حکومت کا سینیٹ انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ کے خاتمے کیلئے اوپن بیلٹ کا فیصلہ
جی 20 سے پاکستان کو قرضوں کی ادائیگی میں 2 ارب ڈالر سے زائد ریلیف ملنے کا امکان
سعودی عرب میں کوڑے مارنے کی سزا کو باضابطہ ختم کردیا گیا
سٹیزن پورٹل سے شہری غیر مطمئن، وزیراعظم کا اداروں کیخلاف تحقیقات کا حکم
کورونا نے پی ٹی آئی کی رکن اسمبلی شاہین رضا کی جان لے لی
ایشیائی ترقیاتی بینک نے پاکستان کو کورونا وباء سے بچاؤ کیلئے 30 کروڑ ڈالر کا قرض فراہم کر دیا
حکومت بلوچستان نے اسمارٹ لاک ڈاؤن میں 2 جون تک توسیع کردی
پاکستان میں 2 ماہ بعد ریلوے آپریشن بحال کر دیا گیا
کرونا وبا،ملک میں 1ہزار سے زائد اموات،مریضو ں کی تعداد47ہزار سے تجاوز کر گئی،13ہزار سے زائدصحتیاب
تازہ تر ین

تین ادویات کا امتزاج کورونا وائرس سے جلد صحتیاب ہونے میں مدد دیتا ہے، تحقیق

ہانگ کانگ (نیوزڈیسک)3 اینٹی وائرل ادویات کا امتزاج مدافعتی نظام کو مضبوط بنا کر نئے نوول کورونا وائرس کے مریضوں کو کووڈ 19 سے جلد صحتیاب ہونے میں مدد دیتا ہے۔یہ بات ہانگ کانگ کے ڈاکٹروں نے بتائی ۔انہوں نے کہا کہ اس حوالے سے مزید آزمائش کی ضرورت ہے مگر اس سے ضرورت پڑنے پر کووڈ 19 کے مریضوں کے علاج کا ایک اور امکان بھی ظاہر ہوتا ہے۔اس وقت امریکا اور جاپان میں صرف ایک دوا ریمیڈیسیور کو علاج کے لیے استعمال کرنے کی اجازت دی گئی ہے جو بیماری کا دورانیہ تو کم کرتی ہے مگر اس کی سپلائی محدود ہے۔ہانگ کانگ یونیورسٹی کے ڈاکٹر کوک یونگ یوین اور ان کی ٹیم نے 2 ایچ آئی وی ادویات ریٹوناویر اور لوپانیویر کو ایک عام اینٹی وائرل دوا ریباویرین اور بیٹ اانٹرفیرون کے ساتھ ملایا۔اس تحقیق میں شریک مریضوں میں کووڈ 19 کی شدت معتدل تھی اور ان کا علاج ٹیسٹ ہونے کے بعد 7 دن کے اندر شروع کردیا گیا تھا۔تحقیقی ٹیم نے کچھ مریضوں کو صرف ایچ آئی وی ادویات کا امتزاج دیا جو اکثر کالیٹرا کے برانڈ نام سے فروخت ہوتا ہے جبکہ دیگر کو ان دونوں ادویات کے ساتھ ریباویرین کو شامل کیا گیا جبکہ بیٹا انٹرفیرون کے انجکشن دیئے گئے۔جریدے جرنل لانسیٹ میں شائع نتائج میں بتایا گیا کہ جن افراد کو زیادہ ادویات کا امتزاج استعمال کرایا گیا جو اوسطاً 7 دن میں ریکور ہوگئے، جبکہ جن افراد کو صرف ایچ آئی وی ادویات دی گئیں ان میں وائرس نیگیٹو آنے میں اوسطاً 12 دن لگے۔جن مریضوں کو ادویات کی کاک ٹیل دی گئی وہ 4 دن کے اندر خود کو بہتر محسوس کرنے لگے۔محققین نے بتایا کہ شروع میں ان ادویات کا استعمال محفوظ، علامات اور وائرس جھڑنے کا دورانیہ مختصر کرنے کے ساتھ ساتھ معتدل بیمار مریضوں کا ہسپتال میں قیام کا دورانیہ بھی کم ہوگیا۔انہوں نے بتایا کہ اس کاک ٹیل کے مضر اثرات بھی بہت کم دیکھنے میں آئے۔امریکا کی کیلیفورنیا یونیورسٹی میں کورونا وائرس کے مریجوں کا علاج کرنے والے ڈاکٹر پیٹر چین ہونگ نے کہا کہ تحقیق کے نتائج سے وبا کے حوالے سے نئی توقع ملتی ہے۔انہوں نے سی این این کو بتایا کہ یہ تحقیق ہمیں بتاتی ہے کہ صرف ریمیڈیسیور ہی واحد دوا نہیں اور ارگرد دیگر آپشنز بھی موجود ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ ان ادویات کا محفوظ ہونے کے حوالے ریکارڈ موجود ہے جبکہ آسانی سے دستیاب بھی ہیں۔امریکا میں ریمیڈیسیور کے استعمال کی اجازت تو دیدی گئی ہے مگر متعدد ہسپتالوں اور طبی مراکز کو یہ معلوم نہیں کہ یہ دوا کب مل سکے گی۔ڈاکٹر پیٹر نے کہا کہ اس نئی تحقیق سے دیگر علاج کی امید پیدا ہوئی ہے ‘ممکنہ طور پر ہم اسے اس وقت حاصل کرسکتے ہیں جب مبینہ جادوئی گولی نہیں مل سکے گی’۔

مزید خبر یں

جنیوا (نیوزڈیسک)عالمی ادارہ صحت (WHO) نے کرونا وائرس کا مقابلہ کرنے کے لیے عالمی ممالک کے درمیان تعاون کی ضرورت پر زور دیا ہے۔ اب تک دنیا بھر میں اس وبائی مرض کا شکار ہو کر 3.2 لاکھ سے زیادہ افراد اس دنیا سے رخصت ہو ... تفصیل

بیجنگ (نیوزڈیسک) چینی سائنسدانوں نے یقین کا اظہار کیا کہ کورونا وائرس کا علاج دوا سے ممکن ہو گا۔ اس وباء کیلئے ویکسین کی ضرورت نہیں ہو گی۔تفصیلات کے مطابق چین کی ایک لیبارٹری میں کورونا وائرس کے علاج کے لیے دوا تیار کی جا رہی ... تفصیل

اسلام آباد(نیوزڈیسک)معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہاہے کہ کورونا وبا پر کوئی بھی ملک اکیلے قابو نہیں پاسکتا ، عالمی ادارہ صحت کے رکن ممالک مشترکہ طور پر بہتر طریقے سے وبا سے نمٹ سکتے ہیں ،آبادی کے لحاظ سے دنیا کے پانچویں ... تفصیل