حکومت کا سینیٹ انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ کے خاتمے کیلئے اوپن بیلٹ کا فیصلہ
جی 20 سے پاکستان کو قرضوں کی ادائیگی میں 2 ارب ڈالر سے زائد ریلیف ملنے کا امکان
سعودی عرب میں کوڑے مارنے کی سزا کو باضابطہ ختم کردیا گیا
سٹیزن پورٹل سے شہری غیر مطمئن، وزیراعظم کا اداروں کیخلاف تحقیقات کا حکم
کورونا نے پی ٹی آئی کی رکن اسمبلی شاہین رضا کی جان لے لی
ایشیائی ترقیاتی بینک نے پاکستان کو کورونا وباء سے بچاؤ کیلئے 30 کروڑ ڈالر کا قرض فراہم کر دیا
حکومت بلوچستان نے اسمارٹ لاک ڈاؤن میں 2 جون تک توسیع کردی
پاکستان میں 2 ماہ بعد ریلوے آپریشن بحال کر دیا گیا
کرونا وبا،ملک میں 1ہزار سے زائد اموات،مریضو ں کی تعداد47ہزار سے تجاوز کر گئی،13ہزار سے زائدصحتیاب
تازہ تر ین

زیادہ نمک کا استعمال قوت مدافعت کم کرتا ہے،سائنس دانوں کا انکشاف

برلن(نیوزڈیسک)سائنسدانوں نے انکشاف کیا ہے کہ دنیا بھر میں کروڑوں بلکہ اربوں افراد اپنی غذا میں ایک ایسی غلطی روز کرتے ہیں جو بلڈپریشر ہی نہیں بلکہ مدافعتی نظام کو بھی کمزور کردیتی ہے۔اور یہ ہے کہ کھانے میں زیادہ مقدار میں نمک کا استعمال۔میڈیارپورٹس کے مطابق یہ بات جرمنی میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آئی۔بون یونیورسٹی ہاسپٹل کی تحقیق کے دورانن چوہوں کو زیادہ نمک والی غذا کا استعمال کرائے جانے پر دریافت کیا گیا کہ وہ زیادہ سے زیادہ بیکٹریل انفیکشن کا شکار ہونے لگے۔اسی طرح محققین نے دیکھا کہ جو انسان روزانہ 6 گرام اضافی کھاتے ہیں، ان میں بھی مدافعتی کمزوریاں نظر آنے لگتی ہیں۔جریدے جرنل سائنس ٹرانزیشنل میڈیسین میں شائع تحقیق کے مطابق عالمی ادارہ صحت نے ایک دن کے لیے نمک کی مقدار 5 گرام طے کررکھی ہے، جو ایک چائے کے چمچ کے برابر ہے۔مگر بیشتر افراد ہی اس سے زیادہ مقدار میں نمک روزمرہ کی بنیادوں پر جزوبدن بنالیتے ہیں، جسس سے بلڈ پریششر کی شرح میں اضافہ ہوتا ہے اور ہارٹ اٹیک یا فالج کا خطرہ بڑھتا ہے۔مگر محققین کا کہنا تھا کہ پہلی بار ہم یہ ثابت کرنے میں کامیاب ہوئے ہیں کہ زیاہد نمک کھانے کی عادت مدافعتی نظام کو نمایاں حد تک کمزور کرسکتی ہے۔انہوں نے بتایا کہ جسم نمک کو خون اور اعضا میں جمع کرتا ہے تاکہ اہم حیاتیاتی عمل جار رہ سکے، جبکہ جلد کو نمک کے ذخیرے کے لیے استعمال کیا جاتا ہے۔سوڈیم کلورائیڈ سے انسانی مدافعتی نظام پر منفی اثرات مرتب ہوتے ہیں اور محققین نے دریافت کیا کہ روزانہ صرف 11 گرام نمک یا 2 بار فاسٹ فوڈ کا استعمال ایک ہفتے میں مدافعتی خلیات کو کمزور کرنے کے لیے کافی ہوتا ہے۔

مزید خبر یں

جنیوا (نیوزڈیسک)عالمی ادارہ صحت (WHO) نے کرونا وائرس کا مقابلہ کرنے کے لیے عالمی ممالک کے درمیان تعاون کی ضرورت پر زور دیا ہے۔ اب تک دنیا بھر میں اس وبائی مرض کا شکار ہو کر 3.2 لاکھ سے زیادہ افراد اس دنیا سے رخصت ہو ... تفصیل

بیجنگ (نیوزڈیسک) چینی سائنسدانوں نے یقین کا اظہار کیا کہ کورونا وائرس کا علاج دوا سے ممکن ہو گا۔ اس وباء کیلئے ویکسین کی ضرورت نہیں ہو گی۔تفصیلات کے مطابق چین کی ایک لیبارٹری میں کورونا وائرس کے علاج کے لیے دوا تیار کی جا رہی ... تفصیل

اسلام آباد(نیوزڈیسک)معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہاہے کہ کورونا وبا پر کوئی بھی ملک اکیلے قابو نہیں پاسکتا ، عالمی ادارہ صحت کے رکن ممالک مشترکہ طور پر بہتر طریقے سے وبا سے نمٹ سکتے ہیں ،آبادی کے لحاظ سے دنیا کے پانچویں ... تفصیل