کھیل کے میدان سے افسوسناک خبر اہم ترین عہدیدار نے تنگ آکر استعفیٰ دیدیا              قطر جانے کے خواہشمند افراد کیلئے بڑی خوشخبری آگئی پاکستانی پروفیشنلز اور ہنرمند افراد متوجہ ہوں، پھر نہ کہنا خبر نہ ہوئی              یو اے ای میں رہائش پذیر پاکستانیوں کیلئے دھماکے دار خبر آگئی ، عام تعطیل کا اعلان کردیاگیا              سیاحوں کی بس میں دھماکہ ، ہلاکتیں ، متعدد زخمی ، افسوسناک واقعہ کہاں پیش آیا ؟ جانئے              پارسل بھیجنا ہو تو دورنہ جائیں، اب ڈاکخانے کا عملہ ہی گھر بلا لیں ایسی سہولت متعارف جان کرآپ بھی دانتوں تلے انگلیاں دبا لینگے              باکمال لوگ ، لاجواب سروس کے شاندار اقدام نے شہریوں کے دل جیت لیئے ،جان کر آپ بھی داد دیئے بغیر نہ رہ سکیں گے              اہم ترین ساہم ترین سیاسی رہنما رشتہ ازدوج میں منسلک ہوگئے، لڑکی کون؟ کس بڑی شخصیت کی بیٹی ہیں ؟ جانئےیاسی رہنما رشتہ ازدوج میں منسلک ہوگئے، لڑکی کون؟ کس بڑی شخصیت کی بیٹی ہیں ؟ جانئے              خوفناک حادثے نے سب کو رُلادیا ، ایک ہی خاندان کے 4 افراد جاں بحق ،ہر طرف چیخ وپکار       
تازہ تر ین

کیا آپ اس بات کو نہیں جانتے کہ ایک بزرگ پر کوڑے کا طشت بھر کر پھینکا گیا تو انہوں نے سجدہ شکر ادا کیا

اللہ والوں کے شکر ادا کرنے کا انوکھا طریقہ

            اللہ کے ولیوں میں کسی ولی کی ایک شخص سے دوستی تھی۔ تو بادشاہ نے اس ولی کو قید کر دیا تو اس کے دوست نے ولی کی طرف ایک آدمی بھیجا کہ وہ اس سے پوچھے۔  تو ولی نے کہا میں اللہ تعالیٰ کا شکر کرتا ہوں۔ پھر جیل والے ایک مجوسی کو لائے جس کا پیٹ خراب تھا اور اس کو پیچس لگے ہوئے تھے۔ ولی کو اس مجوسی کے ساتھ ایک ہی بیڑی میں باندھ دیا گیا۔ جب مجوسی رفع حابت کے لئے جاتا جب تک وہ اپنی حاجت سے فارغ نہ ہوتا تو مجبوراً  ولی کو وہاں کھڑا ہونا پڑتا۔ ولی اللہ کو اس کی بدبو اور اس کے ساتھ چلنے پھرنے سے تکلیف ہوتی تھی۔

            جب اس بات کا علم اس کے دوست کو ہوا تو اس نے پیغام بھیجا۔ تیرا حال کیسا ہے؟ ولی اللہ نے کہا ۔ میں اللہ تعالیٰ کا شکر ادا کرتا ہوں ۔ اس کے دوست نے عرض کیا کہ یہ شک کب تک جاری رہے گا؟ کیونکہ جس مصیبت میں تم  جاری مبتلا ہو اس سے بڑی مصیبت اور کیا ہو سکتی ہے؟ ولی نے جواب دیا۔ اگر زنار مجوسی کی کمر سے لے لیا جائے اور میری کمر سے باندھ دیا جائے تو یہ اس سے بڑی مصیبت ہوگی جس میں میں گرفتار ہوں۔ اے میرے بھائی میں تو اسے سے بھی بڑی مصیبت کا متحق ہوں۔ بے شک میرے رب عزوجل نے مجھ سے درگزر فرمایا ہے۔ اس لئے مجھ پر شکر کرنا واجب ہے۔

            کیا آپ اس بات کو نہیں جانتے کہ ایک بزرگ پر کوڑے کا طشت بھر کر پھینکا گیا تو انہوں نے سجدہ شکر ادا کیا ۔ جب اس سے اس کے متعلق پوچھا گیا۔ تو انہوں نے کہا : بے شک میں تو اس سے ڈرتا ہوں کہ کہیں مجھ پر آگ کا طشت نہ گرایا جائے ۔ جب اس کوڑے کے طشت کے بدلے میں  مجھے آگ کے طشت سے بچایا گیا تو میں اللہ تعالیٰ کا شکر کیوں نہ ادا کروں۔ واللہ علم

(علامہ شہاب الدین قلیوبیؒ)