لورالائی میں سیکورٹی فورسز کا آپریشن ،کالعدم تحریک طالبان پاکستان کا اہم کمانڈر 4ساتھیوں سمیت ہلاک              حکومت کا شہبازشریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کےفیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کرنے کا فیصلہ              وزیر پٹرولیم نے گیس کی قیمتوں میں مزید اضافے کا عندیہ دے دیا              پاکستان نے غیرملکی سیاحوں کے ویزے کیلئے این اوسی کی شرط ختم کردی              منی لانڈرنگ کیس منتقلی کیخلاف اپیل، آصف زرداری کو جواب الجواب جمع کرانے کا حکم              لاہور ہائیکورٹ کا شہباز شریف کا نام ای سی ایل سے خارج کر نے کا حکم              سپریم کورٹ نے نواز شریف کی درخواست ضمانت منظور کر لی       
تازہ تر ین

اویس بن عامر قرنی ؓ جنہوں نے بنی اکرم ؐ کو پایا لیکن زیارت نہ کر سکے اور یہ کوفہ کے رہنے والے ہیں اور تابعین میں سب سے بڑے ہیں

حضرت خواجہ اویس قرنیؓ

حضرت خواجہ اویس قرنیؓ اپنی والدہ کی خدمت پر مامور تھے اور ایک قدم بھی انکی اجازت کے بغیر نہیں اٹھاتے تھے۔ ایک دن اپنی ماں سے عرض کیا: اے میری ماں میں چاہتا ہوں کہ نبی اکرم ؐ کی زیارت کروں تو والدہ نے اجازت دی لیکن یوں کہا کہ سرکار دو عالم ؐ کی زیارت ان کے گھر میں کرکےجلدی واپس آ جانا۔ حضرت اویس قرنی ؓپر جاکر کھڑے  ہو گےلیکن نبی اکرم ؐ کو گھر میں نہ پایا۔ چنانچہ حضرت ام المومنین عائشہ ؓ نے فرمایا:

اے شیخ ، تجھے کیا حاجت ہے؟ عرض کرنے لگے کہ میں سرکار دو عالم ؐ کی زیارت کےلئے حاضر ہوا تھا۔ ام المومنین  عائشہ ؓ نے فرمایا، مسجد میں جاکر سرکار دو عالم ؐ کی زیارت کرلو۔ حضرت اویس قرنی ؓنے عرض کیا: میری والدہ نے مجھے صرف گھر میں زیارت کرنے کی اجازت دی تھی۔ حضرت اویس قرنی ؓسرکار دو عالم کی زیارت کیے بغیر واپس اپنی والدہ کے پاس آگئے۔

            حضرت امام جلال السیوطی ؒ فرماتے ہیں یہ اویس وہ ہے جس کا نسب یہ ہے ، اویس بن عامر قرنی ؓ جنہوں نے بنی اکرم ؐ کو پایا لیکن زیارت نہ کر سکے اور یہ کوفہ کے رہنے والے ہیں اور تابعین میں سب سے بڑے ہیں۔

            اسیرین جابر، حضرت عمر بن خطاب ؓ سے روایت کرتے ہیں  کہ بنی اکرم ؐ نے فرمایا: تاتعین میں سب سے بہتر آدمی جو ہے اس کو اویسؓ  کہا جاتا ہے وہ تمہارے پا س یمن کے ایک لشکر کے ساتھ ہو گا۔ اگر وہ اللہ تعالیٰ پر کوئی قسم کھا بیٹھے تواللہ تعالیٰ اس کی قسم کو ضرور پورا فرمائے گا۔ پھر فرمایا: اے عمر و علی ؓ جب تم ان سے ملاقات کرو تو ان سے اپنے حق میں دعا و استغفار کرانا۔ راوی نےکہا کہ حضرت اویس ؓ جنگ صفین میں حضرت علی ؓ کے ساتھ تھے اور وہاں شہید ہو گئے۔ اس کے علاوہ بھی مختلف روایتیں ان کے وصال کی ہیں۔

            احمد نے حسن بصری ؓ سے روایت کیا ہے کہ رسول اللہ ؐ نے فرمایا: قبیلہ ربیعہ اورمصر میں سے اکثر لوگ میری امت کے ایک شخص کی شفاعت سے جنت میں داخل ہوں گے۔

            حسن بصریؓ  کہتے ہیں وہ شخص حضرت اویس قرنیؓ ہیں جن کو قرن کی طرف منسوب کیا گیا ہے۔

(علامہ شہاب الدین قلیوبیؒ)