لورالائی میں سیکورٹی فورسز کا آپریشن ،کالعدم تحریک طالبان پاکستان کا اہم کمانڈر 4ساتھیوں سمیت ہلاک              حکومت کا شہبازشریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کےفیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کرنے کا فیصلہ              وزیر پٹرولیم نے گیس کی قیمتوں میں مزید اضافے کا عندیہ دے دیا              پاکستان نے غیرملکی سیاحوں کے ویزے کیلئے این اوسی کی شرط ختم کردی              منی لانڈرنگ کیس منتقلی کیخلاف اپیل، آصف زرداری کو جواب الجواب جمع کرانے کا حکم              لاہور ہائیکورٹ کا شہباز شریف کا نام ای سی ایل سے خارج کر نے کا حکم              سپریم کورٹ نے نواز شریف کی درخواست ضمانت منظور کر لی       
تازہ تر ین

حضرت موسیٰ ؑ کے عصاء کے کمالات

حضرت موسیٰ ؑ کے عصاء کے کمالات

            حضرت ابن عباس ؓ سے اللہ تعالیٰ کے اس فرمان کے متعلق سوال کیا گیا۔ جو حضرت موسیٰ ؑ کے بارئے میں نازل ہوا۔ وہ قول یہ ہے۔ میرے لئے اس میں اور کام بھی ہیں یعنی اس عصا سے میں بہت سارے کام لیتا ہوں۔

            حضرت عبداللہ بن عباس ؓ فرماتے ہیں کہ حضرت موسیٰؑ اپنے عصا سے تیرہ لیتے تھے۔

1۔ حضرت موسیٰ جب بارش ہوتی تو اس عصا کو اپنے سر پر ڈھال کی طرح کھڑا کر دیتے تھے اور خود اس کے نیچے بیٹھ جاتے تھے تاکہ بارش سے بچ سکیں۔ یعنی آپ کا عصا چھتری کا کام دیتا۔

2۔ بادلوں کی وجہ سے جب سورج چھپ جاتا اور ٹائم معلوم کرنے میں دشواری ہوتی تو وہ عصا سورج کی طرح روشن ہوجاتا۔

3۔ سخت گرمی کے موسم میں جب بکریاں چراتے ہوئے گرمی لگتی ہے تو حضرت موسیٰ ؑ اس عصا کو کھڑا کر دیتے ہیں۔ تو وہ چوڑے پتوں والا درخت بن جاتا ہے۔ اور آپ اسکے نیچے آرام فرمالیتے تھے۔

4۔ حضرت موسیٰ ؑ جب بکریوں کو پانی پلانے ارادہ کرتے تو وہ عصا ایک لمبی رسی بن کر کنوئیں کی لمبائی تک چلا جاتا۔ حتی کہ اس کا سر ڈول نما ہو جاتا۔

5۔ حضرت موسیٰ ؑ جب کسی خوف زدہ مقام پر ٹھہر تے تو عصا اپنے ہاتھ سے پھینک دیتے تو دن میں خوف ناک شیربن جاتا۔

6۔ رات کو وہ عصا کھجور کی درخت کی طرح سانپ بن جاتایعنی رات کو سانپ بن  کر چوکیداری کرتا۔

7۔ جب حضرت موسیٰ ؑ ایک جگہ سے دوسری جگہ سامان خردنوش لےکر جاتے تو وہ عصا تھیلا بن جاتاس وہ سامان اس میں ڈال دیتے۔

8۔ جب آپ کو سخت پیاس لگتی تو اس عصا کے ایک کنارے پانی پی لیتے۔ یعنی وہ عصا پانی کی بوتل بن جاتا۔

9۔ حضرت موسیٰ ؑ کو جب سردی محسوس ہوتی تو اس عصا کو رکھ دیتے تو وہ عصا رضائی بن جاتا۔

10۔ جب حضرت موسیٰ ؑ کا کسی دشمن سے سامنا ہوتا تو آپ اپنے عصا کو سامنے کر دیتے تو وہ عصا اس دشمن کو نگل جاتا۔

11۔ جب آپ ؑ کو بکریوں کے لئے پتے جھاڑنے کی حاجت ہوتی ت وہ عصا ڈانگی بن جاتا جس کے ذریعہ درخت سے پتے جھاڑتے اور اس کی شاخوں کو نیچے کرتے۔

12۔ جب حضرت موسیٰ کو پھل کھانے کئی خواہش ہوتی تو وہ عصااپنی شاخ نکالتا تھا تو وہ اس کو کھاتےتھے۔

(علامہ شہاب الدین قلیوبیؒ)