کھیل کے میدان سے افسوسناک خبر اہم ترین عہدیدار نے تنگ آکر استعفیٰ دیدیا              قطر جانے کے خواہشمند افراد کیلئے بڑی خوشخبری آگئی پاکستانی پروفیشنلز اور ہنرمند افراد متوجہ ہوں، پھر نہ کہنا خبر نہ ہوئی              یو اے ای میں رہائش پذیر پاکستانیوں کیلئے دھماکے دار خبر آگئی ، عام تعطیل کا اعلان کردیاگیا              سیاحوں کی بس میں دھماکہ ، ہلاکتیں ، متعدد زخمی ، افسوسناک واقعہ کہاں پیش آیا ؟ جانئے              پارسل بھیجنا ہو تو دورنہ جائیں، اب ڈاکخانے کا عملہ ہی گھر بلا لیں ایسی سہولت متعارف جان کرآپ بھی دانتوں تلے انگلیاں دبا لینگے              باکمال لوگ ، لاجواب سروس کے شاندار اقدام نے شہریوں کے دل جیت لیئے ،جان کر آپ بھی داد دیئے بغیر نہ رہ سکیں گے              اہم ترین ساہم ترین سیاسی رہنما رشتہ ازدوج میں منسلک ہوگئے، لڑکی کون؟ کس بڑی شخصیت کی بیٹی ہیں ؟ جانئےیاسی رہنما رشتہ ازدوج میں منسلک ہوگئے، لڑکی کون؟ کس بڑی شخصیت کی بیٹی ہیں ؟ جانئے              خوفناک حادثے نے سب کو رُلادیا ، ایک ہی خاندان کے 4 افراد جاں بحق ،ہر طرف چیخ وپکار       
تازہ تر ین

لیبیاکی بہادر معلمہ نے جان پر کھیل کردرجنوں طلباء مسلح حملے سے بچا لیے

طرابلس (انٹرنیشنل ڈیسک)لیبیا کے شہر صبراتہ میں گذشتہ ہفتے مسلح جنگجوؤں نے ایک اسکول پر حملہ کردیا۔ اسکول اس وقت طلباء اور اساتذہ موجود تھے۔

عسکریت پسندوں نے انہیں یرغمال بنانے کی کوشش کی مگر ایک بہادر معلمہ نے اپنی جان پر کھیل کر طلباء وطالبات کو دہشت گردی کے حملے سے بچا لیا۔عرب ٹی وی کے مطابق سوشل میڈیا پر اسکول پر دہشت گردانہ حملے کی تصاویر جاری کی گئی ہیں جن میں اسکول میں توڑپھوڑ کے مناظر دیکھے جا سکتے ہیں۔مقامی ذرائع ابلاغ کے مطابق اسکول کی معلمہ صالحہ الکرشودی کا بیان سامنے آیا ہے جس میں اس نے اپنے طلباء کو حملے کے وقت یقن دلایا کہ وہ پریشان نہ ہوں۔

بہادر استانی نے اپنے طلباء کو مخاطب کرکے کہا کہ آپ خوف زدہ نہ ہو میں تم سے پہلے مرنے کو تیار ہوں۔ اس نے طلباء کو یہ بات اس وقت کہی جب عسکریت پسند اسکول میں گھس کر فائرنگ کررہے تھے۔ اس ساری صورت حال سے طلباء بہت خوف زدہ اورسہمے ہوئے تھے اور وہ شدت پسندوں کو اپنے سامنے فائرنگ کرتے دیکھ رہے تھے۔الکرشودی نے ذرائع ابلاغ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ نامعلوم مسلح گروپ نے اسکول کا محاصرہ کرنے کے بعد طلباء کو گھیرے میں لے لیا۔ عسکریت پسندوں کو دیکھ کر طلباء نے چیخ پکار شروع کردی۔

ہم نے طلباء کو ہدایت کی کہ وہ فرش پر لیٹ جائیں اور کھڑکیوں کے سامنے کھڑے نہ ہوں۔اس نے کہاکہ شدت پسندوں نے اسکول خالی کرنے کے لیے صرف پانچ منٹ دئیے۔ اسکول کی انتظامیہ طلباء کے ساتھ گھروں تک گئی تاکہ کوئی بچہ رہ نہ جائے اور وہ بہ حفاظت اپنے گھروں کو پہنچ جائیں۔خیال رہے کہ گذشتہ روز صبراتہ میں ہاحمد الباشی نامی شدت پسند گروپ اور فوج کے درمیان ہونے والی لڑائی میں تین افراد ہلاک اور پانچ زخمی ہوگئے تھے۔

مزید خبر یں

بگوٹا(نیوزڈیسک )جنوبی امریکی ملک کولمبیا کے دارالحکومت بوگوٹا میں ایک کار بم حملے میں 21 ہلاک جب کہ  درجنو ں زخمی ہو گئے۔ یہ حملہ ملکی پولیس کے ایک ٹریننگ سینٹر پر کیا گیا۔بم دھماکے کے باعث پولیس اکیڈمی اور اس کے ارد گرد کی عمارات ... تفصیل

برلن(نیوزڈیسک)جرمن پارلیمان نے بریگزٹ بل منظور کر لیا ہے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق یہ بل یورپی یونین سے برطانیہ کے اخراج کے بعد دونوں ممالک کے باہمی تعلقات سے متعلق ہے۔ بنڈس ٹاگ میں منظور کیے گئے اس بل میں مجوزہ اقدامات پر عمل درآمد اسی ... تفصیل

بیروت (نیوزڈیسک)لبنانی انٹیلی جنس حکام نے ایک مشتبہ اسرائیلی فو جی کو حراست میں لے لیا جو دو روزقبل سرحد پار کرکے لبنان کی حدود میں داخل ہو گیا تھا۔عرب ٹی وی کے مطابق اسرائیلی شہری کو جنوبی لبنان کے صور شہر سے حراست میں لیا ... تفصیل