دفترخارجہ کانیوزی لینڈ سانحے میں شہید ہونے والے 4 افراد کے ورثا کے لئے ویزہ کی سہولت کا اعلان              پیپلزپارٹی نے رابطہ عوام مہم شروع کرنے کا اعلان کردیا              سابق وفاقی وزیر کامران مائیکل پر سفری پابندی عائد              سینیٹ کمیٹی: سعودی ولی عہد کے دورہ پاکستان میں آنے والے اخراجات کی تفصیلات طلب              سانحہ نیوزی لینڈ : شہید پاکستانیوں کی تعداد 6 ہوگئی              پاک فوج نے بھارت کاجاسوس ڈرون مار گرایا              شیخ رشید کا وزیر اعظم کی جانب سے مزدوروں کےلئے تین ، تین ہزار روپے انعام کا اعلان              کرائسٹ چرچ مساجد پر حملہ کرنے والا انتہا پسند عدالت میں پیش،قتل کا الزام عائد              آصف زرداری نے میگا منی لانڈرنگ کیس کی اسلام آباد منتقلی کا فیصلہ چیلنج کردیا       
تازہ تر ین

العزیزیہ اور فلیگ شپ اصل میں ہے کیا؟، دھماکے دار رپورٹ نے کھلبلی مچادی

اسلام آباد(نیو زڈیسک) احتساب عدالت کے جج ارشد ملک نے نواز شریف کے خلاف ریفرنسز کا فیصلہ سنا دیا ہے۔عدالت نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کو فلیگ شپ ریفرنس میں بری کر دیا گیا ہے جبکہ العزیزیہ ریفرنس میں مجرم قرار دیتے ہوئے سات سال قید کی سزا دی گئی اور 25 ملین ڈالرز جُرمانہ عائد کیا گیا اس کے علاوہ نواز شریف کو دس سال کے لیے عوامی عہدے کے لیے بھی نااہل قرار دیا گیا ہے۔تین بار وزیراعظم رہنے والے اور مسلم لیگ ن کے قائد اب 7 سال جیل میں گزاریں گے۔لیکن کیا آپ جانتے ہیں کہ نواز شریف کے خلاف بنائے جانے والے العزیزیہ اور فلیگ شپ ریفرنسز اصل میں ہیں کیا؟۔میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ 2016 میں پانامہ پیپرز میں انکشافات ہوا تھا کہ سابق وزراعظم نواز شریف اور ان کے بچوں کی آف شور کمپنیاں ہیں اور لندن کے مہنگے ترین علاقے مے فئیر میں فلیٹس بھی ہیں جس کے بار ے کہا جاتا ہے کہ یہ مبینہ طور پرمنی لانڈرنگ کے ذریعے سے بنائی گئی۔جس کے بعد اس معاملے کی تحقیقات شروع ہوئیں تو نیب نے نواز شریف اور ان کے بچوں کے خلاف تین ریفرنسز دائر کیے جن میں ایون فیلڈ ریفرنس، فلیگ شپ انویسمنٹ اور العزیزیہ اسٹیل ملز شامل ہیں۔العزیزیہ ریفرنس کے بارے میں آپ کو بتائیں کہ العزیزیہ اسٹیل ملز سعودی عرب میں 2001ء میں جلاو طنی کے دوران نواز شریف کے صاحبزادے حسین نواز نے قائم کی۔جس کے بعد 2005ء میں ہل میٹل اسٹیبلشمنٹ کمپنی قائم کی گئی۔نیب نے اپنے ریفرنسز میں الزام عائد کیا تھا کہ اسٹیل ملز کے قیام اور ہل میٹل کمپنی کے اصل مالک نواز شریف ہیں۔فلیگ شپ:فلیگ شپ ریفرنسز نواز شریف کی آف شور کمپنیوں سے متعلق ہے۔اور انہی کمپنیوں میں ایک کمپنی کیپٹل ایف زیڈ ای تھی جس میں نواز شریف کمپنی کے چئیرمین تھے۔اسی چئیرمین شپ کو بنیاد بناتے ہوئے سپریم کورٹ نے نواز شریف کو نااہل قرار دے دیا تھا۔اس ریفرنس میں نیب کی جانب سے الزام عائد کیا گیا تھا کہ فلیگ شپ کمپنیوں کے اصل فوائد نواز شریف لے رہے تھے اور وہی ان کمپنیوں کے مالک ہیں۔ایون فیلڈ ریفرنس ایون فیلڈ ریفرنس لندن میں شریف خاندان کے فلیٹوں سے متعلق تھا جس میں احتساب عدالت نے نواز شریف کو 10 سال قید کی سزا سنائی تھی جب کہ ان کی صاحبزادی مریم نواز کو 7 سال اور داماد کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو ایک سال قید کی سزا جرمانے کے ساتھ سنائی گئی تاہم بعدازاں اسلام آباد ہائیکورٹ نے اس فیصلے کو معطل کر دیا تھا۔خیال رہے پانامہ پیپرز کے سامنے آنے کے بعد پاکستانی سیاست میں ایک بھونچال آگیا اور اس معاملے کو 2016 میں سپریم کورٹ میں لایا گیا جہاں پر یہ کیس چلتا رہا اور فروری 2017 میں اس کیس کا فیصلہ محفوظ کیا گیا۔ جو بعد ازاں 20 اپریل کو سنایا گیا جس کے نتیجے میں 2-3 کا فیصلے سامنے آیا اور کیس کے فیصلے کے نتیجے میں جے آئی ٹی بنا دی گئی تھی۔جے آئی ٹی نے اپنی رپورٹ سپریم کورٹمیں پیش کی تو اس کے بعد 28 جولائی کو 0-5 کا فیصلہ آیا جس میں نواز شریف کو وزارت اعظمیٰ سے نااہل کردیا گیا اور اس رپورٹ کی روشنی میں احتساب عدالتمیں ریفرنس بھیجے گئے جن میں سے ایک ریفرنس ایون فیلڈ ریفرنس تھا جو نواز شریف کے لندن میں موجود اپارٹمنٹس سے متعلق تھا۔

مزید خبر یں

کراچی(نیوز ڈیسک)پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئررہنمااور سابق قائد حزب اختلاف سید خورشیداحمد شاہ نے کہاہے کہ ایسا لگتا ہے ملک میں کوئی جمہوریت نہیں جس کو چاہو پکڑو بعد میں پوچھا جائے گا۔سیاست دانوں کو صرف جمہوریت اور حق حکمرانی مانگنے کی سزا دی جارہی ہے،راولپنڈی ... تفصیل

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات عمر چیمہ نے کہا ہے کہ نواز شریف کی صحت کی فکر ہوتی تو نون لیگی اس پر سیاست نہ کرتے۔ایک بیان میں عمر چیمہ نے کہاکہ نواز شریف کی بیماری کو لے کر شہباز ... تفصیل

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما نیر بخاری نے آئی آر آئی سروے پر رد عمل کااظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ خود ساختہ اور من پسند سروے حکمرانوں کی عوام دشمنی پر پردہ ڈالنے کی ناکام کوشش ہے۔ایک بیان میں نیر بخاری ... تفصیل