خلیل اور اس کا خاندان بے گناہ ہے، جے آئی ٹی کی ابتدائی رپورٹ میں سی ٹی ڈی افسران قتل کے ذمہ دار قرار              نیواسلام آباد ائیر پورٹ سی اے اے سے لیکر پی آئی اے کو دینے کا فیصلہ              پاکستان اور یو اے ای کے درمیان 3 ارب ڈالر قرض کیلئے معاہدہ طے پاگیا              مقبوضہ کشمیر‘ بھارتی فوجیوں کے ہاتھوں دو اور کشمیری نوجوان شہید              کھیل کے میدان سے افسوسناک خبر اہم ترین عہدیدار نے تنگ آکر استعفیٰ دیدیا              قطر جانے کے خواہشمند افراد کیلئے بڑی خوشخبری آگئی پاکستانی پروفیشنلز اور ہنرمند افراد متوجہ ہوں، پھر نہ کہنا خبر نہ ہوئی              یو اے ای میں رہائش پذیر پاکستانیوں کیلئے دھماکے دار خبر آگئی ، عام تعطیل کا اعلان کردیاگیا              سیاحوں کی بس میں دھماکہ ، ہلاکتیں ، متعدد زخمی ، افسوسناک واقعہ کہاں پیش آیا ؟ جانئے              پارسل بھیجنا ہو تو دورنہ جائیں، اب ڈاکخانے کا عملہ ہی گھر بلا لیں ایسی سہولت متعارف جان کرآپ بھی دانتوں تلے انگلیاں دبا لینگے              باکمال لوگ ، لاجواب سروس کے شاندار اقدام نے شہریوں کے دل جیت لیئے ،جان کر آپ بھی داد دیئے بغیر نہ رہ سکیں گے              اہم ترین ساہم ترین سیاسی رہنما رشتہ ازدوج میں منسلک ہوگئے، لڑکی کون؟ کس بڑی شخصیت کی بیٹی ہیں ؟ جانئےیاسی رہنما رشتہ ازدوج میں منسلک ہوگئے، لڑکی کون؟ کس بڑی شخصیت کی بیٹی ہیں ؟ جانئے              خوفناک حادثے نے سب کو رُلادیا ، ایک ہی خاندان کے 4 افراد جاں بحق ،ہر طرف چیخ وپکار       
تازہ تر ین

جو جنت میں تمہارا حصہ ہے اور میں نے دنیا کو جنت کے عوض خریداہے اور اس سے چار چیزیں حاصل کی ہیں

شیطان کی تجارت

            بعض بزرگوں نے کہا کہ شیطان لعین ہر روز لوگوں پر دنیا پیش کر کےکہتا ہے کہ کوئی شخص ایسا ہے جو ایسی چیز خریدتاہے جو اس کو نقصان دے لیکن نفع نہ دے۔ اور اسے غم و پریشانی میں مبتلاکرے ۔ خوش نہ کرے تواہل دنیا اور اس کےعشاق کہتے ہیں کہ ہم اس کے خریدار ہیں۔ تو شیطان لعین کہتاہے کہ دنیا کی قیمت درہم و دینار نہیں ہے بلکہ اس کی قیمت وہ ہے جو جنت میں تمہارا حصہ ہے اور میں نے دنیا کو جنت کے عوض خریداہے اور اس سے چار چیزیں حاصل کی ہیں۔

            1۔ اللہ تعالیٰ کی لعنت 2۔ اس کا غضب 3۔ اس کا غصہ 4۔ اس کا عذاب۔

دنیا والے کہتے ہیں کہ ہم اس پر راضی ہیں۔ اس کے بعد شیطا ن کہتاہے کہ میں چاہتاہوں کہ تمہیں اس پر نفع زیادہ دوں۔ اس پر دنیا والے کہتے ہیں ۔ ہاں اس پر نفع بہتر ہے۔ وہ دنیا والوں کو دنیا کے ہاتھ فروخت کردیتا ہے۔ پھر بکتا ہےکہ یہ میری کتنی ہی بری تجارت ہے۔

(علامہ شہاب الدین قلیوبیؒ)