پاکستان کا زمین سے زمین پر مار کرنے والے بیلسٹک میزائل ’شاہین 2‘ کا کامیاب تجربہ              وزیراعظم عمران خان کا نئی پیٹرولیم پالیسی تشکیل دینے کا اعلان              پاکستان مخالف تقاریر کا الزام: سماجی رضا کار گلا لئی اسماعیل کے خلاف مقدمہ       
تازہ تر ین

اللہ تعالیٰ نے حضرت میکائیل کو حضرت اسرافیل ؑ کے پانچ سو سال بعد میں فرمایا

حضرت میکائیل ؑ کی پیدائش

           اللہ تعالیٰ نے حضرت میکائیل کو حضرت اسرافیل ؑ کے پانچ سو سال بعد میں فرمایا اور اس کے سر سے لے کر پاؤ تک منہ اور بازوں پیدا کیے اور ان میں سے ہرایک پر ہزار آنکھیں بنائیں جو حضرت محمد ؐ کی امت کے گنہگاروں پر ترس کھاکر روتی ہیں تو ہرآنکھو سے ستر قطرے آنسوؤں کے بہتے ہیں اور ہر قطرے سے اللہ تعالیٰ ایک فرشتہ پیدا کرتا ہے اور وہ مقرب فرشتے ہیں۔

            جب نبی ؐ پانچویں آسمان کی طرف چڑھے تو آپ نے اس میں ایسے فرشتے دیکھے جن کے سروں اور پاؤں کے درمیان منہ اور بازوں تھے اور وہ خوف الہٰی سے رو رہے تھے ۔ حضرت جبرائیل ؑ نے بنی پاک ؐ سے عرض کیا کہ یہ قرب خاص والے فرشتے ہیں۔

            حضرت ابن عباس ؓ نے فرمایا کہ اسرافیل ؑ نے اپنے اللہ عزوجل سے عرض کیا: وہ اسے آسمانوں ، زمینوں ، پہاڑوں ، ہواؤں اور جنات کی قوت عطا فردے۔

            چنانچہ اللہ تعالیٰ نے ان کو  قوت عطا فرما دی اور ان کے سر سے پاؤں تک منہ ، بال ، زبانیں اور بازو عطا کیے۔ جن کی تعداد کو اللہ تعالیٰ کے علاوہ اور کوئی نہیں جانتا ۔ اور وہ دس لاکھ زبانوں میں اللہ تعالیٰ کی تسبیح بیان کرتاہے اور ہرتسبیح سے اللہ تعالیٰ ایک فرشتہ پیدا کرتاہے اوروہ مقربین فرشتے ہیں۔

(علامہ شہاب الدین قلیوبی ؒ)