دفترخارجہ کانیوزی لینڈ سانحے میں شہید ہونے والے 4 افراد کے ورثا کے لئے ویزہ کی سہولت کا اعلان              پیپلزپارٹی نے رابطہ عوام مہم شروع کرنے کا اعلان کردیا              سابق وفاقی وزیر کامران مائیکل پر سفری پابندی عائد              سینیٹ کمیٹی: سعودی ولی عہد کے دورہ پاکستان میں آنے والے اخراجات کی تفصیلات طلب              سانحہ نیوزی لینڈ : شہید پاکستانیوں کی تعداد 6 ہوگئی              پاک فوج نے بھارت کاجاسوس ڈرون مار گرایا              شیخ رشید کا وزیر اعظم کی جانب سے مزدوروں کےلئے تین ، تین ہزار روپے انعام کا اعلان              کرائسٹ چرچ مساجد پر حملہ کرنے والا انتہا پسند عدالت میں پیش،قتل کا الزام عائد              آصف زرداری نے میگا منی لانڈرنگ کیس کی اسلام آباد منتقلی کا فیصلہ چیلنج کردیا       
تازہ تر ین

سابق وزیراعظم کے بیٹوں نے اپنے والد کو تنہا چھوڑ دیا حسن اور حسین نواز نے والد سے قطع تعلقی اختیار کرلی

اسلام آباد(نیو زڈیسک) وفاقی وزیر برائے توانائی فیصل واوڈا کا کہنا ہے کہ سابق وزیراعظم کے بیٹوں نے اپنے والد کو تنہا چھوڑ دیا ہے، کوئی بھی شخص اس بات کی باآسانی تصدیق کروا سکتا ہے۔تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر فیصل واوڈا کی جانب سے تہلکہ خیز دعویٰ کیا گیا ہے۔ نجی ٹی وی چینل کے پروگرام سے گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر فیصل واوڈا نے انکشاف کیا کہ حسن اور حسین نواز اپنے والد سے قطع تعلق ہوگئے ہیں۔وفاقی وزیر فیصل واوڈا کا کہنا ہے کہ سابق وزیراعظم کے بیٹوں نے اپنے والد کو تنہا چھوڑ دیا ہے، کوئی بھی شخص اس بات کی باآسانی تصدیق کروا سکتا ہے۔ فیصل واوڈا کا مزید کہنا ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف نے پلی بارگین کیلئے 2 ارب ڈالرز کی پیش کش کی ہے۔فیصل واوڈا کا دعویٰ ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف نے 2 ارب ڈالرز دینے کی پیش کش حکومت کو کی ہے۔فیصل واوڈا کا کہنا ہے کہ نواز شریف نے پیغام بھیجا ہے کہ وہ 2 ارب ڈالرز دینے کیلئے تیار ہیں، بدلے میں انہیں رہا کر دیا جائے۔فیصل واوڈا کا کہنا ہے کہ تحریک انصاف کی حکومت نواز شریف کی پیش کش کو قبول نہیں کرے گی اور ان کے ساتھ کسی قسم کی ڈیل نہیں کرے گی۔واضح رہے کہ 2 روز قبل احتساب عدالت نے سابق وزیر اعظم محمد نواز شریف کے خلاف فلیگ شپ انوسٹمنٹ اور العزیزیہ ریفرنسز کا محفوظ کردہ فیصلہ سناتے ہوئے انہیں العزیزیہ ریفرنس میں 7 سال قید بامشقت، 5 ارب روپے جرمانہ اور دس سال کیلئے نااہلی کی سزا سنائی، جبکہ فلیگ شپ انویسٹمنٹ ریفرنس میں سابق وزیر اعظم محمد نواز شریف کو بری کر دیا۔ جس کے بعد کمرہ عدالت میں موجود نیب حکام نے انہیں تحویل میں لے لیا گیا تھا۔سابق وزیراعظم نواز کو جیل کی قید، جرمانے، نااہلی اور جائیداد ضبطگی کے علاوہ بھی ایک اور سزا دے دی گئی ہے۔ احتساب عدالت کے تفصیلی فیصلے کے مطابق سابق وزیراعظم نواز اب 10 سال تک کسی بھی بینک سے کسی بھی قسم کا قرضہ بھی حاصل نہیں کرسکیں گے۔ احتساب عدالت کے جج محمد ارشد ملک نے نیب کے دائر کردہ ریفرنسز پر فیصلہ بدھ 19 دسمبر کو محفوظ کیا تھا جو انہوں نے پیر کو سنایا۔جبکہ عدالت نے نواز شریف کے صاحبزادوں حسن اور حسین نواز کو مفرور قرار دیتے ہوئے ان کی گرفتاری کا حکم بھی دیا۔

مزید خبر یں

کراچی(نیوز ڈیسک)پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئررہنمااور سابق قائد حزب اختلاف سید خورشیداحمد شاہ نے کہاہے کہ ایسا لگتا ہے ملک میں کوئی جمہوریت نہیں جس کو چاہو پکڑو بعد میں پوچھا جائے گا۔سیاست دانوں کو صرف جمہوریت اور حق حکمرانی مانگنے کی سزا دی جارہی ہے،راولپنڈی ... تفصیل

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات عمر چیمہ نے کہا ہے کہ نواز شریف کی صحت کی فکر ہوتی تو نون لیگی اس پر سیاست نہ کرتے۔ایک بیان میں عمر چیمہ نے کہاکہ نواز شریف کی بیماری کو لے کر شہباز ... تفصیل

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما نیر بخاری نے آئی آر آئی سروے پر رد عمل کااظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ خود ساختہ اور من پسند سروے حکمرانوں کی عوام دشمنی پر پردہ ڈالنے کی ناکام کوشش ہے۔ایک بیان میں نیر بخاری ... تفصیل