حکومت کا سینیٹ انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ کے خاتمے کیلئے اوپن بیلٹ کا فیصلہ
جی 20 سے پاکستان کو قرضوں کی ادائیگی میں 2 ارب ڈالر سے زائد ریلیف ملنے کا امکان
سعودی عرب میں کوڑے مارنے کی سزا کو باضابطہ ختم کردیا گیا
سٹیزن پورٹل سے شہری غیر مطمئن، وزیراعظم کا اداروں کیخلاف تحقیقات کا حکم
کورونا نے پی ٹی آئی کی رکن اسمبلی شاہین رضا کی جان لے لی
ایشیائی ترقیاتی بینک نے پاکستان کو کورونا وباء سے بچاؤ کیلئے 30 کروڑ ڈالر کا قرض فراہم کر دیا
حکومت بلوچستان نے اسمارٹ لاک ڈاؤن میں 2 جون تک توسیع کردی
پاکستان میں 2 ماہ بعد ریلوے آپریشن بحال کر دیا گیا
کرونا وبا،ملک میں 1ہزار سے زائد اموات،مریضو ں کی تعداد47ہزار سے تجاوز کر گئی،13ہزار سے زائدصحتیاب
تازہ تر ین

نوازشریف نے بیرون ملک علاج معالجہ کی بجائے سیرسپاٹوں سے قوم کے ساتھ مذاق کیا‘یاسمین راشد

Dr yasmin Rashid

لاہور(نیوزڈیسک) صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا ہے کہ سوشل میڈیا پر تصویر وائرل ہوئی کہ نواز شریف کسی ہوٹل میں چائے پی رہے تھے جس پر بہت خدشات پیدا ہوچکے ہیں، پاکستانی عوام اس وقت بہت کنفیوژن میں مبتلا ہے،سیاسی رہنماﺅں کو اپنے قول و فعل پر کاربند رہناچاہیے،نوازشریف کو صرف اپنے علاج معالجہ کیلئے بیرون ملک 6ہفتوں کیلئے جانے کی اجازت دی گئی۔صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد نے ڈی جی پی آر ہیڈ آفس میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ 25دسمبر کونوازشریف کی ضمانت کا وقت ختم ہوگیا۔25دسمبر کے بعد نوازشریف کی جانب سے ہمیں کوئی بھی باضابطہ میڈیکل رپورٹ نہیں بھیجی گئی۔ نوازشریف کے وکیل خواجہ حارث کی جانب سے 27دسمبر کو ایک مراسلہ موصول ہوا کہ نوازشریف کے حوالہ سے دوبارہ بورڈ تشکیل دیاجائے۔30دسمبر کو محکمہ سپیشلائیزڈ ہیلتھ کیئر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن نے میڈیکل بورڈ کے کنوینئر پروفیسر ڈاکٹر محمودایاز کو بورڈ تشکیل دینے کی ہدایت کی۔ خصوصی میڈیکل بورڈ کا 2اور 3جنوری کو باقاعدہ اجلاس ہوا جس میں تمام بورڈ ممبران نے شرکت کی۔ بورڈ ممبران سے میڈیکل رپورٹس کے ذریعے تجاویز مانگی گئیں کہ جو نوازشریف مزید طبی بنیادوں پر بیرون ملک رہنا چاہ رہے ہیں وہ ضروری ہے یا نہیں۔ میڈیکل بورڈ نے نوازشریف کے ذاتی معالج کی جانب سے بھیجی گئی تمام میڈیکل رپورٹس کو نامکمل قراردیا ہے۔ ان میڈیکل رپورٹس میں کوئی ایسی نئی چیز نہیں کہ جس کی بنیاد پر کوئی نئی رائے قائم کی جائے۔ نوازشریف کے ذاتی معالج کی جانب سے بھیجے گئے مراسلہ میں کوئی نئی بات نہیں تھی۔ میڈیکل رپورٹس کے ساتھ منسلک مراسلہ میں وہی بیماریوں کی نشاندہی کی گئی ہے جن بیماریوں کی تشخیص ہم پہلے کرچکے تھے۔ حیران کن بات یہ ہے کہ اتنا بیمار شخص تو بستر سے نہیں اٹھ سکتا پھر نوازشریف ریسٹورنٹ میں بیٹھے کھانا کیسے کھاسکتے ہیں؟ میں نے نوازشریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان کو فون کرکے تمام تفصیلات حاصل کیں۔ایک جانب نوازشریف کی جانب سے کہاجا رہا ہے کہ وہ بہت بیمار ہیں اور دوسری جانب وہ سیرسپاٹے کر رہے ہیں۔ ہمیں بتایاجائے کہ یہ سیرسپاٹے نوازشریف کے علاج کا حصہ ہیں؟ کیا مریم نواز ابا کی تیمارداری کیلئے ریسٹورنٹ جائیں گی اور جس کیلئے وہ باہرجانے کی اجازت مانگ رہی ہیں؟ تیمارداری بستر پر لیٹے مریض کی ہوتی ہے ریسٹورنٹ میں کھانا کھانے والے شخص کی نہیں۔ہم نے مراسلہ کے جواب میں نوازشریف کے ذاتی معالج کو لکھ کر بھیجاکہ موصول ہونے والی میڈیکل رپورٹس نامکمل ہیں اور ہم نے ہوم ڈیپارٹمنٹ کو مراسلہ بھجوایا کہ ہمارے لئے نامکمل میڈیکل رپورٹس کے ذریعے کسی بھی نتیجے پر پہنچنا ناممکن ہے۔ہمیں نوازشریف کے بیرون ملک میں 6ہفتوں کے علاج معالجہ کی تفصیلات درکار ہیں اور اب وہ کن بنیادوں پر مزید ضمانت میں توسیع کی درخواستیں دے رہے ہیں۔ کل ہوم ڈیپارٹمنٹ کی جانب سے نوازشریف کو براہ راست مخاطب کرکے کہا گیا ہے کہ پرنسپل پروفیسر ڈاکٹر محمود ایا ز کی جانب سے مراسلہ میں آپ کی بھجوائی گئی میڈیکل رپورٹس کو نامکمل کہاگیا ہے جس کی بنیاد پر کسی بھی نتیجے پر پہنچنا ناممکن ہے۔ کل ڈاکٹر عدنان سے 2بار رابطہ میں مکمل میڈیکل رپورٹس بھجوانے کا اصرار کیا گیا ہے تاکہ عدالت کی دی گئی ڈیڈلائن میں تازہ صورتحال بارے بیان کیاجاسکے۔وزیراعظم عمران خان اور عدالت نے انسانی ہمدردی کی بنیادوں پر نوازشریف کو باہر جانے کی اجازت دی تھی۔ حکومت بھی یہ سوچنے پر مجبور ہوگئی ہے کہ ایک ملزم شخص جو طبی بنیادوں پر علاج کروانے کی غرض سے بیرون ملک میں ہے وہ وہاں سیر سپاٹے کر رہا ہے۔ ہمیں لگتاہے کہ آپ باہر علاج کروا ہی نہیں رہے کیونکہ اگر آپ علاج کروا رہے ہوتے تو ہمیں تازہ میڈیکل رپورٹس تو بھجواتے۔ نوازشریف ظاہری طور پر بالکل ٹھیک لگ رہے ہیں۔صوبائی وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہاکہ ہواخوری ریسٹورنٹ میں کھانا کھانے سے نہیں بلکہ کھلی ہوا میں باہر ہوتی ہے۔ اتنی سنجیدہ بیماریوں کے ساتھ مریض کے معالج کو ہر وقت ساتھ رہنا ہوتا ہے۔پاکستان میں مسلم لیگ (ن) کے لوگ شور مچاتے تھے کہ نوازشریف کوکسی بھی لمحے کچھ بھی ہوسکتا ہے تو بیرون ملک اتنی لاپرواہی کیوں کی جا رہی ہے؟ نوازشریف آج کے بیمار نہیں ہیں ماضی میں بھی بطور وزیراعظم علاج کرواتے رہے۔

مزید خبر یں

اسلام آباد (نیوزڈیسک)وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ یورپ، امریکا اور چین کے مقابلے میں ہمیں کورونا کے ساتھ غربت کا بھی سامنا ہے، معاشی بہتری کیلئے مشکل فیصلے کیے تاہم وبا کی وجہ سے توازن نہیں رہا،ہمیں کرنٹ خسارے سمیت مالی خسارے کا سامنا ... تفصیل

اسلام آباد (نیوزڈیسک)وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ صحت کے شعبے پر توجہ نہ دینے کے باعث کورونا کی وبا ہمارے لیے بڑا چیلنج ہے، ویکسین بننے تک ہمیں کورونا کے ساتھ ہی گزارا کرنا ہوگا،کورونا وائرس کا حقیقی حل ویکسین ہی ہے، صحت کے ... تفصیل

اسلام آباد (نیوزڈیسک)تحریک انصاف کی حکومت نے سینیٹ کے انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ کے خاتمے کے لیے وزیر اعظم کے انتخاب کی طرز پر اوپن بیلٹ کے ذریعے سینیٹ چیئرمین کے انتخابات کرانے کا فیصلہ کیا ہے۔وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود اور وفاقی ویزر برائے نارکوٹکس ... تفصیل

Columns