لورالائی میں سیکورٹی فورسز کا آپریشن ،کالعدم تحریک طالبان پاکستان کا اہم کمانڈر 4ساتھیوں سمیت ہلاک              حکومت کا شہبازشریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کےفیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کرنے کا فیصلہ              وزیر پٹرولیم نے گیس کی قیمتوں میں مزید اضافے کا عندیہ دے دیا              پاکستان نے غیرملکی سیاحوں کے ویزے کیلئے این اوسی کی شرط ختم کردی              منی لانڈرنگ کیس منتقلی کیخلاف اپیل، آصف زرداری کو جواب الجواب جمع کرانے کا حکم              لاہور ہائیکورٹ کا شہباز شریف کا نام ای سی ایل سے خارج کر نے کا حکم              سپریم کورٹ نے نواز شریف کی درخواست ضمانت منظور کر لی       
تازہ تر ین

اور اس کتاب کا نام الف لیلہ رکھ دیا اور یہ سب من گھڑت جھوٹ تھا کئی لوگوں کا خیال ہے کہ فارس میں بے مقصد داستان گوئی کا بنیاد یہی ہے

قصہ الف لیلہ

            ایران کا ایک بادشاہ جب بھی کسی عورت سےنکاح کرتا تو ایک رات گزار کر اگلے دن اسے قتل کر دیتا ایک باراس نے ایک بادشاہ کی بیٹی سے شادی کی جو عقل و دانش والی تھی۔جب رات کو وہ اس کے کمرے میں آیا تو اس نے ایک بے مقصد طویل کہانی سنانی شروع کر دی اور اتنی طویل کر دی کہ رات گزر گئی لیکن کہانی کا کچھ حصہ باقی رہ گیا بادشاہ کو کہانی مکمل سننے کا شوق ہوا ( وہ قتل سے بچ گئی) جب اگلی رات آئی بادشاہ نے کہانی کا بقیہ حصہ سننے کا شوق ظاہر کیا اورکہا کہ سناؤ چنانچہ  اس نے کہانی سنانی شروع کی مگر آج رات بھی کہانی پوری نہ ہوسکی حتیٰ کہ ہزار رات وہ اکھٹے رہے یہاں تک وہ لڑکے سے حاملہ ہو گئی تو اس نے بادشاہ کو اس کی اطلاح کردی۔اور اب اس نے بتایا کہ کہانی والا بہانہ میں نے اس لیے بنایا تھا۔ بادشاہ نے اسے بڑی دانا و ذہین شمار کیا اور اس میں رغبت کا اظہار کیا اور اسے باقی رکھا (اور قتل نہ کیا) پس سارے واقع کو کسی نے جمع کرکے کتاب بنا دی اور اس کتاب کا نام الف لیلہ رکھ دیا اور یہ سب من گھڑت جھوٹ تھا کئی لوگوں کا خیال ہے کہ فارس میں بے مقصد داستان گوئی کا بنیاد یہی ہے۔

(علامہ شہاب الدین قلیوبیؒ)