حکومت کا سینیٹ انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ کے خاتمے کیلئے اوپن بیلٹ کا فیصلہ
جی 20 سے پاکستان کو قرضوں کی ادائیگی میں 2 ارب ڈالر سے زائد ریلیف ملنے کا امکان
سعودی عرب میں کوڑے مارنے کی سزا کو باضابطہ ختم کردیا گیا
سٹیزن پورٹل سے شہری غیر مطمئن، وزیراعظم کا اداروں کیخلاف تحقیقات کا حکم
کورونا نے پی ٹی آئی کی رکن اسمبلی شاہین رضا کی جان لے لی
ایشیائی ترقیاتی بینک نے پاکستان کو کورونا وباء سے بچاؤ کیلئے 30 کروڑ ڈالر کا قرض فراہم کر دیا
حکومت بلوچستان نے اسمارٹ لاک ڈاؤن میں 2 جون تک توسیع کردی
پاکستان میں 2 ماہ بعد ریلوے آپریشن بحال کر دیا گیا
کرونا وبا،ملک میں 1ہزار سے زائد اموات،مریضو ں کی تعداد47ہزار سے تجاوز کر گئی،13ہزار سے زائدصحتیاب
تازہ تر ین

مسجد کی ضرورت نہیں‘ سلمان خان کے والد کا بابری مسجد کیس پر تبصرہ

ممبئی(نیوزڈیسک)بالی ووڈ اسٹار سلمان خان کے والد اور معروف بھارتی فلمساز سلیم خان نے بابری مسجد پر بھارتی سپریم کورٹ کے فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہمیں مسجد کی نہیں بلکہ بہتر اسکولوں کی ضرورت ہے۔بھارتی میڈیا کے مطابق بابری مسجد کیس سے متعلق سپریم کورٹ کے فیصلے پر رد عمل میں سلیم خان نے کہاکہ سپریم کورٹ نے ایودھیا میں 5 ایکڑ کی جو زمین مسجد کےلئے دینے کا حکم دیا ہے اس پر اسکول قائم ہونا چاہیے اور وہ مسلمانوں کے حوالے کیا جائے کیونکہ بھارت کے مسلمانوں کو مسجد کی نہیں اسکول کی ضرورت ہے۔سلیم خان نے سپریم کورٹ کے فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ نبی نے اسلام کی دو صفات بیان کیں کہ محبت اور معاف کرنا، تو اب ایودھیا کا معاملہ ختم ہونے کے بعد مسلمانوں کو ان دو صفات کے ساتھ آگے بڑھنا چاہیے، محبت ظاہر کریں اور معاف کریں۔انہوں نے کہا کہ اس طرح کی چیزوں کو اب مت دہرائیں اور بس یہاں سے آگے بڑھیں جبکہ اس طرح کے حساس فیصلوں کے بعد امن اور ہم آہنگی قائم کی جارہی ہے جو لائق تحسین ہے، اب اسے قبول کریں کیونکہ ایک برسوں پرانا تنازع حل ہوچکا ہے، میں صدقِ دل سے سپریم کورٹ کے فیصلے کا خیرمقدم کرتا ہوں۔سلیم خان نے کہا کہ مسلمانوں کو ایودھیا تنازع پر بحث نہیں کرنی چاہیے بلکہ انہیں اپنے بنیادی مسائل پر بحث کرتے ہوئے ان کا حل تلاش کرنا چاہیے، یہی وجہ ہے کہ میں کہہ رہا ہوں کہ ہمیں اسکول اور اسپتالوں کی ضرورت ہے، اگر 5 ایکڑ کی متبادل زمین پر کالج بنے گا تو یہ زیادہ بہتر ہوگا، ایودھیا میں مسجد کے لیے ایک بلڈنگ فراہم کردی جائے کیونکہ ہمیں مسجد کی ضرورت نہیں، نماز تو ہم کہیں بھی پڑھ سکتے ہیں، ٹرین میں، جہاز میں، زمین پر یا کہیں بھی، مگر ہمیں بہتر اسکولوں کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ اگر 22 کروڑ مسلمانوں کو اچھی تعلیم ملے گی تو اس ملک کی بہت سی مشکلات حل ہوجائیں گی، ہمیں اپنے مستقبل کی طرف دیکھنا چاہیے اور اس بات کو سمجھنا چاہیے کہ بہتر مستقبل ان کے لیے ہے جو اچھے تعلیم یافتہ ہیں، اصل مسئلہ یہ ہے کہ مسلمان تعلیم میں بہت اچھے نہیں ہیں لہٰذ اس لیے یہی کہوں گا کہ ایودھیا کا مسئلہ ختم کریں اور ایک نیا آغاز کریں۔

مزید خبر یں

لاہور( نیوزڈیسک)اداکارہ و میزبان شائستہ لودھی نے کہا ہے کہ شلوار قمیض میرا پسندیدہ لباس ہے اور میں گھر میں ہوں یا کسی بھی فنکشن میں جانا ہو تو شلوار قمیض کو ترجیح دیتی ہوں ۔ایک انٹر ویو میں شائستہ لودھی نے کہا کہ مجھے بچپن ... تفصیل

لاہور( نیوزڈیسک)اداکارہ مائرہ خان کی فلم '' سپر سٹار '' عید الفطر پر نجی ٹی وی سے آن ائیر کی جائے گی ۔ اداکارہ مائرہ خان کی مذکورہ فلم گزشتہ سال بڑی سکرین پر نمائش کے لئے پیش کی گئی تھی اور اب اسے عید الفطر ... تفصیل

لاہور( نیوزڈیسک) فلمسٹار ثنا نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کے پھیلائو کی وجہ سے گھر سے نکلنے سے مکمل گریز کر رہی ہوں اور امسال عید الفطر کیلئے اپنی اور بچوں کیلئے کوئی خریداری نہیں کی ۔گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس ... تفصیل