دفترخارجہ کانیوزی لینڈ سانحے میں شہید ہونے والے 4 افراد کے ورثا کے لئے ویزہ کی سہولت کا اعلان              پیپلزپارٹی نے رابطہ عوام مہم شروع کرنے کا اعلان کردیا              سابق وفاقی وزیر کامران مائیکل پر سفری پابندی عائد              سینیٹ کمیٹی: سعودی ولی عہد کے دورہ پاکستان میں آنے والے اخراجات کی تفصیلات طلب              سانحہ نیوزی لینڈ : شہید پاکستانیوں کی تعداد 6 ہوگئی              پاک فوج نے بھارت کاجاسوس ڈرون مار گرایا              شیخ رشید کا وزیر اعظم کی جانب سے مزدوروں کےلئے تین ، تین ہزار روپے انعام کا اعلان              کرائسٹ چرچ مساجد پر حملہ کرنے والا انتہا پسند عدالت میں پیش،قتل کا الزام عائد              آصف زرداری نے میگا منی لانڈرنگ کیس کی اسلام آباد منتقلی کا فیصلہ چیلنج کردیا       
تازہ تر ین

فوجی پریڈ پر حملے کے الزام میں اھواز میں 22 ایرانی شہریوں کو پھانسی دیدی گئی

تہران (انٹرنیشنل ڈیسک)ایران میں انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والے کارکنوں نے بتایا ہے کہ ستمبر میں عرب اکثریتی شہر اھواز میں ایک فوجی پریڈ پر حملے میں ملوث قرار دیے گئے 22 افراد کو اجتماعی طور پرتختہ دار پر لٹکا دیا گیا۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق اھواز میں انسانی حقوق کی صورت حال پرنظر رکھنے والے ایک کارکن نے اپنی شناخت ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ عدالتی حکام نے سزا پانے والے ملزمان کے اہل خانہ کو بتایا کہ ان کے پیاروں کو جمعرات کے روز پھانسی دے دی گئی تھی۔

سزا پانے والے ایک شخص کے قریبی عزیز نے کہا کہ ایران کی ایک انقلاب عدالت نے پھانسی پر چڑھائے گئے افراد کے خاندانوں کو طلب کیا اور ان کی موت کے تصدیق نامے حوالے کرنے کے بعد خبردار کیا کہ وہ ان کی تعزیت کے لیے کسی قسم کا اجتماع منعقد نہیں کریں گے۔ایسا کرنے کی صورت میں انہیں گرفتار کرلیا جائے گا۔ایرانی حکام کی طرف سے سزائے موت پرعمل درآمد کے بعد تمام افراد کی لاشیں ان کے ورثاء کے حوالے نہیں کیں۔خیال رہے کہ ایران میں ملزموں کو اجتماعی طورپر پھانسی دیے جانے کے بعد انہیں اجتماعی طورپر زمین دفن کرنے کے بعد اوپر سے سیمنٹ کے ساتھ بند کردیا جاتا ہے تاکہ ان کی میتوں کو نکالا نہ جاسکے۔اھواز میں 22 ستمبر کو ہونے والی ایک پریڈ پر حملے میں 24 ایرانی فوجی ہلاک اور 60 سے زیادہ زخمی ہوگئے تھے۔ اس حملے کی ذمہ داری شدت پسند تنظیم داعش نے قبول کی تھی۔ایرانی پولیس نے دعویٰ کیا تھا کہ اس نے اس کارروائی کے بعد اھواز میں کریک ڈاؤن کے دوران سیکڑوں افراد کو حراست میں لیا تھا۔

ان میں سول سوسائٹی کے کارکن بھی شامل ہیں جن کا کسی مذہبی گروپ کے ساتھ کوئی تعلق نہیں۔

مزید خبر یں

جکارتہ (نیوز ڈیسک)انڈونیشیا کے جزیرے پاپوا پر سیلابی ریلوں کی تباہ کاریوں سے ہلاکتوں کی تعداد 77 ہو گئی۔تین درجن سے زائد افراد تاحال لاپتہ ہیں، سینکڑوں زخمی افراد کو طبی امداد دی جارہی ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق انڈونیشن ڈیزاسٹر ایجنسی نے ایک بیان میں کہاکہ جزیرے ... تفصیل

جکارتہ (نیوز ڈیسک)انڈونیشیا کے صوبے پاپوا میں شدید بارشوں اور سیلاب کے نتیجے میں50افراد ہلاک جبکہ 59 ز خمی ہو گئے۔سیلاب سے متاثرہ 120 سے زائد افراد سرکاری دفتر میں عارضی پناہ لئے ہوئے ہیں جبکہ حکام نے ہلاکتوں میں مزید اضافے کا خدشہ ظاہر کیا ... تفصیل

کینبرا(نیوز ڈیسک)آسٹریلوی وزیر اعظم نے مسلمان مخالف سینیٹر کو انڈا مارنے والے لڑکے کی حمایت کرتے ہوئے تجویز دی ہے کہ انڈا مارنے والے لڑکے پر تشدد کرنے پر سینیٹر کے خلاف مقدمہ درج کیا جانا چاہیے۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق وزیر ... تفصیل