وفاق اورسندھ حکومت کے مابین اختلافی امورکے حل میں اہم پیشرفت ،صوبے میں نئے آئی جی سندھ لگانے سمیت دیگر کئی اہم امورپراتفاق
سینٹ نے ناروے میں قرآن پاک کی بے حرمتی پر گہری تشویش اور مذمت کی قرارداد متفقہ طور پر منظور کرلی
حکومت نے صدر اور وزیراعظم کا کیمپ آفسز بنانے کا اختیار ختم کرنے کا فیصلہ کرلیا
وفاقی وزیر فیصل واوڈا کیخلاف الیکشن کمیشن میں ایک اور درخواست دائر
سینیٹ نے ”مدریت پدریت رخصت بل 2018“کی منظوری دیدی
کرونا وائرس سے بچاﺅ کےلئے ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکس کی خصوصی تربیت اور سیمینار منعقد کر نے کا فیصلہ
کامیاب جوان پروگرام کو سندھ کے مختلف اضلاع میں لے جانے کا فیصلہ
تازہ تر ین

پاکستان سپر لیگ فرنچائزیز کی اکثریت کابھاری نقصان کا دعوی کر کے مالی ریلیف کا مطالبہ

لاہور( نیوزڈیسک) پاکستان سپر لیگ فرنچائزیز کی اکثریت نے بھاری نقصان کا دعوی کر کے مالی ریلیف کا مطالبہ کیا ہے لیکن ساتھ ہی وہ اس دعوے کو ثابت کرنے کے لیے پاکستان کرکٹ بورڈ کو اپنی مالی تفصیلات دینے سے گریزاں ہیں۔میڈیا رپورٹ میں ذرائع کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ پی سی بی فرنچائزیز کے مطالبات پر غور کررہا ہے تاہم بورڈ کو محسوس ہورہا ہے کہ کی فرنچائزوں کی جانب سے مالی تفصیلات نہ فراہم کرنے کی وجہ سے جس نقصان کا انہوں نے دعوی کیا اس کی تشخیص کرنا ممکن نہیں۔ذرائع کے حوالے مزید کہا گیا ہے کہ صرف پشاور زلمی اور اسلام آباد یونائیٹڈ وہ فرنچائزیز ہیں جنہوں نے پی ایس ایل 2017 کے بعد اپنے اکاﺅنٹس مینجمنٹ کی تفصیلات فراہم کی ہیں۔دوسری جانب فرنچازوں کے مطالبات پورے کرنے کے لیے پی سی بی اصل معاہدے میں تبدیلی کرے گا جو 10 برس قبل سائن کیا گیا تھا مذکورہ معاملہ رواں ماہ کے آخر میں پشاور میں ہونے والی بورڈ آف گورنر کے اجلاس میں زیر غور آسکتا ہے۔اس کے علاوہ فرنچائزیز پی سی بی سے یہ مطالبہ بھی کررہی ہیں کہ ان سے بینک گارنٹی جمع کروانے کا نہ کہا جائے جو کہ معاہدے کا سب سے اہم حصہ ہے۔ذرائع کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ فرنچائزیز نے بینک ضمانت کی جگہ بعد کی تاریخوں کے چیکس جمع کروانے کی پیشکش کی ہے اگر اس میں کوئی چیک قبول نہیں ہوا تو پی ایس ایل ختم ہونے کے بعد یکم اپریل سے آئندہ 2 سال تک بینک گارنٹیز جمع کرواسکتے ہیں۔یہ بات بھی سامنے آئی کہ پی سی بی کو بینک گارنٹیز کے بجائے بعد کی تاریخوں کے چیکس کی صورت میں کچھ سکیورٹی مل چکی ہے اور اگر ایسا ہوا ہے تو معاہدے کی خلاف ورزی ہے۔اس کے ساتھ فرنچائزوں نے معاہدے کے تحت کی جانے والے ادائیگی میں شرح زرِ مبادلہ کا اطلاق نہ کرنے کی درخواست کی ہے جس سے روپے کی قدر میں کمی کے باعث انہیں تھوڑا اطمینان ملے گا۔اس صورت میں پی سی بی کم از کم بینچ مارک کی صورت میں ایک ڈالر کے عوض 138روپے کی مالیت پر راضی ہوگیا ہے جو اس وقت ڈالر کی قیمت تھی جب پی ایس ایل کی چھٹی فرنچائز ملتان سلطان کو فروخت کیا گیا تھا۔

مزید خبر یں

اسلام آباد (نیوزڈیسک) ایچ بی ایل پی ایس ایل کی کامیاب ترین اور دو دفعہ کی فاتح اسلام آباد یونائٹیڈ کی انتظامیہ نے اعلان کیا ہے کہ پی ایس ایل کے پانچویں ایڈیشن میں انکی ٹیم کی قیادت شاداب خان کریں گے ۔شاداب خان پی ایس ... تفصیل

آکلینڈ (نیوزڈیسک) بھارت نے لوکیش راہل اور باﺅلرز کی عمدہ کارکردگی کی بدولت نیوزی لینڈ کو دوسری ٹی20 میچ میں با آسانی 7وکٹوں سے شکست دے کر پانچ میچوں کی سیریز میں 0-2 کی برتری حاصل کر لی۔آکلینڈ میں کھیلے گئے سیریز کے دوسرے میچ میں ... تفصیل

پوچیف اسٹروم(نیوزڈیسک) آئی سی سی انڈر 19 کرکٹ ورلڈکپ 2020 کے گروپ مرحلے کے اختتام پر ،عباس آفریدی، پاکستان انڈر 19 کی جانب سے سب سے زیادہ وکٹیں حاصل کرنے والے باﺅلربن گئے، فاٹا سے تعلق رکھنے والے نوجوان آلراﺅنڈر، جنوبی افریقہ میں جاری میگا ایونٹ ... تفصیل