حکومت کا سینیٹ انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ کے خاتمے کیلئے اوپن بیلٹ کا فیصلہ
جی 20 سے پاکستان کو قرضوں کی ادائیگی میں 2 ارب ڈالر سے زائد ریلیف ملنے کا امکان
سعودی عرب میں کوڑے مارنے کی سزا کو باضابطہ ختم کردیا گیا
سٹیزن پورٹل سے شہری غیر مطمئن، وزیراعظم کا اداروں کیخلاف تحقیقات کا حکم
کورونا نے پی ٹی آئی کی رکن اسمبلی شاہین رضا کی جان لے لی
ایشیائی ترقیاتی بینک نے پاکستان کو کورونا وباء سے بچاؤ کیلئے 30 کروڑ ڈالر کا قرض فراہم کر دیا
حکومت بلوچستان نے اسمارٹ لاک ڈاؤن میں 2 جون تک توسیع کردی
پاکستان میں 2 ماہ بعد ریلوے آپریشن بحال کر دیا گیا
کرونا وبا،ملک میں 1ہزار سے زائد اموات،مریضو ں کی تعداد47ہزار سے تجاوز کر گئی،13ہزار سے زائدصحتیاب
تازہ تر ین

خیبر پختونخوا ہ کے مختلف اضلاع میں 6 پولیو وائرس کی تصدیق

لاہور( نیوزڈیسک) خیبر پختونخوا ہ کے مختلف اضلاع میں 6 پولیو وائرس کی تصدیق کے بعد ملک بھر میں سال 2019 کے پولیو کیسز کی تعداد 140 تک پہنچ گئی ،صرف خیبرپختونخوا ہ میں سال 2019 کے عرصے میں پولیو کے مجموعی طور پر 97 کیسز ہوگئے۔پولیو کے نئے کیس خیبرپختونخوا ہ کے 6 اضلاع خیبر، مہمند، باجوڑ، پشاور، تورغر اور لکی مروت میں سامنے آئے۔فراہم کردہ تفصیلات کے مطابق ضلع خیبر میں 18 ماہ کی بچی، ضلع مہمند میں 10 ماہ کے بچے، ضلع باجوڑ میں 7 ماہ کی بچی، ضلع پشاور میں 10 ماہ کی بچی، تورغر میں 12 ماہ کے بچے اور لکی مروت میں 18 ماہ کی بچی میں پولیو کے وائرس کی تصدیق ہوگئی۔اس ضمن میں بتایا گیا کہ ضلع پشاوراور باجوڑ میں متاثرہ بچوں کو پولیو کی ویکسین دی گئی تھی تاہم دیگراضلاع میں متاثرین بچوں کو ویکسین نہیں دی گئی۔انسداد پولیو پروگرام کے سربراہ ڈاکٹر رانا صفدر نے بتایا کہ نئے کیسز وائلڈ پولیو نہیں ہیں بلکہ سی وی ڈی پی وی ٹو کے ہیں۔سی وی ڈی پی وی ٹو کے مجموعی طور پر ب تک 18 کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جبکہ پاکستان سمیت 18ممالک کو سی وی ڈی پی وی ٹو وائرس کا سامنا ہے۔ڈاکٹر رانا صفدر نے بتایا کہ اپریل 2016سے مارکیٹ سی وی ڈی پی وی ٹو وائرس کے لیے ویکسین دستیاب نہیں تاہم نئے کیسز کنڑول کے لیے حکمت عملی بنا کر گلوربل ایڈوزئری کے ساتھ شیئرکریں گے۔قومی ادارہ صحت کے عہدیدار کے مطابق سال 2020 کا آغاز ہونے کے باوجود مزید ایک ماہ تک سامنے آنے والے کیسز 2019 کی فہرست میں شامل کیے جاسکتے ہیں کیونکہ کسی سال میں پولیو کیس کا اندراج وائرس کی تصدیق ہونے کی تاریخ کے بجائے ٹیسٹ کے لیے نمونے لینے کے تاریخ سے ہوتا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ پولیو وائرس کے متحرک ہونے کے لیے کم از کم 3 ہفتوں کا وقت درکار ہوتا ہے لہٰذانمونے حاصل کرنے کے 3 ہفتوں بعد پولیو کیس کی تصدیق ہوتی ہے۔انہوں نے بتایا تھا کہ یہ عین ممکن ہے کہ آئندہ کچھ ہفتوں تک ہم 2019 کے مزید پولیو کیسز کی تصدیق کریں۔

مزید خبر یں

جنیوا (نیوزڈیسک)عالمی ادارہ صحت (WHO) نے کرونا وائرس کا مقابلہ کرنے کے لیے عالمی ممالک کے درمیان تعاون کی ضرورت پر زور دیا ہے۔ اب تک دنیا بھر میں اس وبائی مرض کا شکار ہو کر 3.2 لاکھ سے زیادہ افراد اس دنیا سے رخصت ہو ... تفصیل

بیجنگ (نیوزڈیسک) چینی سائنسدانوں نے یقین کا اظہار کیا کہ کورونا وائرس کا علاج دوا سے ممکن ہو گا۔ اس وباء کیلئے ویکسین کی ضرورت نہیں ہو گی۔تفصیلات کے مطابق چین کی ایک لیبارٹری میں کورونا وائرس کے علاج کے لیے دوا تیار کی جا رہی ... تفصیل

اسلام آباد(نیوزڈیسک)معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہاہے کہ کورونا وبا پر کوئی بھی ملک اکیلے قابو نہیں پاسکتا ، عالمی ادارہ صحت کے رکن ممالک مشترکہ طور پر بہتر طریقے سے وبا سے نمٹ سکتے ہیں ،آبادی کے لحاظ سے دنیا کے پانچویں ... تفصیل