرتا ہے۔تازہ تجربات کے دوران ہارورڈ میڈیکل اسکول کے ماہرین نے اسٹنٹر روئسیلائی کے ساتھ چھیڑ خانی کی اور اسے جان بوجھ کر تنگ کیا۔ پہلے مرحلے میں اس ننھے منے یک خلوی (ایک خلیے والے) جاندار نے اپنے بال ہلا کر اور پانی میں کچھ ذرّات خارج کیے لیکن تنگ کرنے کا سلسلہ جاری رہنے پر وہ اپنی جگہ پر ہی سمٹ گیا، جیسے کہ دبک گیا ہو۔ پھر اس نے اپنا بھونپو جیسا حصہ ہلایا اور سب سے آخری کوشش کے طور پر اس نے اپنی جگہ چھوڑی اور تیزی سے پانی میں تیرتا ہوا کہیں دور چلا گیا۔اس تجربے کی ایک شارٹ ویڈیو یوٹیوب پر بھی رکھی گئی ہے ۔تجربات سے واضح ہوا کہ اگرچہ یک خلوی جانداروں میں دماغ جیسی کوئی چیز نہیں ہوتی لیکن پھر بھی وہ اپنے ارد گرد کے ماحول کو محسوس کرنے اور مختلف حالات کے تحت مختلف ردِ عمل دینے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔

مزید خبر یں

جنیوا(نیوزڈیسک) پولیو کے خاتمے کے لیے کوشاں عہدیداروں نے کہا ہے کہ وہ کورونا وائرس کے پیش نظر حفاظتی ٹیکوں کی مہم معطل کرنے پر مجبور ہوگئے ہیں۔میڈیارپورٹس کے مطابق عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) اور اس کے شراکت داروں نے فیصلہ کیا کہ قومی ... تفصیل

بیجنگ(نبوزڈیسک)کورونا وائرس کے مرکز سمجھے جانے والے ملک چین کے ماہرین کی جانب سے کی گئی حالیہ تحقیق میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ کورونا وائرس سے گھریلو جانور بھی متاثر ہوسکتے ہیں۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق چین کے شہر ہاربن میں موجود جانوروں کی بیماریوں ... تفصیل

نیویارک (نیوزڈیسک)نئے نوول کورونا وائرس سے تحفظ کیلئے عالمی ادارہ صحت کی جانب سے جاری ہدایات میں کہا گیا ہے کہ کھانسی یا چھینکنے والے فرد سے کم از کم 6 فٹ دور رہنا چاہیے۔ایک تحقیق میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ یہ فاصلہ کم ہے ... تفصیل