حکومت کا سینیٹ انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ کے خاتمے کیلئے اوپن بیلٹ کا فیصلہ
جی 20 سے پاکستان کو قرضوں کی ادائیگی میں 2 ارب ڈالر سے زائد ریلیف ملنے کا امکان
سعودی عرب میں کوڑے مارنے کی سزا کو باضابطہ ختم کردیا گیا
سٹیزن پورٹل سے شہری غیر مطمئن، وزیراعظم کا اداروں کیخلاف تحقیقات کا حکم
کورونا نے پی ٹی آئی کی رکن اسمبلی شاہین رضا کی جان لے لی
ایشیائی ترقیاتی بینک نے پاکستان کو کورونا وباء سے بچاؤ کیلئے 30 کروڑ ڈالر کا قرض فراہم کر دیا
حکومت بلوچستان نے اسمارٹ لاک ڈاؤن میں 2 جون تک توسیع کردی
پاکستان میں 2 ماہ بعد ریلوے آپریشن بحال کر دیا گیا
کرونا وبا،ملک میں 1ہزار سے زائد اموات،مریضو ں کی تعداد47ہزار سے تجاوز کر گئی،13ہزار سے زائدصحتیاب
تازہ تر ین

لباس اور فیشن کے حوالے سے واضح تبدیلیاں رونما ہونے لگیں

نیویارک (نیوزڈیسک) گزشتہ چند برس سے جہاں دنیا بھر میں صنفی تفریق، رنگ و نسل، عقائد اور مذہب کی بنیاد پر لوگوں میں تفریق کیے جانے پر کھل کر بات ہونے لگی ہے۔وہیں دنیا بھر میں لباس اور فیشن کے حوالے سے بھی کئی واضح تبدیلیاں رونما ہوئی ہیں۔عالمی سطح پر جہاں حجاب، نقاب اور جسم کو مکمل طور پر ڈھانپنے والے اسلامی طرز کے لباس کے خلاف نفرت دیکھی گئی اور ایسے لباس پر بعض ممالک کی جانب سے پابندیاں بھی عائد کی گئیں۔وہیں فیشن انڈسٹری کی دنیا میں اس کی مقبولیت میں بھی اضافہ ہوا اور کئی ملٹی نیشنل برانڈز نہ صرف حجاب کے دیدہ زیب ڈیزائن تیار کیے بلکہ دنیائے فیشن میں جسم کو مکمل ڈھانپنے والے لباس بھی متعارف کرائے جا رہے ہیں۔فیشن کی دنیا میں کئی سال تک ’نیم عریاں‘ لباس اور فیشن کا بول بالا رہا، تاہم اب دنیا بھر میں ’موڈیسٹ فیشن‘ کی مقبولیت بڑھتی جا رہی ہے، جس کا اندازہ آسٹریلیا کے شہر میلبورن میں ہونے والے پہلے ’موڈیسٹ فیشن شو‘ سے لگایا جا سکتا ہے۔’دی گارجین‘ کے مطابق میلبورن میں ہونے والے موڈیسٹ فیشن شو مین آسٹریلیا کے بڑے برانڈز نے اپنی دیدہ زیب ملبوسات پیش کیں۔’موڈیسٹ فیشن شو‘ دراصل ایسا فیشن شو ہوتا ہے جس میں ڈھیلے لباس سمیت جسم کو مکمل طور پر ڈھانپنے والے اسلامی طرز کے لباس متعارف کرائے جاتے ہیں۔میلبورن سے قبل ایسے شو یورپ کے چند بڑے شہروں میں بھی منعقد ہوچکے ہیں اور رواں ماہ کے آخر تک امریکا میں بھی پہلی مرتبہ ایسے فیشن شو کا انعقاد ہوگا۔اگرچہ ان فیشن شوز کو ’موڈیسٹ فیشن شو‘ کو نام دیا گیا ہے، تاہم مشرق وسطیٰ اور دیگر مسلم آبادی والے ممالک میں ان فیشن شوز کو ’مسلم فیشن شو‘ کے نام سے جانا جاتا ہے۔

مزید خبر یں

لاہور( نیوزڈیسک)اداکارہ و میزبان شائستہ لودھی نے کہا ہے کہ شلوار قمیض میرا پسندیدہ لباس ہے اور میں گھر میں ہوں یا کسی بھی فنکشن میں جانا ہو تو شلوار قمیض کو ترجیح دیتی ہوں ۔ایک انٹر ویو میں شائستہ لودھی نے کہا کہ مجھے بچپن ... تفصیل

لاہور( نیوزڈیسک)اداکارہ مائرہ خان کی فلم '' سپر سٹار '' عید الفطر پر نجی ٹی وی سے آن ائیر کی جائے گی ۔ اداکارہ مائرہ خان کی مذکورہ فلم گزشتہ سال بڑی سکرین پر نمائش کے لئے پیش کی گئی تھی اور اب اسے عید الفطر ... تفصیل

لاہور( نیوزڈیسک) فلمسٹار ثنا نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کے پھیلائو کی وجہ سے گھر سے نکلنے سے مکمل گریز کر رہی ہوں اور امسال عید الفطر کیلئے اپنی اور بچوں کیلئے کوئی خریداری نہیں کی ۔گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس ... تفصیل