حکومت کا سینیٹ انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ کے خاتمے کیلئے اوپن بیلٹ کا فیصلہ
جی 20 سے پاکستان کو قرضوں کی ادائیگی میں 2 ارب ڈالر سے زائد ریلیف ملنے کا امکان
سعودی عرب میں کوڑے مارنے کی سزا کو باضابطہ ختم کردیا گیا
سٹیزن پورٹل سے شہری غیر مطمئن، وزیراعظم کا اداروں کیخلاف تحقیقات کا حکم
کورونا نے پی ٹی آئی کی رکن اسمبلی شاہین رضا کی جان لے لی
ایشیائی ترقیاتی بینک نے پاکستان کو کورونا وباء سے بچاؤ کیلئے 30 کروڑ ڈالر کا قرض فراہم کر دیا
حکومت بلوچستان نے اسمارٹ لاک ڈاؤن میں 2 جون تک توسیع کردی
پاکستان میں 2 ماہ بعد ریلوے آپریشن بحال کر دیا گیا
کرونا وبا،ملک میں 1ہزار سے زائد اموات،مریضو ں کی تعداد47ہزار سے تجاوز کر گئی،13ہزار سے زائدصحتیاب
تازہ تر ین

قطر نے ورلڈ کپ میں رشوت دینے کے امریکی الزامات مسترد کردیے

لندن(نیوزڈیسک) قطر میں 2022 کے ورلڈ کپ کے منتظمین نے امریکی جسٹس ڈپارٹمنٹ کے ٹورنامنٹ کی میزبانی حاصل کرنے کیلئے ووٹ حاصل کرنے کے لیے رشوت دینے کے الزامات کی سختی سے تردید کردی۔میڈیار پورٹ کے مطابق روس میں 2018 کا فیفا ورلڈ کپ اور 2022 کو قطر میں ہونے والے ٹورنامنٹ کے حوالے سے فیفا کی ایگزیکٹو کی 2010 میں ہونے والی ووٹنگ پر افواہیں طویل عرصے سے چل رہی ہیں تاہم پہلی مرتبہ پراسیکیوٹر نے دونوں ٹورنامنٹس کے بارے میں باضابطہ الزامات عائد کیے۔پراسیکیوٹر کے مطابق روس اور قطر کے لیے کام کرنے والے نمائندوں نے فیفا کی ایگزیکٹو کمیٹی کے عہدیداروں کو عالمی فٹ بال کی گورننگ باڈی کے اہم میزبانی فیصلوں میں ووٹ تبدیل کرنے کے لیے رشوت دی۔قطر کی سپریم کمیٹی برائے ڈلیوری اینڈ لیگیسی (ایس سی) نے ان الزامات کو مسترد کردیا۔ان کا کہنا تھا کہ وہ ایک طویل المدتی کیس کا حصہ ہیں، جس کا موضوع 2018/2022 فیفا ورلڈ کپ کی بولی کا عمل نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ برسوں تک جھوٹے دعووں کے باوجود یہ قطر نے فیفا ورلڈ کپ 2022 کی میزبانی غیر اخلاقی طور پر یا فیفا کے بولی کے قواعد کے بر خلاف حاصل کی اس کا ثبوت پیش نہیں کرسکے۔اگرچہ فیفا نے قطر کی بولی کے عمل کے بارے میں میڈیا کے سابقہ الزامات پر ردعمل ظاہر کیا ہے اور کہا کہ ٹورنامنٹ پر اس سے کوئی اثر نہیں پڑے گا تاہم امریکی الزامات نومبر اور دسمبر 2022 کو شیڈول ٹورنامنٹ کی میزبانی پر مزید سوالات کا باعث بنیں گے۔الزامات میں کہا گیا کہ فیفا کی 2010 کی ایگزیکٹو کمیٹی کے جنوبی امریکا کے 3 اراکین، برازیل کے ریکارڈو تیکسیرا، پیراگوئے کے مرحوم نکولس لیوز اور ایک نامعلوم شریک سازشی کارکن نے 2022 ٹورنامنٹ کی میزبانی کے لیے قطر کو ووٹ دینے کے لیے رشوت لی تھی۔ڈیپارٹمنٹ آف جسٹس نے الزام لگایا کہ اس وقت کے فیفا کے نائب صدر جیک وارنر کو روس کو ووٹ دینے کیلئے مختلف شیل کمپنیوں کے ذریعہ 50 لاکھ ڈالر ادا کیے گئے تھے ، تاکہ وہ ورلڈ کپ کی میزبانی کریں۔روسی حکام نے وارنر کو رشوت دینے کا الزام مسترد کردیا۔بولی کی قیادت کرنے والے روس کے اعلٰی فٹ بال اہلکار الیکسی سوروکن نے ایسوسی ایٹ پریس کو بتایا ‘ہم سمجھ نہیں سکتے کہ یہ کس بارے میں ہے اور کس طرح کا رد عمل دیا جائے۔ان کا کہنا تھا کہ ہماری کمیٹی کا اس سے کوئی لینا دینا نہیں تھا، یہ ایک سازش کی طرح لگتا ہے۔

مزید خبر یں

لاہور (نیوزڈیسک) قومی کرکٹر عمر اکمل نے میچ فکسنگ کی پیشکش سے متعلق ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کے کیس میں تین سال کی پابندی کی سزا کے خلاف اپیل دائر کردی۔پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی)اینٹی کرپشن کوڈ کے تحت عمر اکمل کو دو مختلف ... تفصیل

کراچی (نیوزڈیسک)قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان شاہد آفریدی کی بیٹی اسمارہ 8 برس کی ہوگئیں ، شاہد آفریدی کے مداحوں کی بڑی تعداد اسمارہ کو سالگرہ کی مبارکباد دی ۔اسمارہ کو سالگرہ کی مبارکباد دینے والوں کی تعداد اتنی زیادہ ہے کہ سوشل میڈیا بالخصوص ... تفصیل

لاہور (نیوزڈیسک)پاکستان کے سابق فاسٹ بولر شعیب اختر نے کہا ہے کہ سچن ٹنڈولکر اور ویرات کوہلی کا موازنہ درست نہیں، اگر سابق بیٹسمین اس وقت کرکٹ کھیلتے تو ایک لاکھ 30 ہزار رنز اسکور کرسکتے تھے۔یاد رہے کہ ٹنڈولکر نے اپنے کیریئر میں 34 ہزار ... تفصیل