حکومت کا سینیٹ انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ کے خاتمے کیلئے اوپن بیلٹ کا فیصلہ
جی 20 سے پاکستان کو قرضوں کی ادائیگی میں 2 ارب ڈالر سے زائد ریلیف ملنے کا امکان
سعودی عرب میں کوڑے مارنے کی سزا کو باضابطہ ختم کردیا گیا
سٹیزن پورٹل سے شہری غیر مطمئن، وزیراعظم کا اداروں کیخلاف تحقیقات کا حکم
کورونا نے پی ٹی آئی کی رکن اسمبلی شاہین رضا کی جان لے لی
ایشیائی ترقیاتی بینک نے پاکستان کو کورونا وباء سے بچاؤ کیلئے 30 کروڑ ڈالر کا قرض فراہم کر دیا
حکومت بلوچستان نے اسمارٹ لاک ڈاؤن میں 2 جون تک توسیع کردی
پاکستان میں 2 ماہ بعد ریلوے آپریشن بحال کر دیا گیا
کرونا وبا،ملک میں 1ہزار سے زائد اموات،مریضو ں کی تعداد47ہزار سے تجاوز کر گئی،13ہزار سے زائدصحتیاب
تازہ تر ین

کورونا وائرس سے جاں بحق ہیلتھ ورکر کو شہید کا درجہ دیا جائیگا، ڈاکٹر ظفر مرزا

اسلام آباد (نیوزڈیسک)معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا ہے کہ کورونا کے مریض کی دیکھ بھال کے دوران جاں بحق ہونے والے ہیلتھ ورکرز کو شہید کا درجہ دیا جائے گا۔ کورونا وائرس سے متعلق میڈیا بریفنگ کے دوران ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا کہ صوبائی ہیلتھ وزرا اور پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن سے بات چیت کے بعد یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ طبی عملے کی حفاظت کے لیے ہم مل کر کام کریں گے اور ان سے اظہار یکجہتی کے لیے بھرپور مہم چلائی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ ڈاکٹرز، نرسز اور پیرامیڈکس جو ذاتی حفاظت کا سامان استعمال کرتے ہیں اس حوالے سے ہمیں قومی گائیڈلائنز بنانی ہیں، یہ صوبائی اور وفاقی سطح پر پہلے سے موجود ہیں لیکن یہ طے کیا گیا ہے کہ ایک گائیڈلائن بنائی جائے جس سے ملک میں ہر سطح پر یکساں طور پر رہنمائی لی جاسکے۔ان کا کہنا تھا کہ اس حفاظتی سامان کی دستیابی بھی ضروری ہے، اس حوالے سے این ڈی ایم اے نے نظام وضع کیا ہوا ہے کہ تمام ہسپتالوں میں براہ راست ذاتی حفاظت کا سامان فراہم کیا جارہا ہے، اس نظام سے سامان کی دستیابی کے مسائل کافی حد تک ختم ہوگئے ہیں لیکن سامان کے صحیح طریقے سے استعمال کا مسئلہ اب بھی باقی ہے۔معاون خصوصی نے کہا کہ حکومت کی ترجیحات میں اپنے فرنٹ لائن طبی عملے کے لیے بہت زیادہ اہمیت ہے اور وہ سب کیا جائے گا جو ایک حکومت کو کرنا چاہیے۔کورونا کے تازہ اعداد و شمار بتاتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان میں متاثرہ افراد کی تعداد 14 ہزار 80 ہے، چوبیس گھنٹے میں 751 نئے کیسز سامنے آئے جن میں سب سے زیادہ سندھ میں 341، پنجاب میں 194، خیبر پختونخوا میں 120، بلوچستان میں 72، اسلام آباد میں 16، گلگت بلتستان میں 2 اور آزاد کشمیر میں 6 کیسز شامل ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں اب تک کورونا کے ایک لاکھ 57 ہزار سے زائد ٹیسٹ ہوچکے ہیں، 3 ہزار سے زائد افراد صحتیاب بھی ہوچکے ہیں، گزشتہ چوبیس گھنٹے میں 20 اموات ہوئیں، گزشتہ دو ہفتوں میں کورونا سے جو اموات ہو رہی ہیں ان کے نمبرز مستحکم ہیں۔ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا کہ اس وقت پہلے سے زیادہ ضرورت اس بات کی ہے کہ احتیاطی تدابیر پر عمل کیا جائے۔انہوں نے کہا کہ یہ ہمارے ہاتھ میں ہے، اگر ہم احتیاطی تدابیر اپنائیں گے تو بیماری کم پھیلے گی اور بندشیں جلد ختم ہوجائیں گی، لیکن اگر سلسلہ ایسے ہی چلتا رہا تو آنے والے دنوں میں ہمیں لاک ڈاؤن بڑھانا پڑے گا، جب عوام اپنا خیال رکھیں گے تو بلاواسطہ وہ دوسروں کی بھی حفاظت کر رہے ہوں گے۔

مزید خبر یں

جنیوا (نیوزڈیسک)عالمی ادارہ صحت (WHO) نے کرونا وائرس کا مقابلہ کرنے کے لیے عالمی ممالک کے درمیان تعاون کی ضرورت پر زور دیا ہے۔ اب تک دنیا بھر میں اس وبائی مرض کا شکار ہو کر 3.2 لاکھ سے زیادہ افراد اس دنیا سے رخصت ہو ... تفصیل

بیجنگ (نیوزڈیسک) چینی سائنسدانوں نے یقین کا اظہار کیا کہ کورونا وائرس کا علاج دوا سے ممکن ہو گا۔ اس وباء کیلئے ویکسین کی ضرورت نہیں ہو گی۔تفصیلات کے مطابق چین کی ایک لیبارٹری میں کورونا وائرس کے علاج کے لیے دوا تیار کی جا رہی ... تفصیل

اسلام آباد(نیوزڈیسک)معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہاہے کہ کورونا وبا پر کوئی بھی ملک اکیلے قابو نہیں پاسکتا ، عالمی ادارہ صحت کے رکن ممالک مشترکہ طور پر بہتر طریقے سے وبا سے نمٹ سکتے ہیں ،آبادی کے لحاظ سے دنیا کے پانچویں ... تفصیل