حکومت کا سینیٹ انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ کے خاتمے کیلئے اوپن بیلٹ کا فیصلہ
جی 20 سے پاکستان کو قرضوں کی ادائیگی میں 2 ارب ڈالر سے زائد ریلیف ملنے کا امکان
سعودی عرب میں کوڑے مارنے کی سزا کو باضابطہ ختم کردیا گیا
سٹیزن پورٹل سے شہری غیر مطمئن، وزیراعظم کا اداروں کیخلاف تحقیقات کا حکم
کورونا نے پی ٹی آئی کی رکن اسمبلی شاہین رضا کی جان لے لی
ایشیائی ترقیاتی بینک نے پاکستان کو کورونا وباء سے بچاؤ کیلئے 30 کروڑ ڈالر کا قرض فراہم کر دیا
حکومت بلوچستان نے اسمارٹ لاک ڈاؤن میں 2 جون تک توسیع کردی
پاکستان میں 2 ماہ بعد ریلوے آپریشن بحال کر دیا گیا
کرونا وبا،ملک میں 1ہزار سے زائد اموات،مریضو ں کی تعداد47ہزار سے تجاوز کر گئی،13ہزار سے زائدصحتیاب
تازہ تر ین

اس لئے کہ کتا باوجود اپنی تمام بدنامی کے جب مرجائے گا تو اس کو دوزخ میں نہ لے جائیں گے

حضرت جنید بغدادی ؒ اور بیمار کتا

حضرت جنید بغدادیؒ ایک دفعہ بیابان میں جارہے تھے کہ اکہ انہیں ایک لاغر اور زخمی کتا نظر آیا جو بھوک سے مر رہا تھا۔ حضرت جنیدؒ نے اپنی خوراک میں سے آدھی اسے کھلا دی اور وہ اُٹھ بیٹھا۔

سنا ہے کہ حضرت جنیدؒ وہاں سے جاتے وقت رو رہے تھے اور کہ رہے تھے کہ کون جانتا ہے کہ ہم دونوں میں سے اللہ کےنزدیک کون بہتر ہے۔

اس لئے کہ کتا باوجود اپنی تمام بدنامی کے جب مرجائے گا تو اس کو دوزخ میں نہ لے جائیں گے۔(شیخ سعدیؒ)

مزید حکایت

بچوں کے اسلامی نام

ڈکشنری