کھیل کے میدان سے افسوسناک خبر اہم ترین عہدیدار نے تنگ آکر استعفیٰ دیدیا              قطر جانے کے خواہشمند افراد کیلئے بڑی خوشخبری آگئی پاکستانی پروفیشنلز اور ہنرمند افراد متوجہ ہوں، پھر نہ کہنا خبر نہ ہوئی              یو اے ای میں رہائش پذیر پاکستانیوں کیلئے دھماکے دار خبر آگئی ، عام تعطیل کا اعلان کردیاگیا              سیاحوں کی بس میں دھماکہ ، ہلاکتیں ، متعدد زخمی ، افسوسناک واقعہ کہاں پیش آیا ؟ جانئے              پارسل بھیجنا ہو تو دورنہ جائیں، اب ڈاکخانے کا عملہ ہی گھر بلا لیں ایسی سہولت متعارف جان کرآپ بھی دانتوں تلے انگلیاں دبا لینگے              باکمال لوگ ، لاجواب سروس کے شاندار اقدام نے شہریوں کے دل جیت لیئے ،جان کر آپ بھی داد دیئے بغیر نہ رہ سکیں گے              اہم ترین ساہم ترین سیاسی رہنما رشتہ ازدوج میں منسلک ہوگئے، لڑکی کون؟ کس بڑی شخصیت کی بیٹی ہیں ؟ جانئےیاسی رہنما رشتہ ازدوج میں منسلک ہوگئے، لڑکی کون؟ کس بڑی شخصیت کی بیٹی ہیں ؟ جانئے              خوفناک حادثے نے سب کو رُلادیا ، ایک ہی خاندان کے 4 افراد جاں بحق ،ہر طرف چیخ وپکار       
تازہ تر ین

آئی جی تبادلہ کیس میں نیا موڑ، اعظم سواتی کی وزارت چھوڑنے بارے دھماکے دار اعلان کردیا

اسلام آباد(نیو زڈیسک) آئی جی اسلام آباد تبادلہ کیس میں نیا موڑ آگیا، اعظم سواتی نے وزارت چھوڑنے کی پیشکش کر دی، وزیراعظم کو رضا کارانہ طور پر استعفیٰ دینے سے آگاہ کر دیا۔ اعظم سواتی کا کہنا ہے رضا کارانہ طور پر اپنی وزارت سے الگ ہونے کیلئے تیار ہوں۔یاد رہے گزشتہ سماعت پر چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے کہا ہم نے رپورٹ پڑھ لی ہے، اعظم سواتی کیخلاف آرٹیکل 62 ون ایف کے تحت ٹرائل ہوگا، صرف یہ بتا دیں کہ آپ ٹرائل کس سے کرانا چاہتے ہیں ؟ بچوں اور خواتین کو اٹھا کر جیل میں ڈال دیا گیا، آپ حاکم ہیں، محکوم کے ساتھ ایسا سلوک کرتے ہیں ؟ بھینس دراصل آپ کے فارم ہاؤس میں داخل ہی نہیں ہوئی۔چیف جسٹس نے استفسار کرتے ہوئے کہا آئی جی صاحب آپ نے اب تک اس معاملے پر کیا کیا ؟ یہ آپ کی ایک ماہ کی کارکردگی ہے ؟ نئے آئی جی نے آتے ہی سرنگوں کر دیا ہے۔ جس پر آئی جی اسلام آباد نے کہا سر یہ معاملہ عدالت میں زیر التوا تھا۔ چیف جسٹس نے کہا کوئی زیر التوا نہیں تھا، آپ کو دیکھنا تھا اس معاملے میں کیا کرنا ہے۔وکیل اعظم سواتی نے کہا عدالت نے میرے موکل سے 10 سوال پوچھے تھے، پہلا سوال تھا کیا آئی جی کا تبادلہ اعظم سواتی کے دباؤ پر کیا گیا، جے آئی ٹی نے کہا کہ تبادلہ پہلے ہی طے تھا۔ جس پر چیف جسٹس نے کہا فون نہ اٹھانے پر آئی جی اسلام آباد کا تبادلہ کیا گیا، حکومت کو جاکر بتائیں عدالتی نظرثانی کیا ہوتی ہے ؟۔صدر سپریم کورٹ بار نے اعظم سواتی کو معاف کرنے کی درخواست کی اور کہا اعظم سواتی میرے ساتھ کام کرتے رہے ہیں، جرم ہوا ہے لیکن اس پر اتنی بڑی سزا نہ دیں۔ چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا ارب پتی آدمی ان سے مقابلہ کر رہا ہے جو 2 وقت کی روٹی نہیں کھا سکتے، ان کو سزا ملے گی تو شعور آئے گا۔چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے پوچھا تحریک انصاف نے اب تک اعظم سواتی کے خلاف کیا ایکشن لیا ؟ اٹارنی جنرل انور منصور نے کہا نیب قوانین کے تحت معاملہ نہیں آتا۔ جس پر چیف جسٹس نے کہا پھر آرٹیکل 62 ون ایف کے تحت لڑائی کریں، کیا اعظم سواتی قربانی دینے کے لیے تیار ہیں ؟ ان کے پیسے ہمیں ڈیم فنڈز کے لیے بھی نہیں چاہئیں۔

مزید خبر یں

اسلام آباد/مناما (نیوزڈیسک)پاک بحریہ کے سربراہ ایڈمرل ظفر محمود عباس نے کمانڈر بحرین نیشنل گارڈ ز او کمانڈر بحرین کوسٹ گارڈ سے ملاقاتیں کیں جس میں پیشہ وارانہ امور اور باہمی بحری اشتراک پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔  پاک بحریہ کے سربراہ ایڈمرل ظفر محمود ... تفصیل

اسلام آباد (نیوزڈیسک)پاکستان مسلم لیگ ن کی ترجمان مریم اورنگزیب نے قائد حزب اختلاف شہباز شریف کی درخواست ضمانت کے حوالے سے ذرائع ابلاغ میں آنے والی خبروں کی تردید کی ہے ۔ ایک بیان میں مریم اور نگزیب نے کہاکہ شہباز شریف کی درخواست ضمانت ... تفصیل

 اسلام آباد (نیوزڈیسک)سپریم کورٹ نے بیوی کی قابل اعتراض تصویر انٹرنیٹ پر ڈالنے سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران مسماة ذیشان ضیا راجہ کی شوہر ندیم کیخلاف ضمانت منسوخی کی درخواست مسترد کر دی ۔ چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے سماعت ... تفصیل