کھیل کے میدان سے افسوسناک خبر اہم ترین عہدیدار نے تنگ آکر استعفیٰ دیدیا              قطر جانے کے خواہشمند افراد کیلئے بڑی خوشخبری آگئی پاکستانی پروفیشنلز اور ہنرمند افراد متوجہ ہوں، پھر نہ کہنا خبر نہ ہوئی              یو اے ای میں رہائش پذیر پاکستانیوں کیلئے دھماکے دار خبر آگئی ، عام تعطیل کا اعلان کردیاگیا              سیاحوں کی بس میں دھماکہ ، ہلاکتیں ، متعدد زخمی ، افسوسناک واقعہ کہاں پیش آیا ؟ جانئے              پارسل بھیجنا ہو تو دورنہ جائیں، اب ڈاکخانے کا عملہ ہی گھر بلا لیں ایسی سہولت متعارف جان کرآپ بھی دانتوں تلے انگلیاں دبا لینگے              باکمال لوگ ، لاجواب سروس کے شاندار اقدام نے شہریوں کے دل جیت لیئے ،جان کر آپ بھی داد دیئے بغیر نہ رہ سکیں گے              اہم ترین ساہم ترین سیاسی رہنما رشتہ ازدوج میں منسلک ہوگئے، لڑکی کون؟ کس بڑی شخصیت کی بیٹی ہیں ؟ جانئےیاسی رہنما رشتہ ازدوج میں منسلک ہوگئے، لڑکی کون؟ کس بڑی شخصیت کی بیٹی ہیں ؟ جانئے              خوفناک حادثے نے سب کو رُلادیا ، ایک ہی خاندان کے 4 افراد جاں بحق ،ہر طرف چیخ وپکار       
تازہ تر ین

عدل کرنیوالوں کے جسم کو زمین نہیں کھاتی

عدل کرنیوالوں کے جسم کو زمین نہیں کھاتی

            خلیفہ ماموں کو کسریٰ کے بادشاہ کے عدل و انصاف کی اطلاع ملی، اس نےکہا کہ مجھے یہ خبر ملی ہے کہ زمین عادل بادشاہوں کے جسموں کو نہیں کھاتی اور میں نے یہ عزم کیا ہےکہ کسریٰ کے بادشاہ کا امتحان لوں۔ چنانچہ خلیفہ مامون  بذات خود بادشاہ کے شہر کی طرف گیا۔اور اُس کی قبر کھولی اور خود اس میں اتر کو اس کا چہرہ کھولا تو کیا دیکھتا ہے کہ اس کا چہرہ چمک رہا ہے اور وہ کپڑا جو اس کے جسم پر تھا وہ بھی بالکل نئے اپنی پہلی حالت میں باقی ہے۔ ان میں کوئی بھی تبدیلی نہیں آئی اور اس کی انگلی میں سرخ یاقوت کی ایک ایسی انگوٹھی تھی کہ اس طرح انگوٹھی بادشاہ کی خزانے مین بھی نہیں تھی۔ اور فارسی میں اس پر کچھ لکھا ہوا تھا۔

            خلیفہ مامون یہ دیکھ کر بہت حیران ہو اور کہنے لگا کہ یہ آدمی تومجوسی تھا جو آگ کوپوجتا تھا اور اللہ تعالیٰ نے اس کے عدل و انصاف کو ضائع نہیں فرمایا جو یہ اپنی قوم کے ساتھ کرتاتھا۔ پھر مامون نےحکم دیا کہ اس (لاش کو ) دیباج کے ایسے کپڑے کے ساتھ دفن کیا جائے جو سونے وغیرہ سے مرصع اور مزین ہو ۔ اور پہلے کی طرح اس کی قبر کو بند کر دیا۔

            مامون کے ایک خسرہ خادم بھی تھا  اس نے خلیفہ مامون کو غافل پاکر وہ انگوٹھی اس میت کے ہاتھ سے اتارلی۔ جب خلیفہ مامون کو اس بات کا پتہ چلا ۔ تو اس نے اس غلام کو ہزار کوڑے مارے اور سندھ کی طرف جلا وطن کردیا۔ اور وہ انگوٹھی کسریٰ کے بادشاہ کی انگلی میں پہلے کی طرح دوبارہ پہنا دی۔ اورکہنے لگے کہ اس خسرے غلام نے مجھے عجم کے بادشاہوں کےسامنے بے عزت کرنا چاہا وہ بادشاہ کہیں گے کہ مامون قبروں کو کھود کر مردوں کے کفن چوری کرتا تھا۔ پھر اس نےکسریٰ بادشاہ کی قبر پر سیسا پگھلانے کا حکم دیا کہ وہ قبر دوبارہ نہ کھولی جا سکے۔

(علامہ شہاب الدین قلیوبیؒ)