وزیر اعظم عمران خان کا قوم کو بہت جلد بڑی خوشخبری دینے کا اعلان              وزیراعظم عمران خان نے نیشنل ٹورازم کوآرڈینیشن بورڈ تشکیل دینے کی منظوری دے دی              سراج الحق جماعت اسلامی کے دوبارہ امیر منتخب              حکومت کی جانب سے دو ارب روپے کا رمضان پیکج منظور ،یوٹیلی اسٹورز کارپوریشن نے کئی اشیاءمہنگی کردیں              چیف جسٹس آصف سعید نے بریگیڈیئر (ر) اسد منیر کی مبینہ خودکشی کا نوٹس لے لیا، چیئر مین نیب سے رپورٹ طلب              سپریم کورٹ نے بحریہ ٹاﺅن کر اچی کی 460ارب روپے کی پیشکش قبول کر لی              وزیر اعظم نیوز ی لینڈ کا خود کار و نیم خودکارہتھیاروں پر پابندی کا اعلان              جماعت اسلامی کا متحدہ مجلس عمل سے علیحدگی کا باضابطہ اعلان              مشال قتل کیس میں مزیددو ملزمان کو عمر قید       
تازہ تر ین

رپورٹ تیار، کون اِن ؟ کون آؤٹ ہوگا؟ کس وزیر کی کارکردگی سے وزیراعظم ناراض ؟ کون فارغ ہونیوالا ہے ؟ بڑی خبر آگئی

اسلام آباد(نیو زڈیسک) ذرائع کے مطابق صوبے کے7وزراء کو کیٹیگری اے میں رکھا گیا اور وزراء نے بہت زبردست کارکردگی دیکھائی جبکہ بعض وزراء کی کارکردگی پر عدم اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے انہیں دیگر کیٹیگری میں شامل کیا گیا ہے ۔ذرائع کے مطابق رپورٹس میں چار کیٹیگری رکھی گئیں ہیں، کیٹیگری اے میں صوبائی وزیر بلدیات عبدالعلیم خان، صوبائی وزیر قانون راجہ بشارت،صوبائی وزیر صنعت و تجارت میاں اسلم اقبال،صوبائی وزیر خزانہ ہاشم جواں بخت ،صوبائی وزیر ہائیر ایجوکیشن راجہ ہمایوں یاسر، صوبائی وزیر آبپاشی محسن لغاری ، صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد بھی پہلی فہرست میں شامل ہیں ،ذرائع کا دعویٰ ہے کہ صوبائی وزراء جن میں ملک نعمان، ملک تیمور، انصر مجید خان نیازی، محمودالرشید سمیت 9وزراء بی کیٹیگری میں شامل ہیں، ذرائع سے یہ بھی معلوم ہواہے کہ کیٹیگری سی کی فہرست میں صوبائی وزراء حافظ عمار یاسر، محمد اخلاق، مہر محمد اسلم، ہاشم ڈوگر شامل ہیں، اسی طرح ذرائع یہ بھی دعویٰ کر رہے ہیں کہ شوکت لالیکا، زوار حسین، محمد اختر،،،،حسین جہانیاں ، مراد راس سمیت کئی وزراء کو سی کیٹیگری میں رکھا گیا،ذرائع کے مطابق رپورٹ میں اعتراضات اٹھائے گئے ہیں جس میں کہا گیا ہے کہ کسی وزیر نے اپنی کارکردگی کو آن لائن نہیں کیا،اور معاملات کو غلط بریف کیا گیا ہے۔ کئی صوبائی وزراء نے محکموں میں کم دلچسپی ظاہر کی جبکہ دیگر غیر ضروری معاملات میں زیادہ دلچسپی ظاہر کی ہے ۔یہ بھی معلوم ہواہے کہ پنجاب حکومت کی وزرات قانون نے 31 مسودہ قانون تیار کئے ہیں، بلدیات سے متعلق کئی اہم کام کئے ہیں، اور14مختلف اداروں کے ساتھ معاہدے ہوئےہیں۔ اس حوالے سےصوبائی وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان کا کہنا ہے کہ کسی وزیر کو فارغ نہیں کیا جائیگا، اور کارکردگی سے متعلق وزیراعظم عمران خان خود فیصلہ کریں گے۔ سب وزراء نے بہتر کام کرنے کی ہر ممکن کوشش کی ہے ۔

مزید خبر یں

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئر رہنماءنیئر بخاری نے کہا ہے کہ بھارتی خطرات بڑھنے پر حکمرانوں کی طرف سے اتحاد کی بجائے نفاق پیدا کرنا سمجھ سے بالا تر ہے،پیپلز پارٹی دفاع وطن میں افواج پاکستان کے شانہ بشانہ کھڑی ہے،عمران خان ... تفصیل

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) وزیر مملکت برائے داخلہ شہر یار آفریدی نے کہا ہے کہ آصف زر داری اور بلاول بھٹو زر داری کی پیشی کے موقع پر نیب کے دفتر کے باہر کے واقعہ کا سارا ریکارڈ مل چکا ہے جائزہ لے رہے ہیں،ریاست کسی ... تفصیل

اسلام آباد (نیوز ڈیسک)وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے سمجھوتہ ایکسپریس میں شہید بیگناہوں کے ذمہ داران چاروں مجرموں کو بری کر نے کے فیصلے پر انتہائی تشویش کا اظہارکیا ہے ۔وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی وزیر اطلاعات فواد چوہدری، مشیر وزیر اعظم برائے تجارت و ... تفصیل