پاکستان بار کونسل نے فروغ نسیم کو کابینہ سے ہٹانے کا مطالبہ کردیا
ایشیائی ترقیاتی بینک نے سال 2019 میں پاکستان کو 2 ارب 40 کروڑ ڈالر کا ریکارڈ قرض دیا
اسلام آباد ہائیکورٹ،پرویز مشرف کےخلاف فیصلہ سنانےوالے جسٹس وقار سیٹھ کےخلاف ریفرنس دائر کرنے کےلئے درخواست دائر
سپریم کورٹ،ڈپٹی سپیکر قاسم سوری کے حلقے میں دوبارہ انتخابات کے حکم کیخلاف اپیل سماعت کیلئے مقرر ،بینچ 25 فروری کو سماعت کرے گا
وفاقی حکومت نے بیرسٹر خالد جاوید کی بطور اٹارنی جنرل تعیناتی کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا
صدر مملکت کاپشاور زلمی کے کپتان ڈیرن سیمی کو اعزازی شہریت اور اعلی ترین سول ایوارڈ کا اعلان
ایف اے ٹی ایف کا پاکستان کو مزید 4 ماہ گرے لسٹ میں برقرار رکھنے کا فیصلہ
تازہ تر ین

ادلب کے بحران کے پیچھے ترکی کا ہاتھ ہے‘ روسی وزارت دفاع

ماسکو (نیوزڈیسک) روسی وزارت دفاع نے گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران شام کے جنگ زدہ علاقے حلب کے مغربی علاقوںسے 70 ہزار افراد کی نقل مکانی کی خبروں کی تردید کی ہے۔ وزارت دفاع کا کہنا ہے کہ حلب سے شہریوں کی بڑے پیمانے پر انخلاء کی خبریں بے بنیاد ہیں۔خیال رہے کہ شام میں اسدی فوج کی حمایت اور مخالفت میں جاری لڑائی میں روس اور ترکی کو ایک دوسرے کےسامنے لا کھڑا کیا ہے۔ حالات کو پرسکون رکھنے کی مساعی کے باوجود دونوں طرف تناﺅ موجود ہے۔ ترکی کے صدر رجب طیب ایردوآن نے روس پر شام میں جرائم کے ارتکاب کا الزام عاید کیا ہے۔روس نے ترک صدر کی طرف سے عاید کردہ الزامات مسترد کرتے ہوئے انقرہ پر ادلب میں جنگ بندی کی خلاف ورزیوں کا الزام عاید کیا ہے۔ ماسکو کا کہنا ہے کہ انقرہ نے شام سے انتہا پسندوں کو باہر نکالنے کے حوالے سے اپنی ذمہ داریاں پوری نہیں کی ہیں۔روسی وزارت دفاع نے کہا ہے کہ انقرہ نے ادلب میں معاہدے کی شرائط پر عمل درآمد نہیں کیا۔ ادلب کے بحران کے پیچھے ترکی کا ہاتھ ہے۔ انقرہ کی حکومت شمالی شام میں دہشت گردوں کو الگ کرنے میں ناکام رہا ہے۔روسی حکومت کا کہنا ہے کہ ادلب میں کشیدگی میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔ ترکی کی سرحد سے ادلب میں اسلحہ اور گولہ بارود کی منتقلی نے حالات مزید خراب کر دیے ہیں۔بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ روسی فوج سوچی معاہدے کے تحت شام میں اپنی کارروائی کر رہی ہے۔ ترکی کی سرحد سے ادلب میں اسلحہ اور گولہ بارود کی منتقلی نے کشیدگی میں مزید اضافہ کیا ہے۔خیال رہے کہ حالیہ ایام میں ادلب اور مغربی حلب میں روسی اور شامی فوج ایک دوسرے کے آمنے سامنے ہیں۔ دونوں طرف سے شام کے جنگ زدہ علاقوں میں امن اور بات چیت کی کوششیں تا حال ناکام ہیں۔قبل ازیں ترکی کے صدر رجب طیب ایردوآن نے دھمکی دی تھی کہ اگر شامی فوج واپس نہ گئی تو فروری کے آخر تک انقرہ حلب اور ادلب میں فوجی کارروائی کرسکتا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ انقرہ فروری کے آخر تک شامی فوج کے خلاف کارروائی کے لیے تیار ہے۔

مزید خبر یں

برسلز (نیوز ڈیسک) فرانسیسی صدر عمانویل ماکروں نے شام میں جاری کشیدگی کم کرنے کے لیے جرمنی، روس اور ترکی کی قیادت پر مشتمل سربراہ اجلاس بلانے کا مطالبہ کیا ہے۔ ایک بیان میں انہوں نے کہاکہ روس اور ترکی پر مشتمل ایک سربراہ اجلاس جلد ... تفصیل

واشنگٹن (نیوز ڈیسک) امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے کہا ہے کہ ایرانی عوام آزادانہ اور شفاف انتخابات کے مستحق ہیں۔ایک بیان میں پومپیو نے ایرانی رہبر اعلی علی خامنہ ای پر الزام عائد کیا کہ انہوں نے 7 زہار ایرانیوں کو پارلیمانی انتخابات میں نامزدگی ... تفصیل

مقبوضہ بیت المقدس (نیوز ڈیسک) اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاھو نے مشرقی بیت المقدس میں یہودی آبادکاری اور توسیع پسندی کے دو نئے منصوبوں کا اعلان کیا ہے۔ دوسری طرف اردن نے اسرائیلی وزیراعظم کے اعلان کی شدید مذمت کرتے ہوئے یہودی آباد کاری کو یک ... تفصیل