دفترخارجہ کانیوزی لینڈ سانحے میں شہید ہونے والے 4 افراد کے ورثا کے لئے ویزہ کی سہولت کا اعلان              پیپلزپارٹی نے رابطہ عوام مہم شروع کرنے کا اعلان کردیا              سابق وفاقی وزیر کامران مائیکل پر سفری پابندی عائد              سینیٹ کمیٹی: سعودی ولی عہد کے دورہ پاکستان میں آنے والے اخراجات کی تفصیلات طلب              سانحہ نیوزی لینڈ : شہید پاکستانیوں کی تعداد 6 ہوگئی              پاک فوج نے بھارت کاجاسوس ڈرون مار گرایا              شیخ رشید کا وزیر اعظم کی جانب سے مزدوروں کےلئے تین ، تین ہزار روپے انعام کا اعلان              کرائسٹ چرچ مساجد پر حملہ کرنے والا انتہا پسند عدالت میں پیش،قتل کا الزام عائد              آصف زرداری نے میگا منی لانڈرنگ کیس کی اسلام آباد منتقلی کا فیصلہ چیلنج کردیا       
تازہ تر ین

اے میرے بھائی : اللہ تعالیٰ اپنے بندوں کی حمایت کس طرح فرماتاہے

نفس کی مخالفت اور مردہ بکری

بعض حضرات سے یہ حکایت بیان کی جاتی ہے۔ کہ ہم نے اپنے پڑوسی سے بھنا ہوا بکری کا ایک بچہ کھانے کے لئے خریدا تو اچانک ایک فقیر آگیا۔ ہم نے اسے اپنے ساتھ کھانے میں شامل کرنے کے لئے بلایا: توا س نے ایک لقمہ لیا اور اس کو اپنے منہ کی طرف لےجاکر پھینک دیا اور ہم سے الگ ہو گیا۔ اور کہنے لگا کہ ایک وجہ ہے جس نے مجھ کو اس کھانے سے رد کیے رکھا ۔ ہم  نے اس سے  کہا: کہ اگر تم نہیں کھاؤ گے تو ہم بھی نہیں کھائیں گے ۔ اس نے کہا کہ : میں فقیر آدمی ہوں میں نہیں کھاؤں گا۔ تمہاری تو یہی مراد تھی۔ پھر وہ وہاں سے چلا گیا۔

اس کی وجہ سے ہم نے بھی کھانے کو ناپسند کیا۔ پھر ہم نے اس کے مالک کو بلا کر پوچھا کہ اس کے ناپسند یعنی مکروہ ہونے کی کیااصلیت ہے؟  اس نے کہا: بے شک یہ مردار تھا اور اس کے نفس نے اس کو اس کی قیمت کی وجہ سے  بیچے پراُکسایا ۔ چنانچہ ہم نے  اس کو کتوں کے آگے پھینکا۔ اس کے بعد ہم نے فقیر کو دیکھا اور اس سے وہ کھانا نہ کھانے کی وجہ پوچھی ۔ اس نے کہا: اللہ کی قسم کئی سال ہوگئے ہیں کہ میرے نفس نے کھانے پر کبھی لالچ نہیں کیا جب تم نے بھنا ہو ا گوشت میرے سامنے کیا تو میرے نفس نے کھانے کا بہت لالچ کیا ۔ تو میں اس سے جان گیا کہ کوئی علت اور سبب ضرور ہے۔ تو میں نے کھانا چھوڑ دیا۔ اے میرے بھائی : اللہ تعالیٰ اپنے بندوں کی حمایت کس طرح فرماتاہے۔

(علامہ شہاب الدین قلیوبیؒ)