برطانیہ ، پاکستانی ہائی کمیشن نے برطانوی شہریوں کیلئے ای ویزا کا اجراءشروع کر دیا              حکومت سندھ نے ایک بارپھرسرکاری ملازمتوں پرپابندی عائد کردی              مفتی تقی عثمانی حملہ: 6 افراد کے خلاف دہشت گردی کا مقدمہ درج              پشاور بس منصوبے کا افتتاح غیر معینہ مدت تک ملتوی              سابق وزیر اعظم شوکت عزیز کے وارنٹ گرفتار ی جاری              صدر ٹرمپ اور اتحادی افواج کا شام سے داعش کے مکمل خاتمے کا اعلان              ڈیم فنڈ: کینیڈا میں عمران خان کے دستخط شدہ 2 بلے 65 ہزار ڈالرز میں نیلام              یوم پاکستان ،مسلح افواج کی شاندار پریڈ ،ٹینکوں اور میزائلوں کی نمائش ،جے ایف 17 تھنڈر طیاروں کا شاندار کرتب دکھا کر پیشہ وارانہ صلاحیتوں کا مظاہرہ              بھارت نے یسین ملک کی جماعت جموں کشمیر لبریشن فرنٹ پر پابندی لگادی       
تازہ تر ین

اور لونڈی اس سے پکڑ کر فرمایا: تم صبرکرو ۔ میں تمہیں اس کی قیمت واپس دے دیتا ہوں ۔ اس نے خریدار سے عرض کیا

لونڈی کے عوض جنتی حور

            بعض برزگوں کی حکایات میں سے ایک بزرگ کی حکایت ہے کہ انہوں نے ایک لونڈی فروخت کی اور وہ اس پر بڑے شرمندہ ہوئے ۔ اور لوگوں پر اپنی یہ حالت ظاہر کر نے سے شرم محسوس کرتے چنانچہ اس نے اپنی ہتھیلوں پر اپنی حاجت لکھ لی اور عرض کرنے لگا کہ اے دعا کو قبول کرنے والے جو میں چاہتاہوں اس کو تو خوب جانتا ہے اور اپنی زبان سے کچھ نہ کہا۔ اپنے ہاتھ آسمان کی طرف اٹھائے جب صبح ہوئی تو اس  نےکسی کو اپنا دروازہ کھٹکھٹاتے ہوئے سنا۔ اور اس سے پوچھا تو کون ہے؟ اس نے جواب دیا کہ میں وہی ہوں جو کل تم  سےلونڈی خرید کرلے گیا تھا۔ آج میں اس لونڈی کو واپس تمہارے پاس لایا ہوں ۔ یہ سن کر وہ بہت خوش ہوا۔

            اور لونڈی اس سے پکڑ کر فرمایا: تم صبرکرو ۔ میں تمہیں اس کی قیمت واپس دے دیتا ہوں ۔ اس نے خریدار سے عرض کیا۔

میں آپ سے اس کی قیمت نہیں لوں گا کیونکہ میں نے اس کا بدلہ اس سے بہتر لے لیاہے۔ میں نے خواب میں ایک کہنے والے کو سنا کہ وہ کہہ رہا تھا۔ اے شخص یہ لونڈی بیچنے والا اللہ تعالیٰ کے ولیوں میں سے ایک ولی ہے اور اس کا دل اس لونڈی سے لگ چکا ہے اگر تو اس لونڈی کو بغیر قیمت واپس کر دے تو میں تجھے جنت میں داخل کروں گا۔ اور اس کے بدلے میں جنتی حور بھی دوں گا۔ اس لئے میں نے اس کے ثواب کو اس کی قیمت پر ترجیح دی ہے۔ اس لئے میں اس کی قیمت نہیں لوں گا۔

(علامہ شہاب الدین قلیوبیؒ)