کھیل کے میدان سے افسوسناک خبر اہم ترین عہدیدار نے تنگ آکر استعفیٰ دیدیا              قطر جانے کے خواہشمند افراد کیلئے بڑی خوشخبری آگئی پاکستانی پروفیشنلز اور ہنرمند افراد متوجہ ہوں، پھر نہ کہنا خبر نہ ہوئی              یو اے ای میں رہائش پذیر پاکستانیوں کیلئے دھماکے دار خبر آگئی ، عام تعطیل کا اعلان کردیاگیا              سیاحوں کی بس میں دھماکہ ، ہلاکتیں ، متعدد زخمی ، افسوسناک واقعہ کہاں پیش آیا ؟ جانئے              پارسل بھیجنا ہو تو دورنہ جائیں، اب ڈاکخانے کا عملہ ہی گھر بلا لیں ایسی سہولت متعارف جان کرآپ بھی دانتوں تلے انگلیاں دبا لینگے              باکمال لوگ ، لاجواب سروس کے شاندار اقدام نے شہریوں کے دل جیت لیئے ،جان کر آپ بھی داد دیئے بغیر نہ رہ سکیں گے              اہم ترین ساہم ترین سیاسی رہنما رشتہ ازدوج میں منسلک ہوگئے، لڑکی کون؟ کس بڑی شخصیت کی بیٹی ہیں ؟ جانئےیاسی رہنما رشتہ ازدوج میں منسلک ہوگئے، لڑکی کون؟ کس بڑی شخصیت کی بیٹی ہیں ؟ جانئے              خوفناک حادثے نے سب کو رُلادیا ، ایک ہی خاندان کے 4 افراد جاں بحق ،ہر طرف چیخ وپکار       
تازہ تر ین

تحقیق میں نے یہ سارا غلہ مدینہ منورہ کے فقراء کے لئے صدقہ کردیاہے

امیر المومنین حضرت عثمان غنی ؓ کی سخاوت

             حضرت ابن عباسؓ سے روایت ہےکہ ایک مرتبہ مدینہ منورہ میں سخت قحط پڑا۔ ملک شام سے ایک قافلہ غلہ لےکر حضرت عثمان ؓ کی خدمت میں حاضر ہوا۔ تو مدینہ کے تاجر لوگ غلہ خریدنے کے لئے  آپ کےپاس حاضر ہوئے ۔ آپ نے ان تاجروں سے فرمایا: تم مجھے کتنا نفع دو گے؟ تاجروں نے عرض کیا : ہم ہر دس درہم پر دو درہم آپ کو نفع دیں گے۔ آپ نے فرمایا: مجھے اس سے بھی زیادہ نفع دو۔ تاجروں نے عرض کیا ہم مدینہ منورہ کے رہنے ولاے ہیں۔ ہم کو زیادہ نفع کون دے گا؟ حضرت عثمان ذوالنورین ؓ نے فرمایا بے شک اللہ تعالیٰ مجھے ایک درہم کے بدلے دس درہم نفع دے گا۔ تحقیق میں نے یہ سارا غلہ مدینہ منورہ کے فقراء کے لئے صدقہ کردیاہے۔

            حضرت ابن عباس ؓ فرماتے ہیں۔ میں نے رسول ؐ کو خواب میں دیکھا، اس حال میں کہ آپ ابلق گھوڑے پر سوار ہیں۔ آپ ؐکےجسم پاک  پر نور کی ریشمی چادر ہے چنانچہ میں نے عرض کیا۔ یارسول ؐ میں آپ کا مشتاق ہوں۔

            سرکارد و عالمؐ نے فرمایا : اے ابن عباس ؓ حضرت عثمان ؓ نے صدقہ کیا ہے اور اللہ تعالیٰ نے وہ صدقہ قبول فرمالیاہے۔ اور جنت میں ایک دلہن سے ان کا نکاح کیا ہے اور میں وہاں دعوت پر جارہا ہوں۔

(علامہ شہاب الدین قلیوبیؒ)