کھیل کے میدان سے افسوسناک خبر اہم ترین عہدیدار نے تنگ آکر استعفیٰ دیدیا              قطر جانے کے خواہشمند افراد کیلئے بڑی خوشخبری آگئی پاکستانی پروفیشنلز اور ہنرمند افراد متوجہ ہوں، پھر نہ کہنا خبر نہ ہوئی              یو اے ای میں رہائش پذیر پاکستانیوں کیلئے دھماکے دار خبر آگئی ، عام تعطیل کا اعلان کردیاگیا              سیاحوں کی بس میں دھماکہ ، ہلاکتیں ، متعدد زخمی ، افسوسناک واقعہ کہاں پیش آیا ؟ جانئے              پارسل بھیجنا ہو تو دورنہ جائیں، اب ڈاکخانے کا عملہ ہی گھر بلا لیں ایسی سہولت متعارف جان کرآپ بھی دانتوں تلے انگلیاں دبا لینگے              باکمال لوگ ، لاجواب سروس کے شاندار اقدام نے شہریوں کے دل جیت لیئے ،جان کر آپ بھی داد دیئے بغیر نہ رہ سکیں گے              اہم ترین ساہم ترین سیاسی رہنما رشتہ ازدوج میں منسلک ہوگئے، لڑکی کون؟ کس بڑی شخصیت کی بیٹی ہیں ؟ جانئےیاسی رہنما رشتہ ازدوج میں منسلک ہوگئے، لڑکی کون؟ کس بڑی شخصیت کی بیٹی ہیں ؟ جانئے              خوفناک حادثے نے سب کو رُلادیا ، ایک ہی خاندان کے 4 افراد جاں بحق ،ہر طرف چیخ وپکار       
تازہ تر ین

عالمی فوجداری عدالت کالیبیا سے سیف قذافی اور محمود الورفلی کی حوالگی کا مطالبہ

ہیگ(انٹرنیشنل ڈیسک)ہیگ میں قائم عالمی فوجداری عدالت (انٹرنیشنل کرمنل کورٹ) کی چیف پراسیکیوٹر فاتو بیسودا نے ا سلامتی کونسل سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ لیبیا کے سابق سربراہ معمر قذافی کے بیٹے سیف الاسلام کو پکڑنے اور انہیں مذکورہ عدالت میں پیش کرنے کے لیے حرکت میں آئے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق فاتو نے اپنے بیان میں عسکری کمانڈر محمود الورفلی کو حوالے کیے جانے کی ضرورت پر بھی زور دیا۔ الورفلی، جو موت کے افسر کے نام سے جانا جاتا ہے، جنرل خلیفہ حفتر کی قیادت میں لیبیا کی مسلح افواج میں شامل ہے۔

چیف پراسیکیوٹر نے سلامتی کونسل کے ارکان کو بتایا کہ الورفلی کو جنگی جرائم کے مرتکب ہونے کے الزامات کا سامنا ہے۔ فاتو کے مطابق الورفلی 2016ء اور 2017ء کے دوران لیبیا میں سات واقعات میں براہ راست شریک رہا جس میں 33 افراد کو موت کے گھاٹ اتارا گیا۔یاد رہے کہ لیبیا کی فوج کے سربراہ نے رواں برس 12 جولائی کو محمود الورفلی کی گرفتاری کا حکم جاری کیا تھا۔ یہ حکم الورفلی کے جیل سے فرار ہونے کے بعد جاری کیا گیا تھا۔رواں برس جنوری میں بھی لیبیا کی فوج نے الورفلی کو حراست میں لیے جانے کا حکم جاری کیا تھا۔ اْس پر فوجی ہدایات اور احکامات کی خلاف ورزیوں اور بنغازی شہر میں افراتفری بھڑکانے کے الزامات تھے۔ الورفلی کئی وڈیو کلپوں میں اپنے قبضے میں موجود دہشت گرد قیدیوں کو عوامی مقامات پر فائرنگ کے ذریعے موت کے گھاٹ اتارے جانے کی کارروائیوں کی نگرانی کرتا ہوا نظر آیا تھا۔لیبیا کی فوج کی جنرل کمان کے مطابق خلیفہ حفتر نے ہر اْس شخص کی گرفتاری اور فوجی جیل پہنچانے کا حکم جاری کیا ہے جس نے درحقیقت شہری اور عسکری قانون کی خلاف ورزی کی ہو یا وطن، شہریوں یا ریاست کے اداروں کے امن و امان کے لیے خطرہ بنا ہو۔یاد رہے کہ عالمی فوجداری عدالت ایک سے زیادہ مرتبہ مشرقی لیبیا کے حکام سے الورفلی کو حوالے کرنے کا مطالبہ کر چکی ہے۔ تاہم لیبیا کی فوج کی جنرل کمان نے اسے مسترد کرتے ہوئے اپنے سرکاری ترجمان احمد المسماری کی زبانی اعلان کیا کہ الورفلی کے خلاف عدالتی کارروائی لیبیا کے قوانین کے مطابق عمل میں آئے گی۔

مزید خبر یں

ریاض(نیوزڈیسک)سعودی عرب کی قیادت میں یمن میں آئینی حکومت کی بحالی کے لیے سرگرم عرب فوجی اتحاد کے جنگی طیاروں نے دارالحکومت صنعاء کے شمال مغرب میں حوثیوں کے ٹھکانوں پر شدید بمباری کی جس کے نتیجے میں32باغی ہلاک ہوگئے ،عرب فوج کی جانب سے بمباری ... تفصیل

میکسیکو سٹی(نیوزڈیسک)میکسیکو میں پٹرول پائپ لائن میں زوردار دھماکے کے نتیجے میں 21 افراد ہلاک اور 71 زخمی ہوگئے۔عالمی میڈیا کے مطابق میکسیکو سٹی کے شمالی علاقے سے گزرنے والی پٹرول پائپ لائن زوردار دھماکے سے پھٹ گئی،آگ کے شعلوں نے قریبی گاڑیوں کو اپنی لپیٹ ... تفصیل

واشنگٹن(نیوزڈیسک)وائٹ ہاوس نے کہا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ فروری کے مہینے میں، شمالی کوریا کے رہنما کم جونگ ان سے دوسری ملاقات کریں گے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق صدر ٹرمپ کی پریس سیکرٹری سارہ سینڈرز نے کہا کہ وائٹ ہاﺅس کے اس اعلان سے ... تفصیل