وزیر اعظم عمران خان کا قوم کو بہت جلد بڑی خوشخبری دینے کا اعلان              وزیراعظم عمران خان نے نیشنل ٹورازم کوآرڈینیشن بورڈ تشکیل دینے کی منظوری دے دی              سراج الحق جماعت اسلامی کے دوبارہ امیر منتخب              حکومت کی جانب سے دو ارب روپے کا رمضان پیکج منظور ،یوٹیلی اسٹورز کارپوریشن نے کئی اشیاءمہنگی کردیں              چیف جسٹس آصف سعید نے بریگیڈیئر (ر) اسد منیر کی مبینہ خودکشی کا نوٹس لے لیا، چیئر مین نیب سے رپورٹ طلب              سپریم کورٹ نے بحریہ ٹاﺅن کر اچی کی 460ارب روپے کی پیشکش قبول کر لی              وزیر اعظم نیوز ی لینڈ کا خود کار و نیم خودکارہتھیاروں پر پابندی کا اعلان              جماعت اسلامی کا متحدہ مجلس عمل سے علیحدگی کا باضابطہ اعلان              مشال قتل کیس میں مزیددو ملزمان کو عمر قید       
تازہ تر ین

وہ غلام ایک لاٹھی لے کر ایک پتھر کے پاس گیا اور کہا اے چٹان میں تجھے خلیل الرحمان یعنی ابراہیم ؑ کے حق کی قسم دیتا ہوں تو اسی وقت مجھ پر پانی کا چشمہ جاری کردے

حضرت ابراہیم ؑ کے وسیلہ سے دعا

            حضرت وہب بن منبہ سے حکایت بیان کی جاتی ہے کہ اللہ تعالیٰ نے حضرت ابراہیم ؑ کی طرف وحی بھیجی کہ سامان سفر تیار کرکے زمین کی سیر کرو اور ہماری قدرت کے عجائبات دیکھو۔ چنانچہ آپ نے سامان سفر تیار کرکے سیر شروع کردی اور ایک دریا کے کنارے پہنچے تو ایک حبشی غلام دیکھا کہ وہ بکریاں چرارہا ہے۔ آپ نے اس سے کہا اے غلام کیا تیرے پاس پانی یا دودھ ہے؟

            اس نے جواب دیا: کیوں نہیں ، ان دونوں میں سے جو آپ پسند کریں گے میں وہ پلاؤں گا۔ آپ نے فرمایا مجھے پانی کا ایک گھونٹ پلا دیں۔ وہ غلام ایک لاٹھی لے کر ایک پتھر کے پاس گیا اور کہا اے چٹان میں تجھے خلیل الرحمان یعنی ابراہیم ؑ کے حق کی قسم دیتا ہوں تو اسی وقت مجھ پر پانی کا چشمہ جاری کردے۔ پھر اس نے عصا چٹان پر مارا تو اللہ کی قدرت سے پانی کا چشمہ جاری ہو گیا۔ پھر وہ غلام پانی لایا اور حضرت ابراہیم ؑ نے اسے نوش فرمایا۔ پھر آپ غلام کی طرف دیکھنے لگے، غلام نے عرض کیا کیا آپ اس سے حیران ہورہے ہیں۔ آپ ؑنے فرمایا میں حیران کیسے نہ ہوں میں نے اس کی مثل کسی کو نہیں دیکھا۔ غلام نے عرض کیا میں اس سے بھی حیران کن بات بیان کرتاہوں ، مجھے یہ خبر پہنچی ہے کہ اللہ تعالیٰ نے انبیاء کرام میں سے ایک ہستی کو اپنا خلیل بنایا ہے۔ میں نے اپنے رب تعالیٰ سے ان کے وسیلہ سے جو چیز بھی مانگی ہے اس نے مجھے عطا فرمائی ہے۔ حضرت ابراہیم ؑ نے فرمایا : اے غلام ، وہ خلیل میں ہوں ۔ غلام نے سن کر عرض کیا : کیا آپ ہی وہ خلیل ہیں۔ آپ نے فرمایا : ہاں ۔ (یہ سن کہ ) غلام سبکی لےکر رویا اور چیخ ماری اور فوت ہوگیا۔ اس کے بعد آسمان سے نور کا ایک ستون اترااور اس نے غلام کو اچک لیا۔ اس کےبعد معلوم نہیں کہ اس کو آسمان اٹھالے گیایا پھر زمین کھاگئی۔

(علامہ شہاب الدین قلیوبیؒ)